کینیڈین شہری پر فائرنگ، پشاور پولیس اور مجروح کے والد کا موقف

کینیڈین شہری پر فائرنگ، پشاور پولیس اور مجروح کے والد کا موقف

Spread the love

پشاور(بیورو چیف، عمران رشید خان) کینیڈین شہری پر فائرنگ

Journalist Imran Rasheed

پشاور پولیس کے ڈی آئی جی سید امتیاز الطاف اور حساس ادارے کے سابق

ریٹائرڈ افسر کی ایماء پر مبینہ طور پر کینیڈین شہری اور کاروباری شخصیت

عمران خان اور ان کے بھائی پر قاتلانہ حملے کے حوالے سے-

کینیڈین شہری پر فائرنگ

” جتن” جرنل ٹیلی نیٹ ورک ( جے ٹی این آن لائن ) نے لیڈی ریڈنگ ہسپتال

( ایل آر ایچ) میں قائم پولیس کی چوکی سے رابطہ قائم کیا تو پولیس چوکی کے

انچارج نے بتایا اس حوالے سے ان کے پاس کسی بھی قسم کی کوئی ایف آئی

آر یا تحریری رپورٹ موجود نہیں ہے-

= ضرور پڑھیں= کینیڈین شہری پر قاتلانہ حملہ، ڈی آئی جی نامزد

——————————————————————————
جتن کے رابطہ کرنے پر پولیس کے ایک اور افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی

شرط پر بتایا کہ مذکورہ ڈی آئی جی نوابی شخصیت کے حامل افسر ہیں، پولیس

پر الزامات تو لگتے ہی رہتے ہیں، انہوں نے یہ بھی کہا کہ ڈی آئی جی اس وقت

او ایس ڈی ہیں اور وہ کسی پر قاتلانہ حملہ کروانے میں ملوث نہیں ہو سکتے-

=-،-= ماتحت افسر کیخلاف مقدمہ درج نہیں کر سکتے، پولیس افسر

زخمی افراد جھوٹ بول کر ان کے کیرئیر پر داغ لگانا چاہتے ہیں، کیونکہ وہ اس

وقت ریٹائرمنٹ کے منتظر ہیں، متاثرین کو چاہیے کہ وہ پولیس افسر کو اس

معاملے میں گھسیٹنے کی کوشش کرنے سے باز رہیں، پولیس افسر نے یہ بھی

کہا کہ کسی ماتحت افسر میں اتنی ہمت اور جرات نہیں کہ وہ اپنے سابق سی سی

پی او سید امتیاز الطاف کے خلاف ایف آئی آر درج کر سکے۔

=-،-= پولیس نامزد افراد کیخلاف مقدمہ اندراج سے انکاری، والد ایم سلطان
کینیڈین شہری پر فائرنگ
مجروح کینیڈین شہری عمران خان کے والدپشاور پریس کلب میں نیوز کانفرنس میں سوالوں کے جواب دیتے ہوئے
=دیکھیں= مجروح کینیڈین عمران خان کے والد کی پریس کانفرنس

پشاور میں قاتلانہ حملے میں بھائی سمیت زخمی ہونیوالے کینیڈین شہری و

کاروباری شخصیت عمران خان کے والد حاجی محمد سلطان ولد میر رحمان خان

سکنہ اتحاد کالونی نے پشاور پریس کلب میں دوران نیوز کانفرنس کہا میرا بیٹا

عمران خان، ڈی آئی جی امتیاز الطاف اور (ر) کرنل نعیم خان تینوں آپس میں

شاہین انٹر پرائز میں کاروباری پارٹنر تھے- دو ہزار اٹھارہ کو میرا بیٹا ملک سے

باہر چلا گیا، اس کی غیر موجودگی میں انہوں نے اسکا حصہ ایک داؤد نامی

صراف پر بیچ ڈالا، جب وہ 2019ء واپس آیا تو اس نے اپنے شیئرز کا مطالبہ

کیا جو انہوں نے تسلیم کرنے سے انکار کر دیا، جس پر میرے بیٹے نے عدالت

کا دروازہ کھٹکھٹایا، تو انہوں نے میری بیٹے اور شاہین انٹر پرائزز کے منیجر

پر ایف آئی آر کٹوا دی، جو عدالت میں جھوٹی ثابت ہوئی اور عدالت نے میرے

بیٹے اور شاہین انٹرپرائزز کے مینجر کو بری کر دیا-

=-،-= خیبر پختونخوا سے متعلق مزید خبریں (=-= پڑھیں =-=)

مجروح عمران خان کے والد نے مزید بتایا پھر میرے بیٹے کو دھمکیاں ہی دینا

شروع کر دیں- کل دو نومبر میرا بیٹا عمران خان اپنے چھوٹے بھائی کامران خان

کے ہمراہ عدالت سے پیشی کے بعد گھر واپس آ رہے تھے تو ان پر فائرنگ کا

واقعہ پیش آ گیا، جس میں دونوں کو تین تین گولیاں لگیں، ابھی وہ ہسپتال میں زیر

علاج ہیں- کل دو بجے پیش آنے والے قاتلانہ حملے کے بعد سے اب تک مختلف

اوقات میں ہمارے پاس پولیس آتی رہی ہے، جسمیں ڈی ایس پی بھی تھا، ہم انہیں

اپنا موقف پیش کرتے رہے ہیں، مگر پولیس اس کو ماننے کو تیار نہیں، کہتے

ہیں جو ہم چاہیں گے وہ ایف آئی آر کاٹیں گے، کیونکہ ہم اپنے افسر کے خلاف

ایف آئی آر نہیں کاٹ سکتے- تم لوگ اپنا بیان تھوڑا سا بدل دیں-

=-،-= وزیراعظم، وزیراعلیٰ داد رسی کریں، والد عمران خان

حاجی محمد سلطان ولد میر رحمان خان سکنہ اتحاد کالونی نے وزیراعظم عمران

خان، وزیراعلیٰ کے پی کے محمود خان اور آئی جی پولیس کے پی کے معظم

جاہ انصاری سے پر زور مطالبہ کیا کہ وہ انہیں انصاف دلانے کیلئے ہمارے

نامزد کردہ ملزمان ڈی آئی جی امتیاز الطاف اور (ر) کرنل کیخلاف ایف آئی آر

درج کرائیں، شفاف تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیٹی تشکیل دینے کے احکامات

جاری کریں تاکہ کسی بھی فریق کے ساتھ نا انصافی نہ ہونے پائے، گناہگار کو

سزا اور بے گناہ کو اس کا حق مل سکے-

کینیڈین شہری پر فائرنگ ، کینیڈین شہری پر فائرنگ ، کینیڈین شہری پر فائرنگ

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply