منہ ٹیڑھا کرکے انگریزی بولنے سے کرپشن کے داغ نہیں دھلیں گے، حماد اظہر

Spread the love

کرپشن کے داغ نہیں

اسلام آباد (جے ٹی این آن لائن نیوز) وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے بلاول بھٹو پر

وار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کرپشن کے داغ منہ ٹیڑھا کرکے انگریزی بولنے سے دھل نہیں جائیں

گے، ہمیں لوگوں نے منتخب کیا ہے، ہم 10 پرسنٹ اور 20 پرسنٹ سے نہیں آئے ہمیں آج نابالغ لیکچر

ملا، جنہوں نے کبھی کاروبار نہیں کیا وہ بتائیں رہے ہیں معیشت کیسے چلانی ہے،کرپشن سے تباہی

دیکھنی ہے تو سندھ جاکر دیکھیں۔قومی اسمبلی میں پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے

بجٹ پر اظہار خیال کے بعد وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے ان کی حکومت پر تنقید کا جواب دیتے

ہوئے ایوان میں کہا بلاول میں جرات ہے تو میری تقریر سن کر جائیں،شا ہدخاقان آپ بھی نشست پر

کھڑا ہو گئے۔ یہ وہ شخص ہے جس نے کہا تھا کہ جوتا ماروں گا ،آج تک معذرت نہیں کی میرا چیلنج

قبول نہیں کیا گیا اپوزیشن ڈیسک سے ہی آواز آئی اور گالی دی گئی، اپوزیشن ڈیسکوں سے ہی کہا گیا

گالی دینا پنجاب کا کلچر ہے، گالی دینا پنجاب کا کلچر نہیں، ہم بھی پنجاب سے تعلق رکھتے ہیں،

ایسی بات کرنے والا پنجاب کی تاریخ مسخ کر رہا ہے ایسے شخص کو کٹہرے میں لانا چاہیے یہ

جانوروں کی تعداد گنوا رہے تھے اب چلے گئے ہیں۔ شیریں مزاری کیخلاف جو کلمات کہے گئے وہ

بھی ریکارڈ کا حصہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں آج نابالغ لیکچر ملا، جنہوں نے کبھی کاروبار نہیں

کیا وہ بتائیں رہے ہیں معیشت کیسے چلانی ہے بتانا چاہتا ہوں منہ ٹیڑھا کر کے انگریزی بول کر

سینے پر لگے کرپشن کے داغ دھل نہیں جائیں گے، ہمیں لوگوں نے منتخب کیا ہے، ہم 10 پرسنٹ

اور 20 پرسنٹ سے نہیں آئے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کے دور میں مہنگائی کی شرح

زیادہ رہی اور پیپلز پارٹی آئی ایم ایف کے پاس سب سے زیادہ گئی ہے جب کہ 4 فیصد گروتھ پر انہیں

بہت تکلیف ہورہی تھی، میں نے ڈیٹا نکالا ہے، پیپلز پارٹی دور کے پانچ سال میں ایک بھی سال ایسا

نہیں تھا جس میں ایک فیصد گروتھ حاصل کرلیتے۔ایک لاکھ ساٹھ ہزار گھرانوں کو احساس پروگرام

میں لائے ان کے دور میں بی آئی ایس پی میں سرکاری افسران پیسے لے رہے تھے وفاقی وزیر نے

کہا کہ مہنگائی کی شرح ساڑھے آٹھ فیصد اور تنخواہیں دس فیصد بڑھائی گئی ہیں ان کے دور میں

مہنگائی زیادہ ہونے کی وجہ سے تنخواہیں بھی زیادہ بڑھاتے تھے دنیا میں اس وقت سب سے سستا

تیل پاکستان میں ہے ن لیگ چھپن فیصد تک ڈیلز ٹیکس کے گئے ، انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے

علاقوں میں کتے کاٹنے سے کوئی بیماری نہیں پھیلی اور ہیپاٹائٹس بھی نہیں پھیلا، ہم ان سب چیزوں

سے محفوظ ہیں اور ہمارے حلقے کے لوگ ہمیں بہت پیار محبت دیتے ہیں ، کہنے کو تو وہاں بڑے

بڑے دربار آور محلات بنے ہوئے ہیں آج کل کہتے ہیں کہ تھوڑی تھوڑی کرپشن سے ترقی بھی ہوتی

ہے اگر کرپشن کے زور پر ترقی ہوتی تو سندھ تو کیلیفورنیا بن چکا ہو تا ، بلاول نے کہا فاٹا اور

آزاد کشمیر میں ٹیکس لگا دیا، شاید انہوں نے بجٹ نہیں پڑھا، وہ بجٹ پڑھ کر ہمیں بتائیں فاٹا اور آزاد

کشمیر میں کونسا ٹیکس لگایا ہے، وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ ڈی اے پی کی قیمت میں اضافہ ہوا

ہے، بلاول کو پتا ہونا چاہیے ڈی اے پی پاکستان میں نہیں بنتی، ڈی اے پی درآمد کی جاتی ہے جس

کی بین الاقوامی قیمتیں ہوتی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ جو انقلابی تبدیلی کراچی میں آئی وہ آئندہ انتخابات

میں سندھ میں بھی نظر آئے گی، کہا جاتا ہے ترقیاتی کاموں میں تھوڑی بہت کرپشن ہوتی ہے، ایسا

ہوتا تو آج سندھ کیلیوفورنیا کا منظر پیش کر رہا ہوتا، پاکستان سٹیل اربوں کماتی تھی، یہ کروڑوں کے

نقصان میں چھوڑ گئے، سٹیل مل ہم نے نہیں مسلم لیگ ن نے 2015 میں بند کی تھی۔حماد اظہر نے

کہا کہ بلاول جانتے ہیں تقریر کے دوران کونسی بات انگریزی میں کہنی ہے، کونسی اردو میں، بلاول

نے تقریر کے کچھ حصے انگریزی میں بولے، لبرل جماعت کے قائد نے افغانستان والی بات انگریزی

میں نہیں کی۔ پاکستان میں دنیا کا سب سے سستا تیل موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کورونا

میں افراتفری چاہتے تھے ہم نے اعدادو شمار کے مطابق حکمت عملی بنائی اس سال ہماری

سیمنٹ،یوریا گاڑیوں کی صنعت میں بڑھوتی آئی یہ کسان کو پوری قیمت نہیں دیتے تھے ہم نے کسان

کو پوری قیمت دی اور فائدہ پہنچایا گنے کے کاشتکاروں کو پوری قیمت دی گئی لائف ٹائم اور ٹیوب

ویل صارفین کے لئے الگ سلیب ہے،پاکستان کے بجلی کے ٹیرف میں دونوں سلیب کے سب سے کم

ریٹ ہے پیپلز پارٹی امریکہ کو کہتی تھی کہ ڈرون مارتے جاؤں لوگ مرتے ہیں تو ہم مذمت کرتے

جائیں گے بلاول نے عوام کی بات انگلش میں اور امریکہ کو اڈے نہ دینے کی بات اردو میں کرتے

ہیں پاور سیکٹر میں چار سو ارب اضافی دینا پڑے بجٹ میں سو ارب بجلی کے ترسیلی نظام کے لئے

رکھے ہیں کراچی کو ساڑھے پانچ سو میگاواٹ روانہ کی بنیاد پر بجلی دی جارہی ہے پناہ گاہ اور

لنگر خانوں کا ایک جال بچھانے کا رہے ہیں کرپشن کیسے تباہی کرتی ہے تو سندھ دیکھ لیا جائے

کرپشن کے داغ نہیں

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply