کورونا وائرس، محبت اور مجبوری ایک ساتھ

روم (جتن آن لائن خصوصی رپورٹ) کورونا وائرس محبت مجبوری

کرونا وائرس کے شکار میاں بیوی ایک ہی دن موت کے منہ میں چلے گئے، ان کے بیٹے کا کہنا ہے میں آخری دم تک ان کو گلے سے بھی نہ لگا سکا۔ مزید پڑھیں

جوڑا 60 سال تک ساتھ رہنے کے بعد ایک ہی روز میں دنیا چھوڑ گیا

اٹلی کے صوبے برگامو کا رہائشی جوڑا 60 سال تک ساتھ رہنے کے بعد ایک ہی روز میں دنیا چھوڑ گیا، 82 سالہ سییرا بیلوٹی اور86 سالہ لومبارڈی گشتہ کئی روز سے کرونا وائرس میں مبتلا تھے اور انہوں نے ایک ہفتے سے خود کو اپنے گھر کے ایک کمرے میں محدود کردیا تھا۔اس حوالے سے ان کے بیٹے کریرا نے سوشل میڈیا پر اپنے پیغام میں کہا جب انہیں گھر سے ہسپتال منتقل کیا گیا تو انہیں 102بخار تھا، ہسپتال میں دونوں کو ایک ہپی وارڈ میں رکھا گیا تھا، تاہم چند گھنٹوں بعد ہی ان کی موت واقع ہوگئی۔انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں ہونے کے باعث میں اور میری بہن ان سے ملاقات بھی نہ کرسکے-

وائرس نے ہمیں آخری مرتبہ ملنے بھی نہ دیا، بیٹا

بیٹے کا مزید کہنا تھا یہ بات انتہائی تکلیف دہ ہے کہ جب ہمارے اپنے کسی تکلیف میں ہوں اور ہم انہیں گلے سے لگا کر تسلی بھی نہیں دے سکتے۔
واضح رہے اٹلی میں کرونا وائرس کے مریضوں میں جہاں اضافے کے باعث چھ کروڑ افراد کو گھروں تک محدود کردیا گیا ہے اور حکومت کی جانب سے ہر قسم کی تقریبات پر پابندی عائد کردی گئی ہے ، وہیں ایک ہی روز میں 120سے زائد ہلاکتیں ہونا شروع ہو گئی ہیں۔ گزشتہ برس19دسمبر کو چین میں کورونا وائرس کا پہلا مریض سامنے آیا تھا اور یہ وائرس اب تک دنیا کے 108ممالک میں پھیل چکا ہے جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد ایک لاکھ 10ہزار سے زائد ہوگئی ہے۔

کورونا وائرس محبت مجبوری

Leave a Reply

%d bloggers like this: