کرپٹو کرنسی قانونی حیثیت معاملہ، وفاقی حکومت سے رپورٹ طلب

لاہور(جے ٹی این بزنس نیوز) کرپٹو کرنسی قانونی حیثیت

لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس جواد حسن نے کرپٹو کرنسی کی قانونی حیثیت

کے معاملے پر وفاقی حکومت سے رپورٹ طلب کر لی ہے، فاضل جج نے نجی

کیش کمپنی کے متاثرہ شخص اصغر کی درخواست پر سماعت کی، سماعت کے

دوران سرکاری وکیل نے بتایا کہ کرپٹو کرنسی کے ذریعے کاروبار کرنے کیلئے

سیکیورٹی ایکسچینج کمیشن نے کوئی لائسنس جاری نہیں کیا- عدالت نے معاشی

تجزیہ نگار فیصل قریشی کو عدالتی معاونت کی اجازت دے دی،

=–= معیشت و کاروبار سے متعلق مزید خبریں (=–= پڑھیں =–=)

اس موقع پر درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ کرپٹو کرنسی کے متعلق

پاکستان میں کوئی قانون موجود نہیں، بینکنگ کورٹس ایسے کیسز کی سماعت

کرتی ہیں، تاہم قانون موجود نہ ہونے کی وجہ سے واضح نہیں کہ، ایسے کیسز

کس عدالت کے دائرہ اختیار میں آتے ہیں، عدالت نے کرپٹو کرنسی کے حوالے

سے وفاقی حکومت سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے، مزید سماعت 17 دسمبر تک

ملتوی کر دی۔

=-،-= ڈیجٹل کرنسی کے خریداروں کیلئے بل گیٹس کا حیران کُن پیغام

جب تک آپ دنیا کے امیر ترین شخص نہ ہوں، اسوقت تک ڈیجیٹل کرنسی بٹ

کوائن خریدنے سے گریز کریں۔ یہ پیغام ہے دنیا کے تیسرے امیر ترین شخص اور

مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس کا جو گزشتہ روز انہوں نے ایک انٹرویو میں دیا۔

بل گیٹس نے مزید کہا کہ یہ کرنسی ایسی سرمایہ کاری نہیں جو عام افراد کو کرنی

چاہیے جبکہ یہ ماحولیات کیلئے بھی نقصان دہ ہے کیونکہ اس کی مائننگ کیلئے

بہت زیادہ توانائی کی ضرورت ہوتی ہے۔

بلومبرگ کو دیئے گئے انٹرویو میں بل گیٹس نے کہا ایلون کے پاس بہت زیادہ

پیسے ہیں اور وہ بہت زیادہ ہوشیار ہیں، تو مجھے فکر نہیں کہ ان کے بٹ کوائنز

کی قیمت اوپر نیچے ہوتی رہے۔ میرے خیال میں جو لوگ اس خیال کے پیچھے

بھاگتے ہیں ان کے پاس اتنے پیسے نہیں ہوتے، میرا تو ماننا ہے اگر آپ کے پاس

ایلون مسک سے کم دولت ہے تو آپ کو بٹ کوائن خریدنا نہیں چاہیے۔ تاہم دنیا میں

اس ڈیجیٹل کرنسی کے حوالے سے لوگوں کی دلچسپی بڑھی ہے۔

=–= جس کے بغیر لوگ زندہ رہ سکتے ہیں وہ کرپٹوکرنسی ہے، بل گیٹس
————————————————————————–

ٹیسلا اور اسپیس ایکسس کے بانی ایلون مسک نے اپنی کمپنی کے ذریعے بٹ

کوائن میں ڈیڑھ ارب ڈالرز کی سرمایہ کاری کی اور ان کا کہنا تھا بٹ کوائن کو

جلد ادائیگیوں کیلئے قبول کیا جائے گا۔ فروری میں ہی وال اسٹریٹ جرنل کو دیئے

گئے ایک انٹرویو میں بل گیٹس سے پوچھا گیا کہ دنیا میں ایسی کونسی ٹیکنالوجی

ہے جس کے بغیر لوگ زندہ رہ سکتے ہیں اور ان کا جواب تھا کرپٹوکرنسی۔ انہوں

نے کہا کہ جس طرح آج دنیا میں کرپٹو کرنسی کام کرتی ہے، اس سے مخصوص

مجرمانہ سرگرمیوں کا موقع ملتا ہے اور بہتر ہے اس سے نجات حاصل کرلی

جائے۔ تاہم انہوں نے مزید کہا اس سوال کا زیادہ بہتر جواب حیاتیاتی ہتھیار ہوگا۔

=-،-= ہمیں اس قسم کی ٹیکنالوجی کی ضرورت نہیں۔ بل گیٹس

بل گیٹس کا مزید کہنا تھا مجھے ممکنہ طور پر حیاتیاتی ہتھیاروں کے بارے میں

کہنا چاہیے، وہ بہت بڑی چیز ہے، ہمیں اس قسم کی ٹیکنالوجی کی ضرورت نہیں۔

وال اسٹریٹ جرنل کیساتھ سی این بی سی کو بھی بل گیٹس نے ایک انٹرویو دیا جس

میں بل گیٹس سے کرپٹو کرنسی کے بارے میں موسمیاتی تبدیلی کے تناظر میں

سوال پوچھا گیا کیونکہ یہ ڈیجیٹل کرنسیاں بہت زیادہ توانائی استعمال کرتی ہیں،

تاہم اس موقع پر بل گیٹس نے کہا بٹ کوائن سے متعلق انکا موقف غیرجانبدارانہ

ہے۔ میرے پاس بٹ کوائن نہیں اور اس حوالے سے میرا نکتہ نظر غیرجانبدارانہ

ہے۔ بٹ کوائن اوپر اور نیچے جا سکتے ہیں کیونکہ اس کا انحصار کرنسی کے

حوالے سے لوگوں کے خیالات پر ہے اور میں پیششگوئی نہیں کرسکتا کہ یہ کس

طرح پیشرفت کرے گی۔

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply

%d bloggers like this: