کشتواڑ بادل پھٹنے سے

کشتواڑ میں بادل پھٹنے سے 7افراد جاں بحق ، 19لاپتہ

Spread the love

کشتواڑ بادل پھٹنے سے

سرینگر (جے ٹی این آن لائن نیوز) غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیرکے ضلع کشتواڑ میں بادل پھٹنے

سے7 افراد جاں بحق اور 19لاپتہ ہو گئے ہیں ۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق ضلع کشتواڑ کے علاقے ہونزڑ دچھن میںاچانک

بادل پھٹنے اور شدید سیلاب کے باعث چھ مکان اور ایک راشن ڈپو کو نقصان پہنچا ہے ۔ ایس ایس پی کشتواڑ نے میڈیا کو

بتایاہے کہ پولیس، فوج اور این ڈی آر ایف کی ٹیمیں اور مقامی افراد لوگوںکو بچانے او رمحفوظ مقامات پر منتقل کررہے ہیں

۔انہوںنے بتایا کہ 7 افراد کی لاشیں برآمد کی گئی ہیں جبکہ 19کے قریب افراد لاپتہ ہیں جن کے بارے میں خدشہ ہے کہ وہ

جاںبحق ہو گئے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ لاپتہ افراد کی تلاش جاری ہے ۔ حکام کے مطابق علاقے میں مواصلاتی نظام کی عدم

دستیابی کے باعث مکمل تفصیلات نہیں مل رہی ہیںسرینگر کے علاقے پالہ پورہ نورباغ میں آتشزدگی سے آٹھ مکان جل کر

خاکستر ہو گئےغیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیرمیںنامعلوم افراد نے ضلع کپواڑہ میں سیب کے 50

سے زائد درخت کاٹ دیے ہیں۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق ضلع کے علاقے سوگام میں نامعلوم افراد نے منگل اور بدھ کی

درمیانی شب محمد رفیق شیخ کے سیب کے باغ میں 50سے زائد درخت کاٹ دیے ۔ اس سلسلے میں پولیس نے مقدمہ درج کر

کے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ بھارتی فورسزنے آج سرینگر میںتلاشی اور محاصرے کی کارروائی شروع

کی۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروںنے سرینگر کے علاقے نادر گنڈ پیر باغ میں تلاشی اور

محاصرے کی کارروائی شروع کی ۔ آخری اطلاعات ملنے تک علاقے میں فوجی کارروائی جاری تھی ۔ سرینگر(این این

آئی)غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و کشمیرمیںبھارتی پولیس نے ضلع پلوامہ سے ایک کشمیری نوجوان کو

گرفتار کرلیا ہے۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق بھارتی پولیس اہلکاروںنے ضلع کے علاقے اونتی پورہ میں تلاشی اور محاصرے

کی کارروائی کے دوران سہیل احمد کو گرفتار کیا۔ ادھر بھارتی فوجیوںنے کشمیریوں کے جذبہ حریت کو کمزور کرنے

کیلئے مقبوضہ جموںوکشمیرمیں خوف و ہراس کا ماحول پید اکرنے کیلئے کپواڑہ، بانڈی پورہ ، بارہمولہ ، گاندربل ، کولگام ،

شوپیاں اور دیگر علاقوںمیں اپنی پر تشددکارروائیاں جاری رکھیں۔ غیر قانونی طور پر بھارت کے زیر قبضہ جموں و

کشمیرمیںضلع کولگام کے علاقے یاری پورہ میںہفتہ کے روز بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں تلاشی اور محاصرے کی ایک

کارروائی کے دوران شہید ہونے والے کشمیری نوجوان عمران احمد ڈار کے اہلخانہ نے پولیس کے اس دعویٰ کو مسترد

کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ ایک عام شہری تھا جسے ایک جعلی مقابلے میں شہید کیاگیا ہے

کشتواڑ بادل پھٹنے سے

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply