گوانتانا موبے جیل

امریکہ کاگوانتانا موبے جیل سے 2پاکستانیوں سمیت 3 قیدیوں کی رہائی کا حکم

Spread the love

گوانتانا موبے جیل

واشنگٹن،کیوبا (جے ٹی این آن لائن نیوز) بائیڈن انتظامیہ نے دنیا کی بدنام زمانہ جیل گوانتانا موبے

سے تین قیدیوں کی رہائی کے احکامات جاری کیے ہیں۔ ان افراد کیخلاف 20 سالوں سے کوئی جرم

ثابت نہیں ہوا اور نہ کوئی مقدمہ عائد کیا گیا۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق رہائی پانیوالوں میں2پاکستانی

اورایک یمنی شہری شامل ہیں۔ گوانتاناموبے جیل سے رہا ہونے والے ایک پاکستانی 54سالہ

عبدالربانی ہیں۔ رہائی پانے والے دوسرے پاکستانی 73سالہ سیف اﷲ پراچہ ہیں۔ میڈیکل رپورٹس کے

مطابق سیف اﷲ ذیابیطس اور دل کے مرض میں مبتلا ہیں۔ سیف اﷲ پراچہ کو2003میں تھائی لینڈ

سے حراست میں لیا گیا تھا۔ زیرحراست قیدیوں میں سب سے زیادہ معمرہونے کیساتھ وہ سب سے

زیادہ بیمار بھی ہیں۔ سیف اﷲ پراچہ کو عسکری تنظیم القاعدہ سے تعلق کے شبے میں پکڑا گیا تھا

مگر ان پر کبھی فرد جرم عائد نہیں کی گئی۔ ان کی رہائی کے نوٹیفکیشن میں فیصلہ کا صرف اتنا بتایا

گیا ہے کہ اب وہ امریکہ کیلئے خطرہ نہیں رہے۔ انہیں ستمبر 2004 سے گوانتانامو بے میں رکھا گیا

ہے۔ سیف اﷲ پراچہ ان40 قیدیوں میں شامل ہیں جو اب تک گوانتانامو بے میں بند ہیں۔ جبکہ2003 میں

یہ تعداد تقریبا700 تھی۔ قانونی ماہرین کا کہنا ہے کہ نظرثانی بورڈ کے تازہ ترین فیصلے کے بعد

تقریبا نو قیدی ایسے ہیں جنہیں الزامات سے بری کر کے ان کی رہائی کی راہ ہموار کر دی گئی ہے۔

گوانتانا موبے جیل

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply