کوویڈ 19، 30 لاکھ پاکستانی خاندانوں کی زندگی وبال بن گئی، ڈاکٹر امجد ثاقب

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد( جے ٹی این آن لائن اکنامک نیوز) کوویڈ 19 پاکستانی خاندان

معروف سماجی کارکن، بلاسود مائیکرو فنانس کے پہلے پاکستانی پروگرام اور

اخوت کے بانی، ڈاکٹر محمد امجد ثاقب نے کہا ہے کہ کرونا وائرس ( کوویڈ 19 )

کی وجہ سے 30 لاکھ پاکستانی خاندانوں کو اپنی زندگی کی گاڑی دوبارہ معمول پر

لانے کیلئے قرضہ لینے کی ضرورت آن پڑی ہے۔

——————————————————————————
یہ بھی پڑھیں : کیا ملک، کیا ہی اس کے باسیوں کا خیال رکھنے والی حکومت
——————————————————————————

کوویڈ 19 کے باعث ان افراد کے کمانے والے افراد کا روزگار ختم ہوگیا ہے، ان

خاندانوں کی 10 تا 30 ہزار روپے کے بلا سود قرضے کی ضرورت ہے، تاکہ

مشکل کی اس گھڑی میں اپنی ضروریات پوری کر سکیں۔

معروف سماجی کارکن، بلاسود مائیکرو فنانس کے پہلے پاکستانی پروگرام اور

اخوت کے بانی، ڈاکٹر محمد امجد ثاقب نے کہا ہے کہ اخوت پہلے ہی اس کیلئے

پروگرام کا آغاز کر چکی ہے۔

یہی وقت ہے متاثرین کی مدد کا ورنہ مزید اضافہ ہوتا جائیگا، ڈی ایم اے ثاقب

انہوں نے کہا کہ اب وقت ہے کہ، ہم وباء سے متاثرہ افراد کی مدد کریں، ورنہ

مزید کئی خاندان غربت کی لکیر سے نیچے چلے جائیں گے۔

حکومت بھی 12 ملین ضرورتمندوں میں 12 ہزار روپے فی کس تقسیم کر رہی

ہے۔ موجودہ صورتحال کافی مشکل ہے جو حقیقی معنوں میں بحیثیت قوم ہمارے

عمل کی متقاضی ہے۔

مشترکہ حکمت عملی کے تحت اقدامات ضروری

صاحب ثروقت افراد ضرورتمند طبقات کی دل کھول کر مدد کریں۔ مسائل پر قابو

پایا جا سکتا ہے، جس کیلئے مشترکہ حکمت عملی کے تحت اقدامات کی ضرورت

ہوتی ہے۔

——————————————————————————
دوستو : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر کریں، فالو کریں اپڈیٹ رہیں
——————————————————————————

حالیہ بحران کے باعث ضرورتمند طبقات اور دیہاڑی دار مزدوروں کی مالی

معاونت کی اشد ضرورت ہے۔ جس کیلئے ہم سب کو مل کر کردار ادا کرنا ہو گا

تاکہ لاکھوں افراد کو غریب سے غریب تر ہونے سے تحفظ فراہم کیا جا سکے۔

کوویڈ 19 پاکستانی خاندان

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply