Correct change in Afghan policy

15سال بعد ایک اور سعودی ولی عہد کی پاکستان آمد،اہم پہلو

Spread the love

ڈیرہ اسماعیل خان(خصوصی رپورٹ جے ٹی این آن لائن ) سعودی ولی عہد کے طور پر شہزادہ محمد بن سلمان لگ بھگ 15سال بعد آج پاکستان کے دو روزہ دورہ پر اسلام آباد میں ہیں ۔

تاریخ بتاتی ہے سعودی ولی عہد شہزادہ فہد بن عبدالعزیز نے پاکستان کے سب سے زیادہ 4 جبکہ شاہ فیصل نے تین دورے کیے۔

شاہ فیصل بن عبدالعز یز نے 8جون 1955ء کو پاکستان کا پہلا دورہ کیا، انہوں نے دوسرا دورہ ایوب خان کے دور میں 1966ء میں کیا جبکہ تیسرا دورہ شاہ فیصل نے اسلامی سربراہی کانفرنس میں شرکت کیلئے 21فروری 1974ء کیا۔

ذوالفقار علی بھٹو کے دور میں ہی سعودی ولی عہد خالد بن عبدالعزیز نے شاہ فیصل کی شہادت کے بعد 2اکتوبر 1976ء کو پاکستان کا دورہ کیا ۔

سعودی شاہی خاندان کے ولی عہد شہزادہ فہد بن عبدالعزیز نے پا کستان کے سب سے زیادہ چار دورے کئے انکا پہلا دورہ 24جولائی 1983ء ، دوسرا 24اپریل 1984ء ، تیسرا 24مارچ 1997ء اور چوتھا دورہ 8اکتوبر 2003ء کو کیا۔

قیام پاکستان کے بعد مرحوم کنگ عبدالعزیز آل سعود پہلے رہنما تھے جنہوں نے قائد اعظم محمد علی جناح ؒکو ٹیلیفون کرکے مبارک باد پیش کی۔

جب مشرقی پاکستان بنگلہ دیش بنا تو پاکستان کے بعد ہی سعودی عرب نے بنگلہ دیش کو بطور ملک تسلیم کیا۔

پاکستان کے ایٹمی دھماکوں سے لیکر ہر قدرتی آفات تک سعودی عرب نے بڑھ چڑھ کر پاکستان کی مدد کی اورجواب میں پاکستان کی طرف کئی اہم جگہوں ، سڑکوں اور شہروں کے نام فیصل آباد،فیصل مسجد ،شارع شاہ فیصل،فیصل ٹاؤن ، فیصل کالونی وغیرہ شاہ فیصل مرحوم کے نام پر رکھ کر اپنی محبت کا ثبوت دیا ہے۔

دوسری طرف سعودی دارالحکومت ریاض اور جدہ میں بھی شارع محمد علی جناحؒ کے نام سے کئی اہم شاہراہیں موسوم ہیں۔

شہزادہ محمد بن سلما ن کا حالیہ دورہ پاکستان جہاں ماضی کے تعلقات کا تسلسل ہے،

وہیں اس میں مختلف یہ ہے کہ ماضی کی ہماری عاقبت نااندیش حکومتوں نے سعودی عرب سے تجارت کو نظرانداز کیا لیکن موجودہ حکومت نے اسی پہلو کو اپنی توجہ کا مرکز بنایا،

آج اس ضمن میں کئی ایک تاریخی معاہدے طے ہونے جا رہے ہیں .جس سے وطن عزیر کے دشمن ممالک کی نیندیں حرام ہو کر رہ گئی ہیں مگر ان کا بس نہیں چل رہا کہ وہ ان معاہدوں کو طے ہونے سے روک سکیں

یہی اس دورے کی خاص بات یہ ہے پہلی بار سعودی عرب اور پاکستان مل کر بڑے پیمانے پر تجارت کا آغاز کرنے جا رہے ہیں۔
سعودی دورے

Leave a Reply