یوٹیلٹی سٹورز پرشہری سستی اشیا ء سے محروم، بازاروں میں سرکاری نرخ نامے ہی غائب

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور( سٹاف رپورٹر) حکومت کی جانب سے یوٹیلٹی سٹورز پر رمضان پیکج کی

مد میں دی جانی والی سبسڈٹی کے دعوے ہوائی نکلے۔روزمرہ کے استعمال کی

19اشیاء میں سے چینی ، بناسپتی گھی ،چاول اور متعدد اشیاء کے ذخائریوٹیلٹی

سٹورزپر موجود ہی نہیں ہیں جس کے سبب عوام کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا

پڑ رہا ہے۔ ماہ صیام میں تبدیلی سرکار نے ملک بھر کے یوٹیلٹی سٹورز پر بنیادی

استعمال کی اشیاء جن میں چاول، گھی ، آٹا، بیسن ، چینی ،دال اور مشروبات سمیت

دیگر اشیاء پر رمضان کی مناسبت سے 2ارب کی سبسڈٹی کا اعلان تو کر دیا مگر

یوٹیلٹی سٹورز میں چینی ، گھی ، چاول، آئل اور دالوں کی متعدد اقسام موجود ہی

نہیں جبکہ دیگر اشیاء میں کھجور ، دودھ ، چائے کی پتی اور مشروبات کی تعداد

کم ہے ۔ جس کے سبب لوگوں کو مہنگے اور نجی سٹورز کا رخ کرنا پڑرہا ہے۔

یوٹیلٹی سٹورز ایسوسی ایشن کے افسران کا کہنا تھا کہ حکومت نے سبسڈٹی کا

اعلان تو کر دیا ہے لیکن جن چیزوں پر یہ سبسڈٹی دی جانی ہے وہ ہمارے پاس

سٹاک میں موجود نہیں ہیں ۔دوسری جانب آٹے کی سپلائے کا عمل ابھی تک جاری

ہے ۔ 2ارب کی سبسڈٹی تب دی جاتی ہے جب ان اشیاء کے ذخائر موجود ہوںلیکن

یہ اشیاء ابھی تک حکومت نے ہمیں مہیا ہی نہیں کیں ۔دوسری جانب صوبہ پنجاب

میں رمضان بازار کی مد میںجو سبسڈٹی دی جارہی ہے وہ ضرورت سے کئی زیادہ

ہے ،جبکہ ہم سے کہا جارہا کہ پورے ملک کے یوٹیلٹی سٹورز پر 2ارب کی

سبسڈٹی دی جائے ۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply