LOC ( Line of Control) 160

کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت، 2 پاکستانی شہید، 3 زخمی

Spread the love

راولپنڈی،سرینگر(جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) کنٹرول لائن

جنگی جنون میں مبتلا بھارت کی مودی سرکار کے زیر کنٹرول انڈین فوج کی لائن

آف کنٹرول پر بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں معمر خاتون اور 13 سالہ بچہ

شہید جبکہ 3 افراد زخمی ہوگئے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج نے نکیال

اور رکھ چکری سیکٹرز میں شہری آبادیوں کو اپنی جارحیت کا نشانہ بنایا جس

سے بزرگ خاتون سلامت بی بی اور 13 سالہ ذیشان ایوب شہید ہوئے جبکہ بھارتی

فوج کی فائرنگ میں 2 خواتین سمیت 3 شہری زخمی ہوئے جنہیں طبی امداد کیلئے

قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ آئی ایس پی آر کا کہنا ہے پاک فوج نے بلا اشتعال

بھارتی فائرنگ کا مؤثر جواب دیا اور بھارتی فوج کی چوکیوں کو نشانہ بنایا جس

پر دشمن دبک گیا اور اس کی گنیں اور توپیں خاموش ہو گئیں۔

مقبوضہ وادی میں 57 روز سے نظام زندگی مفلوج ، بھارت مخالف احتجاج میں اضافہ

ادھر مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی ریاستی دہشتگردی کی تازہ کارروائیوں

میں 7 کشمیری نوجوانوں کو شہید کرنے کے بعد وادی میں حالات مزید سنگین

ہوگئے، قابض انتظامیہ نے پابندیا ں مزید سخت کردیں جبکہ مسلسل 57 ویں روز

بھی نظام زندگی مفلوج ہے۔ دکانیں، بازار، کاروباری مراکز اور تعلیمی ادارے بند

جبکہ سڑکوں پر ٹریفک کی آمد ورفت معطل ہے۔ کئی علاقوں میں احتجاجی

مظاہرے شروع ہوگئے ہیں، لوگ سڑکوں پر آگئے جنہوں نے بھارت کیخلاف اور

آزادی کے حق میں نعرے بلند کئے-

مزید پڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں کرفیو جاری، ہر گھر پر بھارتی فوجی تعینات

قابض انتظامیہ نے سرینگر سمیت وادی بھر میں پابندیاں مزید سخت اور لوگوں کو

بھارت مخالف مظاہروں سے روکنے کیلئے بھارتی فوج اور پولیس کے اضافی

اہلکار تعینات کر دیے۔ پولیس نے سرینگر کے تجارتی مرکز لالچکوک کی طرف

جانیوالے تمام راستے خاردار تاریں لگا کر سیل کر دیے، پولیس لاوڈ سپیکر کے

ذریعے کشمیریوں کو وارننگ دیتی رہی کہ وہ گھروں سے باہر نہ نکلیں۔ گزشتہ

روز کشمیری نوجوان کرفیو اور پابندیاں توڑتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے تھے

اور سرینگر کے مختلف علاقوں میں آزادی اور پاکستان کے حق میں نعرے بازی

کی تھی-

کنٹرول لائن

Leave a Reply