Pakistan-Corona-Virus-Updates

لاک ڈ اون میں نرمی، کورونا مزید 83 افراد کی جان لے گیا

Spread the love

کورونا 83 افراد کی جان

اسلام آباد، کراچی ،لاہور (جے ٹی این آن لائن نیوز) حکومت نے بین الصوبائی انٹر سٹی اور انٹرا

سٹی پبلک ٹرانسپورٹ 17 کے بجائے 16 مئی سے 50 فیصد مسافروں کیساتھ بحال کرنے کا فیصلہ

کرلیا۔ 16 مئی سے تاحکم ثانی پبلک ٹرانسپورٹ 50 فیصد مسافروں کیساتھ چلائی جائیگی۔ ریل گاڑیاں

70 فیصد مسافروں کیساتھ چلائی جائیں گی۔وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت این سی او سی کا اہم

اجلاس ہوا، جس میں عید کے دوران ایس او پیز پر عملدرآمد کا جائزہ لیا گیا۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن

سنٹر نے عید تعطیلات میں ایس او پیز پر عملدرآمد سے متعلق اطمینان کا اظہار کیا۔این سی او سی نے

اجلاس میں فیصلہ کیا کہ 17 مئی سے مارکیٹیں اور دکانیں رات 8 بجے تک کھلی رہیں گی، مارکیٹوں

اور دکانوں کے اوقات کار 17 مئی سے تاحکم ثانی یہی رہیں گے، 17 مئی سے سرکاری اور نجی

دفاتر کے اوقات کار معمول کے مطابق ہوں گے، دفاتر میں ملازمین کی 50 فیصد حاضری کی اجازت

ہوگی، 50 فیصد عملہ گھر اور 50 فیصد دفاتر میں کام کرے گا۔ 19 مئی کے اجلاس میں آئندہ کے

لائحہ عمل کا فیصلہ کیا جائے گا، عوام ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں، عوام ترجیحی بنیادوں

پر 1166پر ویکسین کی رجسٹریشن کو یقینی بنائیں۔ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر نے متعلقہ اداروں

اور ایجنسیوں کو سختی سے ایس او پیز پر عملدرآمد کی مانیٹرنگ کا حکم دیا۔دوسری طرف کورونا

وائرس سے گذشتہ 24گھنٹوں کے دوران 83 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی تعداد 19

ہزار 467 ہوگئی، جبکہ ایک ہزار 531 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، جس کے بعدپاکستان میں کورونا کے

تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 8 لاکھ 74 ہزار 751 ہوگئی۔ملک بھر میں اب تک ایک کروڑ 24 لاکھ 10

ہزار 924 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 30 ہزار 248 نئے ٹیسٹ کئے

گئے، اب تک 7 لاکھ 83 ہزار 480 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 4 ہزار 387 مریضوں کی

حالت تشویشناک ہے۔ادھر کورونا کی سنگین صورتحال کے باعث پنجاب میں 23 مئی تک تعلیمی

ادارے بند جبکہ سندھ میں تدریسی عمل معطل کر دیا گیا۔ سندھ کے وزیررعلیم سعید غنی نے کہا گائیڈ

لائنز پر مکمل عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے، آن لائن کلاسز جاری رہیں گی۔ کورونا صورتحال کے

پیش نظر تدریسی نظام کو 17 مئی سے 23 مئی تک معطل کیا جا رہا ہے، اس دوران تعلیمی ادارے

کھلیں رہیں گے، بچوں کو آن لائن کلاسز، واٹس اپ، ای میل سمیت دیگر ذرائع سے تعلیمی سلسلہ

جاری رکھا جائے گا، تعلیمی ادارے کے سربراہ پرنسپل یا ہیڈ ماسٹرمختصر عملے کو بلائیں گے،

تعلیمی سلیبس کی گائیڈ لائنز نومبر 2020 کو جاری کی گئی ہیں، اس پر مکمل عملدرآمد کو یقینی بنایا

جائے۔جبکہ وزیر تعلیم پنجاب مراد راس نے صوبے میں سرکاری و نجی اسکول 23مئی 2021 تک

بند رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا 18مئی 2021 کو اس حوالے سے جائزہ اجلاس منعقد کیا جائے

گا، سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا پنجاب کے سرکاری و نجی اسکول

23مئی 2021تک بند رہیں گے، فیصلہ کورونا کے پھیلاکی صورتحال کے پیش نظر کیا گیا ، 18مئی

2021کو اس حوالے سے جائزہ اجلاس منعقد کیا جائیگا ، انہوں نے عوام سے درخواست کی کہ تمام

لوگ کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں۔دریں اثناء پنجاب میں لاک ڈاؤن 16 مئی سے بڑھا

کر 24 مئی تک کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔محکمہ داخلہ پنجاب اور محکمہ صحت پنجاب نے

صوبے میں لاک ڈاؤن مزید ایک ہفتہ بڑھانے کی تجویز پیش کی ہے۔ صوبائی محکموں کی جانب سے

کہا گیا ہے کہ لاک ڈاؤن بڑھانے سے کورونا صورتحال مزید بہتر ہو سکتی ہے۔پنجاب میں لاک ڈاؤن

مزید بڑھایا جائے گا یا نہیں فیصلہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کے اجلاس میں ہو

گا۔ تاہم نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی)نے پنجاب میں لاک ڈاؤن مزید ایک ہفتہ بڑھانے

کی تجویز مسترد کر دی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق لاک ڈاؤن مزید ایک ہفتہ بڑھانے کی تجویز محکمہ

صحت اور محکمہ داخلہ کی جانب سے دی گئی تھی ۔ذرائع کے مطابق دونوں محکموں نے اپنی تجویز

میں کہا تھا کہ لاک ڈاؤن بڑھانے سے کورونا وباء کی صورتحال مزید بہتر ہو سکتی ہے ۔ این سی او

سی نے ایس او پیز پر عملدرآمد کے باعث کورونا وباء کنٹرو ل میں ہونے کے باعث تجویز مسترد کی

۔

کورونا 83 افراد کی جان

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply