کوئی کمال نہیں ،دوست ممالک سے امداد آرمی چیف کی وجہ سے ملی،شہبازشریف

Spread the love

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ چین، سعودی عرب، اور برادر ملک متحدہ عرب امارات کی جانب سے پاکستان کو جو امداد مل رہی ہے وہ آرمی چیف کی وجہ سے امداد مل رہی ہے، عمران خان کا کوئی کمال نہیں‘ اس بارے میں کسی کوغلط فہمی میں نہیں رہنا چاہیے۔اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف کا قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ مہمند ڈیم بہت اہمیت کا حامل ہے، اس حوالے سے بے شمار بحث ہو چکی ہے، آبی ذخائر بنانا وقت کی اہم ترین ضرورت ہے، اس کے لیے ہماری حکومت نے دو ارب مختص کیے تھے۔شہباز شریف نے کہا کہ موجودہ حکومت میں غریب آدمی کی حالت کسی سے ڈھکی چھپی نہیں، مہنگی بجلی بنائی جا رہی ہے، ادویات کی قیمتوںمیں پندرہ فیصد اضافہ ہوا اور سرکلر ڈیٹ دوبارہ اژدھا بن کر سامنے آ رہا ہے۔ پورے ملک میں مہنگائی کی شدید لہر ہے اور بجلی بحران دوبارہ سر اٹھا رہا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ مہمند ڈیم کا ٹھیکہ پیپرا رولز کیخلاف ہے ۔ کون سی قیامت آ گئی تھی کہ ایک بڈ پر ٹھیکہ دے دیا گیا، دوسری کمپنی کو ٹیکنیکل گراؤنڈ پر منصوبہ نہیں دیا گیا۔انہوں نے کہا کہ مہمند ڈیم کا بڈنگ کا پراسس ہماری حکومت میں شروع ہوا مگر اس کا کنٹریکٹ دینے کی ذمہ داری ہماری نہیں تحریک انصاف کی ہے۔ پیپرا رولز کی نفی قوم کیساتھ بہت بڑا دھوکہ ہے۔شہباز شریف نے کہا کہ یہ مفادات کا ٹکراؤ ہے، حکومت شفافیت اور میرٹ کا دن رات ڈھنڈورا پیٹتی ہے۔ ہمارا عبدالرزاق داؤد سے کوئی گلا نہیں، وہ اچھے انسان ہیں، بات اس وقت پاکستان کی ایک ایک پائی کی ہے، وہ حکومتی مشیر اور اپنے بیٹے کی کمپنی کے شیئر ہولڈر ہیں۔اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ سعودی عرب، یواے ای اور چین کی مہربانی مشکل وقت میں ساتھ دیا، اس میں حکومت یا عمران خان کا کوئی کمال نہیں، سپہ سالار کی وجہ سے پاکستان کی مدد کی جا رہی ہے، کسی کوغلط فہمی میں نہیں رہنا چاہیے۔ شہبازشریف نے کہاکہ نوازشریف کی سزا کے خلاف نیب اپیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے سے قانون کی حاکمیت آگے چلے گی۔پارلیمنٹ ہاؤس آمد کے موقع پر میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے شہبازشریف نے نیب ریفرنس میں نوازشریف کی سزا کے خلاف نیب اپیل مسترد کرنے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کو بہترین فیصلہ قرار دیا۔شہبازشریف نے فیصلے پر کہا کہ اللہ کا شکر ہے، ہم عدالتِ عظمیٰ کے شکر گزار ہیں، اس فیصلے سے قانون کی حاکمیت آگے چلے گی۔فوجی عدالتوں سے متعلق اپوزیشن لیڈر کا کہنا تھا کہ فوجی عدالتوں کے قیام کے بارے میں حکومت نے تاحال رابطہ نہیں کیا لہٰذا حکومت جب رابطہ کرے گی تو اس معاملے پر سوچ بچار کی جائے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ نوازشریف کی حکومت نے ہی فوجی عدالتوں کے قیام کا فیصلہ کیا تھا، اس وجہ سے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں کامیابیاں ملیں۔ میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ ملک میں قانون کی حکمرانی ہونی چاہییے ، آئندہ مرحلے میں العزیزیہ ریفرنس میں بھی سلام آباد ہائیکورٹ سے انصاف کی امید ہے.

Leave a Reply