میانمارفوجی بغاوت احتجاج

ینگون میں فوجی بغاوت، احتجاج کا نیا طریقہ شروع کر دیاگیا

Spread the love

ینگون میں فوجی بغاوت

ینگون (جے ٹی این آن لائن نیوز) میانمار میں جمہوریت نواز کارکنوں نے ینگون میں فوجی بغاوت

کے خلاف ‘کوڑا ہڑتال’ کے ذریعے احتجاج کا ایک نیا طریقہ کار شروع کیا ہے۔ اس کے تحت

کارکنان نے بطور احتجاج ینگون کی سڑکوں اور گلیوں میں جگہ جگہ کوڑے کے ڈھیر جمع کر دیے

ہیں۔ عام شہریوں سے بھی کہا گیا ہے کہ وہ بطور احتجاج اپنا کوڑا سڑکوں پر ہی پھیکنا شروع کریں۔

ادھر مسلح باغی گروپوں نے بھی فوج سے خونریزی فوراً بند نہ کرنے پر جوابی کارروائی کی

دھمکی دی ہے۔ تین مسلحہ باغی گروپوں کا کہنا ہے کہ اگر فوجی جنتا نے فوری طور پرخون خرابہ

بند نہیں کیا تو پھر وہ مظاہرین کے ساتھ اپنا تعاون شروع کر دیں گے اور فوج کے خلاف جوابی

کارروائی کی جائے گی۔ملک کی منتخب رہنما آنگ سان سوچی کو یکم فروری کو اقتدار سے برطرف

کر دینے کے بعد سے ہی ملک بھر میں مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔ عالمی برادری مظاہرین کے

خلاف طاقت کے استعمال کی سخت مذمت کر رہی ہے اور فوجی جنتا پر دباؤ میں مسلسل اضافہ ہو

رہا ہے۔امریکا نے میانمار سے تجارتی معاہدے معطل کر دیے اور جمہوری حکومت کو بحال کرنے

کا مطالبہ کیا۔امریکا، کینیڈا، برطانیہ اور یورپی یونین نے میانمار کے فوجی جرنیلوں پر پابندیاں عائد

کر دی ہیں۔ اقوام متحدہ سمیت دیگر بین الاقوامی تنظیمیں بھی فوجی کارروائی کی مسلسل مذمت کر

رہی ہیںـ

ینگون میں فوجی بغاوت

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply