کینیڈا میں اسلاموفوبیا کیلئے کوئی جگہ نہیں، وزیراعظم جسٹن ٹروڈو

کینیڈا میں اسلاموفوبیا کیلئے کوئی جگہ نہیں، وزیراعظم جسٹن ٹروڈو

Spread the love

اٹاوا(جے ٹی این آن لائن انٹرنیشنل نیوز) کینیڈا میں اسلاموفوبیا

کینیڈین وزیر اعظم جسٹن ٹروڈو نے دہشتگرد کی جانب سے پاکستانی نژاد کینیڈین

مسلم خاندان کے چار افراد کو گاڑی کے نیچے کچلنے کے واقعے کی شدید مذمت

کرتے ہوئے کہا کینیڈا میں اسلامو فوبیا کیلئے کوئی جگہ نہیں۔ وہ اس حملے سے

خوفزدہ ہیں، ان لوگوں کے پیاروں کیلئے جو نفرت انگیز حرکتوں سے دہشت زدہ

ہیں، ہم آپ کیلئے حاضر ہیں، کینیڈا کی مسلم برادری جانتی ہے ہم آپ کیساتھ

کھڑے ہیں، ہماری کسی بھی برادری میں اسلاموفوبیا کی گنجائش نہیں ہے، یہ

نفرت حقیر ہے اسے روکنا ہو گا-

=-= ایسی ہی مزید معلومات پر مبنی خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

تفصیلات کے مطابق کینیڈا کے جنوب میں صوبہ اونٹاریو میں ایک شخص نے پک

اپ ٹرک ایک مسلمان خاندان پر چڑھا دیا جس کے نتیجے میں 4 افراد جاں بحق

ہوگئے، پولیس نے واقعہ کو نفرت انگیز ” سوچا سمجھا “ حملہ قرار دیا اور کہا کہ

اس کے تمام شواہد بھی ہیں کہ حملہ ایک منصوبہ بندی کے تحت کیا گیا جبکہ ایک

اور اعلیٰ عہدیدار نے نیوز کانفرنس میں بتایا 20 سالہ ملزم جس نے ” زرہ “ کی

طرح کی کوئی چیز پہنی ہوئی تھی حملے کے بعد موقع سے فرار ہو گیا اور جائے

وقوع سے 7 کلو میٹر دور اونٹاریو کے شہر لندن کے ایک مال سے گرفتار ہوا،

ادھر نیو لندن شہر کے میئر ایڈ ہولڈر نے بتایا شہید ہونیوالوں میں 74 اور 44 سالہ

خواتین، 46 سالہ مرد اور 15 سالہ لڑکی شامل ہیں جو ایک ہی خاندان کی 3 نسلیں

تھیں- حملے کے بعد ایک 9 سالہ بچے کو بھی ہسپتال میں داخل کروایا گیا جہاں

اب وہ صحت یاب ہو رہا ہے-

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

میئر ہولڈر نے کہا کہ میں یہ واضح کردوں کہ یہ مسلمانوں کیخلاف بڑے پیمانے

پر قتل و غارت گری تھی کس کی جڑیں ناقابل بیان نفرت میں تھیں- حملہ آور کی

شناخت نیتھانیئل ویلٹمین کے نام سے ہوئی ہے- پولیس کے مطابق حملہ آور متاثرہ

افراد کو نہیں جانتا تھا، حکام ممکنہ دہشت گردی کی فرد جرم عائد کرنے کیلئے

وفاقی پولیس اور اٹارنی جنرل کیساتھ رابطے میں ہیں۔ حکام نے مزید بتایا جاں

بحق افراد میں عمر رسیدہ ماں، فزیوتھراپسٹ بیٹا، بہو اور کمسن پوتی شامل ہیں

جبکہ نو برس کا پوتا شدید زخمی ہو گیا۔ خاندان کو ٹرک سے روندنے والا دہشت

گرد مذہبی تعصب میں مبتلا تھا- دہشت گردی کے ایک اور واقعے سے پاکستانیوں

سمیت مسلم کمیونٹی تشویش کا شکار ہے- کینیڈین پاکستانی رکن پارلیمنٹ اقرا خالد

نے واقعے پر اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا نفرت کا مقابلہ کر کے جانیں بچائی

جا سکتی ہیں۔

کینیڈا میں اسلاموفوبیا

Leave a Reply