کورونا ٹیسٹ لازم,

کورونا سے مزید 92 اموات ،سندھ حکومت کا لاک ڈاؤن میں نرمی کا فیصلہ

Spread the love

کورونا مزید 92 اموات

اسلام آباد ، کراچی(جے ٹی این آن لائن نیوز) کورونا وائرس سے 92 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے

بعد اموات کی تعداد 21 ہزار 22 ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے

مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 2 ہزار 28 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ، جس کے بعد پاکستان میں

کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 9 لاکھ 26 ہزار 695 ہوگئی۔ملک بھر میں اب تک ایک کروڑ

33 لاکھ 67 ہزار 920 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 51 ہزار 523 نئے

ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 8 لاکھ 52 ہزار 574 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 3 ہزار 630

مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔این سی او سی نے پاکستان سے بیرون ملک جانے اور آنے والوں

کیلئے اہم فیصلہ کرتے ہوئے جزوی ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ کے اجرا کی منظو ر ی دیدی ،جس کے

بعد بیرون ملک سفر کرنیوالے جزوی ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ حاصل کرپائیں گے۔این سی او سی کے

مطابق جزوی ویکسی نیشن سرٹیفکیٹ ایک ڈوز لگوا کر بیرون ملک جانے والوں کو ملے گا اور

سرٹیفکیٹ کا اجرا نادرا کے آن لائن سسٹم سے ہوگا جبکہ وزارت قومی صحت حسب ضرورت

سرٹیفکیٹ میں تبدیلی کی مجاز ہوگی۔ این سی اوسی نے جمعرات سے 18 سال سے زائد عمر کے

افراد کی ویکسی نیشن کا بھی فیصلہ کیا ،این سی اوسی نے ویکسی نیشن کیلئے شہریوں کو

رجسٹریشن کی ہدایت کی تھی،ملک بھر میں اب تک 79 لاکھ 53 ہزار سے زائد افراد کی ویکسی نیشن

مکمل کی جاچکی ہے۔ادھر سندھ حکومت نے صوبے بھر میں کورونا وائرس کی صورتحال میں

بہتری کو دیکھتے ہوئے لاک ڈاؤن میں نرمی لانے کا فیصلہ کیا ہے۔ حکو مت آئندہ چند روز میں

کاروبار رات 8 بجے تک کھولنے کا اعلان کر دیگی۔یہ بات صوبائی وزیر سعید غنی نے کراچی

چیمبر آف کامرس میں ایک تقریب سے خطاب میں کہی۔ ان کا کہنا تھا بازاروں پر پابندیاں مجبوری

سے لگائی گئی ہیں، تاہم اب ہم چیزیں کھولنے کی طرف جا رہے ہیں۔دوسری جانب سندھ حکومت نے

فیصلہ کیا ہے کہ ویکسین نہ لگوانے والے سرکاری ملازم کو جولائی کی تنخواہ نہیں ملے گی۔ وزیر

اعلی مراد علی شاہ نے صوبائی محکمہ خزانہ کو ہدایت جاری کر دی۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ

کی زیر صدارت کورونا صوبائی ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا جس میں صوبے میں کورونا صورتحال

کا جائزہ لیا گیا۔ مراد علی شاہ نے محکمہ خزانہ کو ہدایت کی کہ جو سرکاری ملازم ویکسین نہیں

لگوائے گا اسکی جولائی سے تنخواہ بند کی جائے۔ اجلاس کو بتایا گیا سندھ میں اب تک 15 لاکھ سے

زائد افراد کو ویکسین لگائی جاچکی ہے، ضلع شرقی کورونا سے بدستور سب سے زیادہ متاثر ہے،

27 مئی سے 2 جون تک ضلع شرقی میں 21 فیصد نئے کیسز اور 20 اموات ہوئیں، گزشتہ ماہ سندھ

میں 392 افراد کورونا سے جاں بحق ہوئے، انتقال کر جانیوالوں میں سے 238 وینٹی لیٹرز پر تھے،

73 افراد کا انتقال گھروں پر ہوا۔

کورونا مزید 92 اموات

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply