imran khan

یہ کیسی جمہوریت ہے؟ لیڈر شپ پیسے کے ذریعے سینیٹ میں آتی ہے: وزیراعظم عمران خان

Spread the love

یہ کیسی جمہوریت ہے

اسلام آباد: (جے ٹی این آن لائن نیوز) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ کیسی جمہوریت ہے لیڈر

شپ پیسے کے ذریعے سینیٹ میں آتی ہے۔قوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا

کہنا تھا کہ میرے پاکستانیوں میں سینیٹ الیکشن پر قوم سے بات کرنا چاہتاہوں، سینیٹ الیکشن میں 40

سال سے پیسہ چل رہا ہے۔ جس کے پاس پیسے ہے وہ سینیٹر بن جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ

سے لیڈر شپ آتی ہے، ان میں وزیراعلیٰ اور وزیراعظم بنتے ہیں، ایک سینیٹر رشوت دے کر سینیٹر

بن رہا ہے، دوسری طرف جو لوگ پیسے لیکر اپنا ضمیر بیچ رہے ہیں، میں بہت پہلے سے کہہ رہا

ہوں کہ اوپن بیلٹ ہونا چاہیے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ دونوں جماعتوں نے اوپن بیلٹ کے لیے میثاق

جمہویرت پر دستخط کیے، ن لیگ، پیپلز پارٹی نے خود کہا سینیٹ الیکشن میں پیسہ چلتا ہے۔ عدالت

میں سب نے اکٹھا ہو کر کہا کہ سیکرٹ بیلٹ ہونا چاہیے۔ اوپن بیلٹ کی مخالفت پر ہم سپریم کورٹ

گئے، جج صاحبان نے بھی کہا سینیٹ الیکشن میں پیسہ چلتا ہے، میں 2018ء میں ہمارے 20 لوگوں

نے پیسے لیکر ووٹ دیئے میں نے بروقت فیصلے کرتے ہوئے اپنے اراکین اسمبلی کو پارٹی سے

نکال دیا۔ان کا کہنا تھا کہ کیسی جمہوریت ہے لیڈر شپ پیسے کے ذریعے سینیٹ میں آتی ہے، جب

سے تحریک انصاف کی حکومت آئی ہے تب سے کرپٹ لوگ اور پرانی پارٹیز کے لوگ میری

حکومت پر دباؤ لا رہے ہیں، تاکہ این آر او دے دوں، ایسا پریشر انہوں نے سابق صدر پرویز مشرف

پر بھی ڈالا۔ اپوزیشن نے تحریری طور پر مجھ سے این آر او مانگا، فیٹف کی قانون سازی میں ہمیں

لکھ کر دیا کہ این آر او دیا جائے۔

یہ کیسی جمہوریت ہے

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply