ریکارڈ201اموات

کورونا ،مزید119اموات,4113 نئے کیسز رپورٹ

Spread the love

کورونا مزید 119 اموات

لاہور ،کوئٹہ ،اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن نیوز) ملک بھر میں کورونا وائرس سے مزید 119 افراد

جاں بحق ہو نے کے بعد اموات کی تعداد 18 ہزار 429 ہوگئی،4 ہزار 113 نئے کیسز رپورٹ ہوئے،

پاکستان میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 8 لاکھ 41 ہزار 636 ہوگئی۔ نیشنل کمانڈ اینڈ

آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 37

ہزار 587 کورونا ٹیسٹ کئے گئے، جس کے بعد مجموعی کووڈ 19 ٹیسٹس کی تعداد 11,965,682

ہوگئی ہے۔گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 4 ہزار 113 مثبت کیسز رپورٹ ہوئے

ہیں۔ اس طرح پاکستان میں کورونا کے مصدقہ مریضوں کی تعداد 841,636 ہوگئی ہے۔ مثبت کیسز

کی شرح 9.17 فیصد ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اب تک سندھ میں 2 لاکھ87 ہزار 643 ،

پنجاب میں 3 لاکھ 10 ہزار 616، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 21 ہزار 099، اسلام آباد میں 76 ہزار

696، بلوچستان میں 22 ہزار 776 ، آزاد کشمیر میں 17 ہزار 465 اور گلگت بلتستان میں 5 ہزار

341 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ملک

بھر میں کورونا کے فعال مریضوں کی تعداد84 ہزار 480 ہے۔ جب کہ 5 ہزار سے زائد مریضوں کی

حالت تشویشناک ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا سے مزید 119 افراد جاں

بحق ہوگئے ہیں جس کے بعد اب اس وبا سے جاں بحق ہونے والے افراد کی تعداد مجموعی طور پر

18 ہزار 429 ہوگئی ہے۔ این سی او سی کے مطابق کورونا سے ایک دن میں 5 ہزار 665 مریض

صحت یاب ہوئے جس کے بعد صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد 738,727 ہوگئی ہے۔

دوسری طرف پنجاب ،بلوچستان اور خیبر پختونخوا حکومتوں نے کورونا وائرس پھیلنے کے خطرات

اور عیدالفطر پر لوگوں کی نقل وحمل کو محدود کرنے کے پیش نظر 8 مئی سے مکمل لاک ڈاؤن کا

فیصلہ کر لیا ہے اسلام آباد میں بھی لاک ڈاؤن کا نوٹیفکیشن جاری۔یہ اہم فیصلہ این سی او سی کی

ہدایات پر کیا گیا وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کی زیر صدارت سول سیکرٹریٹ میں منعقد

اجلاس میں کیا گیا۔ فیصلے کے تحت 8 مئی سے صوبے بھر میں ہر قسم کی پبلک ٹرانسپورٹ اور

سیاحتی مقامات بند رہیں گے۔ شہروں کے داخلی اور خارجی راستوں پر چیکنگ پوائنٹس قائم کئے

جائیں گے جن پر پولیس اور رینجرز کے جوان ڈیوٹیاں سرانجام دیں گے۔ڈاکٹر یاسمین راشد نے چیف

سیکرٹری پنجاب، دیگر اعلیٰ سول اور عسکری حکام کو ہدایت کی کہ کورونا پر قابو پانے کیلئے

اگلے 15 سے 20 دن نہایت اہم ہیں، وبا پر قابو پانے کیلئے بھرپور کوششیں کرنا ہونگی۔ڈاکٹر یاسمین

راشد کا کہنا تھا کہ عوام عیدالفطر سادگی سے منائیں اور احتیاطی تدابیر پر عمل کر کے ذمہ دار

شہری ہونے کا ثبوت دیں۔ عید کے موقع پر زیادہ چھٹیاں دینے کا مقصد لوگوں کی نقل وحمل کو

محدود کرنا ہے۔چیف سیکرٹری پنجاب کا کہنا تھا کہ احتیاطی تدابیر کی اہمیت سے متعلق شعور اور

آگاہی کو بڑھایا جائے گا۔ شہری عید کی چھٹیوں کے دوران غیر ضروری سفر سے گریز کریں۔ این

سی او سی کی ہدایت کے مطابق چھٹیوں کے دوران پارکس اور سیاحتی مقامات کو مکمل بند رکھا

جائے۔ پنجاب کے بعد خیبرپختونخوا حکومت نے بھی کورونا کی تیسری لہر کے پیش نظر8 مئی سے

16 مئی تک کاروباری سرگرمیاں اور ٹرانسپورٹ مکمل بند رکھنے سمیت متعدد پاپندیاں لگا تے ہوئے

مکمل لاک ڈاؤن کا اعلان کر دیا۔ بدھ کو صوبائی محکمہ داخلہ کے حکم نامے کے مطابق صوبہ بھر

میں تمام کاروباری سرگرمیاں، مارکیٹیں اور بازار 8 مئی سے 16 مئی تک بند ہوں گے تاہم پابندی کا

اطلاق میڈیکل اسٹورز، تندور،کریانہ کی دکانوں پر نہیں ہوگا۔ دودھ، دہی،گوشت،چکن شاپس، ٹائر

پنکچر، بیکریز بھی پابندی سے مستثنی ٰہوں گی۔ اس کے علاوہ سبزی، فروٹ، پٹرول پمپس، یوٹیلٹی

سروسز اور ہوٹل و ریسٹورنٹس کے ٹیک اووے پر بھی پابندی نہیں ہوگی۔حکم نامے کے مطابق بازار

مکمل طور پر بند ہوں گے، صوبہ بھر میں سیاحتی مقامات سوات، کالام، گلیات، ناران کاغان 08 مئی

سے 16 مئی تک مکمل طور پر بند ہوں گے جبکہ سیاحتی مقامات میں واقع ہوٹل، پارکس، ٹورسٹ

ریزورٹ بھی بند ہوں گے۔حکم نامے میں مزید کہا گیا ہے کہ صوبہ بھر میں ہر قسم کی ٹرانسپورٹ

بھی 8 مئی سے 16 مئی تک بشمول پبلک ٹرانسپورٹ اڈے بند ہوں گے۔ بلوچستان حکومت نے بھی

8مئی سے لاک ڈاؤں کا فیصلہ کیا ہے دوسری طرف وزیر ثقافت،سیاحت و نوادرات سندھ کی

خصوصی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے سیکریٹری کلچرسندھ نے نوٹیفکیشن جاری کیا ہے کہ صوبے

میں کووڈ کے پیش نظر کینجھر جھیل،مکلی،گورکھ ہل اسٹیشن، موہن جو دڑو سمیت صوبے کے تمام

سیاحتی مقامات 8 مئی سے 15 مئی تک مکمل طور پر بند رہیں گے۔سربراہ این سی او سی و وفاقی

وزیر اسد عمر نے کہا ہے کہ لوگوں کے رجسٹریشن کرانے کی رفتار میں اضافہ ہوا، اب تک

رجسٹریشن کرانیوالوں کی تعداد 50 لاکھ سے تجاوز کرچکی ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹو

ئٹر پر اپنے بیان میں اسد عمر نے کہا کہ ایک روز میں ویکسین لگنے کی تعداد 2 لاکھ سے تجاوز

کرگئی، کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد اور حفاظتی اقدامات جاری رکھیں۔ بلوچستان میں 24 گھنٹوں

کے دوران کورونا کے پھیلا کی شرح بڑھ کر 17.8 فیصد اور کوئٹہ میں 17.2 فیصد ہوگئی۔ محکمہ

صحت کی رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز صوبے میں 628 افراد کے کورونا ٹیسٹ کیے گئے جس

کے نتیجے میں کوئٹہ سے سب سے زیادہ 85کیسز سامنے آئے اور صوبے میں کورونا کے پھیلا کی

شرح 17.8 فیصدرہی جب کہ کورونا وائرس سے متاثر ہونے والوں کی مجموعی تعداد 22

ہزار776ہوگئی، صوبے میں ایکٹو کورونا کیسز کی تعدادکم ہوکر1387رہ گئی ہے سول ایوی ایشن

اتھارٹی نے80فیصدعالمی پروازوں پرپابندی عائدکردی اور انٹرنیشنل فلائٹ آپریشن 20 فیصد محدود

کردیا گیا، یہ پابندی 20 مئی تک نافذ العمل رہے گی۔ سی اے اے نے این سی اوسی کی ہدایت پرانٹر

نیشنل فلائٹ آپریشن محدود کرتے ہوئے پاکستان آنیوالی ہفتہ وارعالمی پروازوں کی تعداد590سیکم کر

کے123 کردی گئیں ہیں۔ کراچی آنیوالی ہفتہ وارعالمی پروازوں کی تعداد189سیکم کرکے40 ، اسلام

آبادایئرپورٹ آنیوالی ہفتہ وارپروازیں120 سے 25 تک اور پشاورایئرپورٹ آنے والی عالمی پروازوں

کی تعداد33سیکم کرکے 6 کردی گئیں۔ اسی طرح کوئٹہ آنے والی پروازیں 10سیکم کردی گئیں،

صرف 2پروازیں آپریٹ ہوں گی جبکہ فیصل آبادآنیوالی عالمی پروازیں 24سیکم کرکے5 ، سیالکوٹ

آنے والی عالمی پروازیں43 سیکم کرکے8 اور ملتان ایئرپورٹ پر ان باونڈ فلائٹس کی تعداد41 سے کم

کرکے 8 تک محدود کردی ہے۔ سول ایوی ایشن اتھارٹی این سی او سی کی ہدایت پرباقاعدہ نوٹم جاری

کرچکاہے جبکہ بیرون ملک سے آنیوالے مسافروں کے ریپڈاینٹیجنٹ ٹیسٹ ایئرپورٹ پر شروع

ہوچکے ہیں ، اس حوالے سے ایئرپورٹ پرمحکمہ صحت سندھ کے خصوصی کانٹر قائم کئے گئے

ہیں۔

کورونا مزید 119 اموات

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply