ریکارڈ201اموات

کورونا مزید 104 جانیں لے گیا،24مئی سے تعلیمی ادارے ،ریسٹورنٹس کھولنے کا اعلان

Spread the love

کورونا مزید 104 جانیں

لاہور ،اسلام آباد () کورونا وائرس سے مزید 104 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی

تعداد 19 ہزار 856 ہوگئی۔ پاکستان میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 8 لاکھ 86 ہزار 184

ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے

دوران 3 ہزار 256 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، پنجاب میں 3 لاکھ 29 ہزار 913، سندھ میں 3 لاکھ ایک

ہزار 247، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 27 ہزار 609، بلوچستان میں 24 ہزار 64، گلگت بلتستان

میں 5 ہزار 439، اسلام آباد میں 79 ہزار 552 جبکہ آزاد کشمیر میں 18 ہزار 360 کیسز رپورٹ

ہوئے۔ملک بھر میں اب تک ایک کروڑ 25 لاکھ 52 ہزار 339 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24

گھنٹوں کے دوران 41 ہزار 771 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 7 لاکھ 99 ہزار 951 مریض

صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 4 ہزار 549 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔پاکستان میں کورونا سے

ایک دن میں 104 افراد جاں بحق ہوئے جس کے بعد وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 19 ہزار 856

ہوگئی۔ پنجاب میں 9 ہزار 563، سندھ میں 4 ہزار 835، خیبر پختونخوا میں 3 ہزار 827، اسلام آباد

میں 735، بلوچستان میں 270، گلگت بلتستان میں 107 اور آزاد کشمیر میں 519 مریض جان سے

ہاتھ دھو بیٹھے۔ صوبائی دارالحکومت لاہورمیںکورونا وبا کی تیسری لہر کا زور تھم نا سکا، لاہور میں

موذی وائرس سے مزید 28 افراد جاں بحق، اموات کی تعداد 3916 ہو گئی، جبکہ شہر میں 24

گھنٹوں کے دوران 511 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ترجمان محکمہ صحت کے مطابق

پنجاب میں کورونا وائرس کے 1138 نئے کیسز سامنے آئے، جس کے بعد مریضوں کی مجموعی

تعداد 3 لاکھ 29 ہزار 913 ہو گئی ہے۔اعداد و شمار کے مطابق فیصل آباد 114، راولپنڈی 110،

ملتان 45، رحیم یار خان 44، بہاولپور 35، سرگودھا 32 اور پاکپتن میں 30 مریضوں میں وائرس کی

تصدیق ہوئی ہے۔علاوہ ازیں گوجرانوالہ 22، شیخوپورہ، ڈیرہ غازی خان اور اوکاڑہ میں 20، 20،

ساہیوال 17، مظفرگڑھ اور لیہ میں گیارہ، 11، منڈی بہاو¿الدین، وہاڑی اور بہاولنگر میں نو، 9

مریض سامنے آئے۔ترجمان محکمہ صحت کے مطابق صوبہ بھر میں کورونا وائرس سے مزید 63

ہلاکتیں ہوئیں جس کے بعد اموات کی کل تعداد 9 ہزار 563 ہو چکی ہے۔دوسری طرف حکومت

نے24مئی سے تعلیمی ادارے ،ریسٹورنٹس اور سیاحتی مقامات کھولنے کا اعلان کردیا ۔تفصیلات

کے مطابق اسد عمر کی زیر صدارت نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کا اجلاس ہوا جس میں 24 مئی

سے تعلیمی ادارے، ریسٹورنٹس اور سیاحت کھولنے کا اعلان کیا گیا ۔یکم جون سے شادی ہالز کو آو

¿ٹ ڈور تقریبات کی اجازت ہوگی،اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ 5 فیصد سے کم کورونا کیسز والے

اضلاع میں تعلیمی ادارے 24 مئی سے کھولے جائیں گے ۔ریسٹورنٹس کو آوٹ ڈور ڈائننگ کی اجازت

ہو گی، ریسٹورنٹس رات 12بجے تک کھلے رہیں گے، ٹیک اوے کی اجازت 24 گھنٹے کے لیے

ہوگی، شادی کی تقریب میں 150 افراد حصہ لے سکیں گے، سات جون سے تمام تعلیمی ادارے کھل

جائیں گے،یکم جون سے کھولے جانے والے شعبوں کا حتمی جائزہ 27 مئی کو لیا جائے گا،مزار،

سینما گھر، ریسٹورنٹس کے اندر بیٹھ کر کھانا کھانے، اسپورٹس، میلوں اور ثقافتی تقریبات پر بھی

پابندیاں برقرار رکھی جائیں گی،ان ڈور اور آو¿ٹ ڈور موسیقی، ثقافتی اور مذہبی تقریبات پر مکمل

پابندی رہے گی، ہفتہ اور اتوار کو صوبوں کے درمیان ٹرانسپورٹ کی پابندی بھی جاری رہے گی،

ایس او پیز پر سختی سے عملدرآمد یقینی بنایا جائے گا۔اس سے قبل پنجاب حکومت نے ریسٹورنٹس

میں ایس او پیز کے تحت آو¿ٹ ڈور ڈائننگ کی اجازت دینے سے متعلق سفارشات نیشنل کمانڈ اینڈ

آپریشن سینٹر (این سی او سی) کو پیش کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔فیصلہ صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر

یاسمین راشد کی زیر صدارت سول سیکرٹریٹ میں منعقد اجلاس میں کیا گیا۔چیف سیکرٹری پنجاب،

ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ، صحت اور صنعت کے محکموں کے ایڈمنسٹریٹو سیکرٹریز، کمشنرز

لاہور ڈویڑن، سی سی پی او لاہور، ڈائریکٹر جنرل پبلک ریلیشنزاور اعلیٰ سول اور عسکری حکام نے

اجلاس میں شرکت کی۔اجلاس میں کورونا وباء کی صورتحال، ہسپتالوں میں طبی سہولیات اور

آکسیجن کی فراہمی،ایس او پیز پر عملدرآمد اوردیگراقدامات کا جائزہ لیا گیا۔اجلاس سے خطاب کرتے

ہوئے صوبائی وزیرڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا کہ احتیاطی تدابیر پر عمل نہ ہونے کی صورت میں

آئندہ چند روز میں کورونا کیسزمیں اضافے کا خطرہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایس او پیز پر عملدرآمد

نہ ہونے کیوجہ کورونا وباء کی دوسری لہرمکمل ختم نہ ہوسکی اور تیسری لہر شروع ہو گئی جو

کہ زیادہ خطرناک ثابت ہورہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وباء پر قابو پانے کیلئے عوام کا تعاون ناگزیر

ہے، شہری خود کو اور دوسروں کو محفوظ رکھنے کیلئے ماسک پہننے اور سماجی فاصلہ رکھنے

کوزندگی کا معمول بنا لیں۔ انہوں نے ہدایت کی کہ کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق ڈیٹا کا

تجزیہ کر کے وباء پر قابو پانے کی جامع حکمت عملی تیار کی جائے۔انہوں نے کہا کہ ہسپتالوں میں

ادویات اورآکسیجن کی فراہمی کو یقینی بنایا جا رہا ہے اورکورونا مریضوں کوعلاج معالجے کی

بہترین سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں۔چیف سیکرٹری پنجاب نے کہا کہ حکومت کو لاک ڈاو¿ن کے

باعث کاروباری افراد کی مشکلات کا احساس ہے اور تاجر برادری کو ریلیف دینے کیلئے پابندیوں

میں نرمی کی سفارش کی جائے گی۔ انہوں نے کہ صوبہ میں ریسٹورنٹس میں ایس او پیز کے تحت

آو¿ٹ ڈور ڈائننگ کی اجازت دینے کیلئے سفارشات این سی او سی کو پیش کی جائیں گی۔ چیف

سیکرٹری نے احتیاطی تدابیر اور ویکسینیشن کی اہمیت سے متعلق عوام میں شعور بڑھانے کیلئے

اقدامات کی ہدایت بھی کی۔ اجلاس کو بریفنگ میں بتایا گیاکہ انتظامی افسران مارکیٹوں،ریسٹورنٹس

اور دیگرعوامی جگہوں پر ایس او پیز پر عملدرآمد کرانے کیلئے متحرک ہیں اور گزشتہ روز خلاف

ورزی پر 400دکانوں اور 16ریسٹورنٹس کو سیل کیا گیا۔

کورونا مزید 104 جانیں

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply