Punjab Lock Down

کورونا کے حملے تیز، پنجاب بھر میں کل سے 2ہفتوں کیلئے مکمل لاک ڈاؤن

Spread the love

کورونا کے حملے تیز

اسلام آباد،لاہور،راولپنڈی ،پشاور ،کراچی،پاک پتن(جے ٹی این آن لائن نیوز) کورونا وائرس سے 46

افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی تعداد 13 ہزار 476 ہوگئی،گذشتہ 24 گھنٹوں کے

دوران 2 ہزار 338 نئے کیسز رپورٹ ہوئے،جس سے ملک بھرمیں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی

تعداد 6 لاکھ 2 ہزار 536 ہوگئی ۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق

ملک بھر میں اب تک 94 لاکھ 45 ہزار 138 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران

42 ہزار 499 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 5 لاکھ 69 ہزار 296 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ

ایک ہزار 720 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔ادھروفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی انتظامیہ نے

کورونا وائرس کی نئی لہر سے نمٹنے کیلئے اقدامات تیز کرتے ہوئے دارالحکومت کی حدود میں

ماسک کے استعمال کو لازمی قرار دیدیا۔ڈی سی اسلام آباد کے مطابق انتظامیہ نے ماسک کے

استعمال سے متعلق دفعہ 144 نافذ کردی ہے، اب ماسک نہ پہننے والے شہریوں کیخلاف کارروائی

کی جائے گی، ماسک کے استعمال سے متعلق دفعہ 144 کا نفاذ 2 ماہ کیلئے ہوگا۔دریں اثناء نیشنل

کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے ملک میں کورونا کے مثبت کیسز بڑھنے پر تشویش کا

اظہار کیا ہے،این سی او سی کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق کورونا کے بڑھتے کیسز کا

جائزہ لینے کیلئے خصوصی اجلاس وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت ہوا جس میں کورونا کے

بڑھتے کیسز پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔این سی او سی کے مطابق کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 5

سے 6 فیصد تک ہوگئی ہے، پنجاب، اسلام آباد، خیبرپختونخوا اور آزاد کشمیر کے بڑے شہروں میں

مثبت کیسز کی شرح بڑھی ہے، وفاق کی تمام اکائیاں ایس او پیزپر سختی سے عملدرآمد کیلئے فوری

اقدامات کریں۔این سی اوسی نے وبا کنٹرول کرنے کیلئے پنجاب حکومت کے اقدامات کی تعریف کی ۔

اعلامیے کے مطابق پنجاب اور خیبر پختونخوا کے مختلف شہروں میں لاک ڈاؤن میں توسیع کیلئے

مزید اقدامات زیر غور ہیں ،این سی او سی اجلاس میں کورونا وبا کی نئی قسم کے پھیلاؤ پر بھی تبادلہ

خیال کیا گیا،این سی او سی کا کہنا ہے بعض ملکوں سے بین الاقوامی سفرپر مزید پابندی پر فیصلہ

اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت کے بعد ہوگا۔این سی او سی نے تمام فیڈریٹنگ یونٹس کو فوری طور پر

ایس او پیز پر عملدرآمد کیلئے سخت اقدامات کی ہدایت کی اورکہا شہری اجتماعی بھلائی کیلئے

کورونا سے متعلقہ ایس او پیز پر عمل کریں۔ اعلامیہ میں کہاگیا 10 مارچ سے معمر افراد کی ویکسی

نیشن مہم چل رہی ہے، بزرگ شہری خود کو رجسٹر کرائیں اور ویکسی نیشن مراکز سے انجکشن

لگوائیں۔دوسری طرف وفاقی وزیر منصوبہ بندی اسد عمر نے ملک میں کورونا وبا سے متعلق پیدا

ہوتی خطرناک صور تحا ل کے بارے میں خبردار کرتے ہوئے ایک بیان میں کہا پاکستان میں کورونا

کی تیسری لہر کا آغاز ہوچکا ہے جس میں برطانیہ سے آیا ہوا وائرس زیادہ نمایاں ہے۔ برطانیہ سے

آیا وائر س نہ صرف تیزی سے پھیلتا ہے بلکہ اس سے اموات بھی زیادہ ہوتی ہیں۔ادھرپنجاب حکومت

نے کووڈ19(کورونا) کی تیسری لہرمیں کورونا کیسوں میں اضافے کے خدشے کے پیش نظر

15مارچ سے راولپنڈی سمیت پنجاب بھر میں 2ہفتوں کیلئے مکمل لاک ڈاؤن کا اعلان کر دیا ہے جس

کے تحت 28مارچ تک تما م اضلاع میں شادی تقریبات کیساتھ ہر قسم کے سیاسی ، مذہبی اجتماعات

اور سرگرمیوں پر مکمل پابندی ہو گی اس ضمن میں پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ کیئر ڈیپارٹمنٹ

پنجاب نے باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کیا ہے جو کل بروزپیرسے نافذالعمل ہو گا،نوٹیفکیشن کے مطابق

راولپنڈی ، گوجرانوالہ، گجرات، فیصل آباد ملتان اورسرگودھا میں مکمل لاک ڈاؤن ہو گا تمام قسم کے

شادی ہال و مارکیاں مکمل طور پر بندرہیں گی، صرف کھلے میدان میں سخت ایس او پیز کیساتھ

شادی تقریبات میں محدود مہمانوں کیساتھ شادی کی اجازت ہوگی ہوٹلوں کے اندر اور باہر ڈائننگ ہال

مکمل بندرہیں گے، صرف ہوم ڈلیوری اور ٹیک اوے کی اجازت ہو گی، اسی طرح تمام کاروباری

مراکز شام 6 بجے بند کر دئیے جائیں گے، ہفتہ و اتوار کو تمام کاروبار بند رہے گاتاہم میڈیکل سٹور،

سبزی و فروٹ کی دکانیں ،کریانہ شاپس، پنکچر شاپس، آٹا چکی، چکن ،بیف ،مٹن شاپس، تندور، ٹرک

ہوٹل، پٹرول پمس،زرعی مشینری اور آٹوسپیئر پارٹس کے کاروبار کھلے رہیں گے ،نجی و سرکاری

دفاتر میں 50فیصد عملے کیساتھ کام کی اجازت ہو گی، پبلک مقامات پر ما سک اور ایس و پیز کو

سختی سے عملدرآمد کیلئے ضلعی انتظامیہ اور اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کی ڈیوٹی لگا دی گئی تمام پبلک

پارکس شام 6 بجے بند ہونگے ،صوبائی حکومت کی پالیسی کے تحت ضلعی انتظامیہ نے راولپنڈی

میں بھی لاک ڈاؤن کا اعلان کیا ہے ڈپٹی کمشنر راولپنڈی کے مطابق راولپنڈی میں تمام کاروباری

وتجارتی مراکز ، مارکیٹیں اور بازار شام 6بجے بند کر دیئے جائیں گے، کاروباری مراکز اور ایس او

پیز پر عملدرآمد کیلئے راولپنڈی چیمبر آف کامرس کو اعتماد میں لیا گیا ہے، دریں اثنا پرائمری اینڈ

سیکنڈری ہیلتھ کیئر ڈیپارٹمنٹ کے احکامات کے تحت راولپنڈی میں گلی نمبر4صادق آباد، گلی

نمبر17علامہ اقبال کالونی ، قصر ابو طالب عزیز آباد اور ڈھوک پراچہ صادق آباد کو ہاٹ سپاٹ

علاقوں میں شامل کر کے لاک ڈاؤن کی ہدایت کی گئی ہے ۔جبکہ لاہور میں کورونا کیسز میں اضافے

کے پیش نظر مزید 16 علاقوں جن میں کینٹ کے 5، داتا گنج بخش ٹاؤن کے 2 علاقوں ، اسی طرح

نشتر ٹاؤن کے 3، سمن آباد کے 4 علاقوں شالیمار ٹاؤن ایک، واہگہ ٹاؤن کے 2 علاقوں میں سمارٹ

لاک ڈاؤن نافذ ہے۔ادھرپاکپتن میں کورونا کیسز میں اضافہ کے باعث دربار بابا فریدؒ زائرین کیلئے بند

کر دیا گیا ہے۔ محکمہ اوقاف کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق دربار کے داخلی

راستوں کو بھی زائرین کیلئے بند کر دیا گیا ہے۔ 15اپریل تک دربار پر زائرین کو حاضری دینے کی

اجازت نہیں ہو گی۔ دربار بابا فرید ؒکی مسجد میں ایس او پیز کے تحت پانچ وقت کی نماز ادا کی جا

ئیگی۔ خیبر پختونخوا حکومت نے کورونا وائرس کے پھیلاو کے پیش نظر پشاورشہر کے چار علاقوں

میں مائیکرو سمارٹ لاک ڈاؤن لگانے کا فیصلہ کیا ہے ،ضلعی انتظامیہ کے جاری اعلامیہ کے مطابق

صوبائی دارلحکومت کے علاقوں سٹریٹ نمبر سیکٹر ای 2فیز ون حیات آباد،سٹریٹ نمبر 3 گلبہار نمبر

چار نزد پولیس چچوکی ،سٹریٹ نمبر 11ڈفینس کالونی پشارو کینٹ ار سٹریٹ نمبر 5 سیکٹر ایف vفیز

viحیات آباد میں گزشتہ روز شام چھ بجے سے سمارٹ لاک ڈاون نافذ کیا گیا،اس دوران ان علاقوں

سے ان آوٹ انٹری بند رہے گی ، صرف ضروری اشیاء خوردنو ش، میڈیسن، جنرل سٹور، تندور اور

ایمرجنسی سروس کی دکانیں کھلی رہیں گیں جبکہ علاقوں کی مساجد میں صرف پانچ افراد کو

باجماعت نماز پڑھنے کی اجازت ہو گی،علاقہ مجسٹر یٹ اور پولیس کو مائیکرو سمارٹ لاک ڈاؤن پر

عملدرآمد کے حوالے سے ہدایات جاری کر دی گئیں،خلاف ورزی کر نے والوں کیخلاف قانونی

کاروائی عمل میں لائی جائیگی۔دوسری طرف کورونا وائرس کی نئی لہر کے پیش نظر سول ایوی

ایشن اتھارٹی (سی اے اے) نے ٹریول ایڈوائزری میں توسیع کر دی ہے۔سول ایوی ایشن اتھارٹی کے

مطابق بیرون ملک سے آنیوالے مسافروں، چارٹرڈ اور نجی جہاز رکھنے والی کمپنیز سے متعلق

ٹریول ایڈوائزری میں 18 مارچ تک توسیع کر دی گئی ہے،سی اے اے کے ڈائریکٹر ائیر ٹرانسپورٹ

عرفان صابر کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق کورونا ایس او پیز کے تحت ممالک کی 3

کٹیگریز کا فیصلہ تاحال برقرار رہے گا۔ کیٹیگری اے کے مسافروں کیلئے کورونا ٹیسٹ سے استثنیٰ

ہو گا، کیٹیگری بی کے مسافروں کو پاکستان سفر سے 72 گھنٹے پہلے کورونا ٹیسٹ کروانا لازمی ہو

گا۔

کورونا کے حملے تیز

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply