184

فیروزوالہ،تنخواہ مانگنے پرفیکٹری مالکان کی مزدوروں پر سیدھی فائرنگ ،2جاں بحق، 3زخمی

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

شیخوپورہ،،فیروز والہ(بیورورپورٹ )فیروزوالہ جی ٹی روڈ پر بیگم کوٹ اور امامیہ کالونی کے

قریب میاں کالونی میںکیمیکل فیکٹری مالکان اور لیبر یونین کے درمیان تصادم ،فیکٹری مالکان کی

فائرنگ سے 2 مزدور جاںبحق 3 شدید زخمی ہوگئے۔ریسکیواہلکاروں نے زخمیوں کو طبی امداد فراہم

کرتے ہوئے مقامی ہسپتال منتقل کردیا دوسری جانب مزدوروں نے ٹائروں کو آگ لگا کر احتجاجا مین

روڈکی ٹریفک معطل کردی جس سے گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں،مشتعل مزدوروں نے متعدد

گاڑیوں کے شیشے توڑ دئیے جبکہ مزدہ ٹرک اور کارکو نذر آتش کردیا۔بتایا گیا ہے کہ متعدد مرتبہ

فیکٹری مزدوروں نے اپنے مطالبات کے حق میں مظاہرے کئے اور آج بھی فیکٹری کے باہر دھرنا

دیئے ہوئے تھے کہ مل مالکان نے اپنے مبینہ غنڈوں کی مدد سے مزدوروں پر حملہ کردیا،اور

فائرنگ کردی،جس کے نتیجہ میں 2 مزدور رضوان اور رمضان جاںبحق ہوگئے جبکہ تین مزدور

شدید زخمی ہوگئے،واقعہ کے بعد مل مزدوروں نے روڈ بلاک کرکے گاڑیوں کو آگ لگادی اور لاہور

شیخوپورہ روڈ کو بلاک کردیا،مزدوروں نے احتجاج کرتے ہوئے میڈیا کو بتایا کہ فیکٹری مالکان

تنخواہیں نہیں دیتے ،تمام مزدروں کی ساڑھے 3کروڑ روپے کے قریب تنخواہ بنتی ہے ،فیکٹری

مالکان نے فیکٹری کا گیٹ بند کرکے مزدروں کو دھمکیاں لگائیں کہ اگریہاں سے نہ گئے تو براحال

کیاجائے گا،جس کے بعد فیکٹری مالک کامران نے مسلح افراد کو بلایا جنہوں نے اندھا دھند فائرنگ

کردی اورہمارے2ساتھی مزدروں کو موت کے گھاٹ اتاردیا اور2کو شدید زخمی کردیا گیا ہے،2سال

سے ہم نے اپنی تنخواہوں کے حصول کیلئے قانون نافذ کرنے والے اداروں کا دروزاہ تک

کھٹکھٹاچکے ہیں لیکن ہمیں کوئی انصاف فراہم نہیں کیا گیا۔وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار سے

انصاف کی فراہمی کا مطالبہ کرتے ہوئے مظاہرین نے انصاف کی فراہمی نہ ہونے پر مال روڈ لاہور

پر مزید احتجاجی مظاہرئوں کا بھی اعلان کردیا ہے،متعلقہ پولیس نے لاشوں کو تحویل میں لیکر

کارروائی شرو ع کردی ہے۔فیکٹری مالکان سے ان کو موقف جاننے کیلئے رابطہ کرنے کی کوشش

کی گئی لیکن رابطہ نہ ہوسکا۔دوسری طرف ایک اور فیکٹری مالک وارث علی اور اس کے بیٹے

وسیم نے ساتھیوں سے مل کر شاہدرہ کے محنت کش بابر علی کو بے دردی سے تشدد کا نشانہ بنا کر

ہلاک کر ڈالا جبکہ اس کا ساتھی معمولی زخمی ہوا اور بچ کر بھاگ نکلا بتایا گیا ہے کہ شاہدرہ کے

علاقہ ستارہ کالونی کا رہائشی نوجوان بابر علی اپنے ساتھی عابد اور عاشق کے ہمراہ کام کے سلسلہ

میں پیرزادہ کالونی کے قریب فیکٹری حاجی وارث کے سامنے سے گزر رہے تھے جس نے انہیں

تینوں نوجوانوں کو روک کر اپنے بیٹے وسیم ساتھی اویس ، عدیل کے ہمراہ مل کر انہیں فیکٹری لے

گئے یہاں پر فیکٹری مالک نے اپنی نگرانی میں اپنے بیٹے اور دیگر ساتھیوں سے نوجوان بابر علی

پر بے پناہ تشدد کیا آہنی راڈ مار کر اسے ہلاک کر دیا مقتول کے ورثاء نے اس واقعہ پر شدید احتجاج

کیا اور ملزمان کی گرفتاری کا مطالبہ کیاادھر فیروز والہ پولیس نے مقتول کے بھائی محمد اشفاق کی

رپورٹ پر حاجی وارث اس کے بیٹے وسیم اور دیگر افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔

Leave a Reply