Pakistan-Corona-Virus-Updates

کورونا کا عفریت بے قابو،مزید148افراد زندگی کی بازی ہار گئے

Spread the love

کورونا عفریت بے قابو

لاہور ،اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) وفاقی وزیر اسد عمر نے کورونا وائرس کے باعث بڑے

شہروں میں مکمل لاک ڈاؤن کا عندیہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ صرف چند دن کا مارجن رہ گیا ہے،

سنجیدگی نہ دکھائی گئی تو سخت فیصلے لینا پڑیں گے۔اسد عمر کا کہنا تھا کہ پاکستان میں دن بدن

کورونا وائرس کی صورتحال انتہائی سنگین ہوتی جا رہی ہے۔ کراچی اور حیدر آباد میں کیسز ڈبل ہو

چکے ہیں، عوام سے ذمہ داری کا مظاہرہ کرنے کی اپیل ہے۔این سی او سی اجلاس کے بعد وفاقی

وزیر اسد عمر نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ سندھ میں بھی کورونا کا پھیلاؤ بڑھ رہا ہے،

روزانہ 600 مریض ہسپتال پہنچ رہے ہیں، بڑے شہروں میں کورونا کی شرح میں تشویشناک اضافہ ہو

رہا ہے، کئی شہروں میں وینٹی لیٹرز کا استعمال 80 فیصد سے زیادہ ہے، رواں ہفتے کورونا سے

ہلاکتوں کی تعدا دسب سے زیادہ ہے۔اسد عمر کا کہنا تھا کہ کورونا مثبت کیسز کی وجہ سے ہسپتالوں

میں دباؤ بڑھ رہا ہے، آکسیجن پر مریضوں کی تعداد 4 ہزار سے بڑھ گئی ہے، ابھی بڑے شہر بند

نہیں کر رہے، چند دن کی گنجائش رہ گئی ہے، کورونا کی وجہ سے بڑے شہر بند کرنا پڑیں گے۔،

جمعہ سے نئی بندشوں کا آغاز کریں گے وبا کی تیسری لہر میں شدت کی وجہ سے بڑے شہر بند کرنا

پڑیں گے، صوبوں کی مدد کے لیے وفاق تیار کھڑا ہے، رواں ہفتے کورونا سے اموات کی تعداد سب

سے زیادہ ہے،دوسری جانب نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق

کورونا وائرس سے 148 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی تعداد 16 ہزار 600 ہوگئی۔

پاکستان میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 7 لاکھ 72 ہزار 381 ہوگئی۔گذشتہ 24 گھنٹوں کے

دوران 5 ہزار 488 نئے کیسز رپورٹ ہوئے، پنجاب میں 2 لاکھ 76 ہزار 535، سندھ میں 2 لاکھ 74

ہزار 196، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 8 ہزار 462، بلوچستان میں 21 ہزار 127، گلگت بلتستان

میں 5 ہزار 204، اسلام آباد میں 70 ہزار 984 جبکہ آزاد کشمیر میں 15 ہزار 873 کیسز رپورٹ

ہوئے۔ملک بھر میں اب تک ایک کروڑ 13 لاکھ 19 ہزار 832 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24

گھنٹوں کے دوران 47 ہزار 301 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 6 لاکھ 72 ہزار 619 مریض صحتیاب

ہوچکے ہیں جبکہ 4 ہزار 528 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔پاکستان میں کورونا سے ایک دن

میں 148 افراد جاں بحق ہوئے جس کے بعد وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 16 ہزار 600 ہوگئی۔

پنجاب میں 7 ہزار 664، سندھ میں 4 ہزار 559، خیبر پختونخوا میں 2 ہزار 953، اسلام آباد میں

649، بلوچستان میں 225، گلگت بلتستان میں 104 اور ا?زاد کشمیر میں 446 مریض جان سے ہاتھ

دھو بیٹھے۔کراچی میں بھی کورونا کی تیسری لہر کے بعد کیسز کی تعداد میں اضافہ ہونے لگا۔ ضلع

کیماڑی کی انتظامیہ نے مختلف علاقوں میں مائکرو سمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کر دیا۔کراچی کے ضلع

کیماڑی کے تین سب ڈویڑنز بلدیہ ٹاؤن، سائٹ ایریا اور کیماڑی کے علاقوں میں کورونا کیسز کی

بڑھتی تعداد کے باعث 21 اپریل سے 4 مئی تک مائکرو سمارٹ لاک ڈاؤن کا نفاذ کر دیا گیا، جس کا

نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا۔ انتظامیہ کی جانب سے ان علاقوں میں کسی بھی قسم کی تقریبات،

کاروباری سرگرمیاں اور آمد و رفت کو ممنوع قرار دیا گیا ہے ملک بھر میں 50 سے 59 سال تک کی

عمر کے افراد کی ویکسی نیشن کا آغاز ہوگیا۔ شہریوں کو چینی ویکسین سائنو فارم لگائی جائے گی۔

ایکسپو سنٹر لاہور سمیت تمام سنٹرز میں تیاریاں مکمل کرلی گئیں۔ سی ای او ہیلتھ لاہور نے کہا ہے

کہ لاہور میں 5 جبکہ پنجاب میں 126 ویکسی نیشن سنٹرز فعال ہیں، ویکسی نیشن سنٹرز میں عملے

سمیت سہولیات کو بھی بڑھایا جائے گا۔، لاہور میں گزشتہ روز بھی کورونا سے 46 اموات، 2 روز

میں مجموعی طور پر 92 افراد انتقال کر گئے۔جبکہ پنجاب بھرمیں مسلسل دوسرے روز بھی 100

سے زائد اموات ریکارڈ کی گئیں، جس کے بعد کورونا سے اموات کی کل تعداد 7664 تک جا پہنچی۔

صرف ایک روز میں کورونا وائرس سے 103 افراد دم توڑ گئے، جس کے بعد صوبے میں کورونا

سے اموات کی کل تعداد 7664 ہو گئی۔ محکمہ صحت پنجاب کاکہنا تھا کہ گزشتہ 24 گھنٹوں کے

دوران پنجاب میں کورونا وائرس کے 2969 نئے کیسز سامنے آئے اور کورونا کیسز کی کل تعداد 2

لاکھ 76 ہزار 535 ہو گئی، ایک دن کے دوران لاہور میں سب سے زیادہ 1454 کیسز رپورٹ ہوئے۔

اعدادو شمار کیمطابق ننکانہ 13، قصور 22، شیخوپورہ 40، راولپنڈی 292 ، جہلم 3، اٹک 1،چکوال

16، مظفرگڑھ 8، حافظ آباد 16 اور گوجرانوالہ 34 ، سیالکوٹ 38، نارووال 5، گجرات 20، منڈی

بہاالدین 7، ملتان 173، خانیوال 44 کیسز رپورٹ ہوئے۔ اسی طرح راجن پور 11، لیہ 25، ڈیرہ غازی

خان 20 اور وہاڑی میں 28 ،فیصل آباد 244، چنیوٹ 12، ٹوبہ ٹیک سنگھ 6، جھنگ 5 اور رحیم یار

خان میں 31 ،سرگودھا 145، میانوالی 33، بہاولنگر 13، بہاولپور 117، لودھراں 15، بھکر 7،ساہیوال

59، پاکپتن 4 اوراوکاڑہ میں 8 کیسز سامنے آئے۔محکمہ صحت پنجاب نے کورونا کی روک تھام کے

لیے 7 اضلاع کے بڑے تدریسی اسپتالوں میں 4 شعبوں کی او پی ڈیز مزید ایک ہفتے کے لیے بند

کردیں۔ حکومت پنجاب کے ہیلتھ کیئر میڈیکل ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے

مطابق پنجاب کے 7 اضلاع فیصل آباد، لاہور، سرگودھا، گوجرانوالہ، گجرات، سیالکوٹ، ملتان اور

راولپنڈی میں کورونا کی روک تھام کے لیے تدریسی اسپتالوں کے چار شعبوں امراض چشم، جلد، ناک

کان و گلہ اور دانتوں کے امراض کے لیے شعبہ او پی ڈی کی بندش میں 7 روز کے لیے توسیع کر

دی گئی ہے۔ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ کورونا مریضوں کی تعداد میں کمی نہ ہونے کی وجہ سے

ان شعبوں کے ڈاکٹرز، نرسز اور پیرامیڈیکل اسٹاف کورونا مریضوں کے علاج اور دیکھ بھال کے

لیے خدمات سرانجام دیتے رہیں گے جب کہ ان چاروں شعبوں کے معمول کے آپریشن بھی 27 اپریل

تک موخر رہیں گے،

کورونا عفریت بے قابو

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply