kashmir corona virus 82

کرونا وباء، کشمیری متاثرین کی تعداد 7 ہوگئی، بھارتی دہشتگردی جاری

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

سرینگر( جے ٹی این آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) کرونا وباء کشمیری متاثرین

مقبوضہ کشمیر میں کرونا وباء میں مبتلا مریضوں کی تعداد سات ہو گئی۔ سرینگر میں دو شہریوں کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد شہر میں مریضوں کی تعداد تین جبکہ باقی چار کا تعلق وادی کے دیگر علاقوں سے ہے۔

مزید پڑھیں : مقبوضہ کشمیر میں کرونا وباء پھیلنے پر پاکستان کا اظہارتشویش

دو متاثرہ مریضوں میں سے ایک کا تعلق سرینگر کے نٹی پورہ سے بتایا جاتا ہے۔ مذکورہ شخص 16 مارچ کو سعودی عرب سے اسی جہاز میں واپس سرینگر پہنچا تھا، جس میں سرینگر ہی کی ایک 67 سالہ خاتون بھی سوار تھی، جس کا ٹیسٹ 18 مارچ کو مثبت آیا تھا۔ مذکورہ خاتون مقبوضہ وادی کی کرونا کی پہلی مریضہ ہے۔ ذرائع کے مطابق دوسرے مریض کا تعلق سرینگر کے علاقے حیدر پورہ سے ہے۔ 65 سالہ شخص نئی دلی سے سرینگر لوٹا تھا اور وہ وہاں تبلیغی دورے پر تھا۔

لداخ میں بھارتی فوجی سمیت کرو نا مریضوں کی تعداد 13 ہو گئی

ضلعی ترقیاتی کمشنر سرینگر کے مطابق سرینگر کے صورہ ہسپتال میں زیر علاج وادی کشمیر کی پہلی کرونا مریضہ مکمل طور پر صحتیاب ہو چکی ہے۔ مریضہ کے صحتیاب ہونے کی تصدیق صورہ ہسپتال کے ڈائریکٹر نے بھی کی ہے۔ لداخ میں کرو نا مریضوں کی تعداد 13 ہو گئی ہے جن میں ایک بھارتی فوجی اہلکار بھی شامل ہے۔ سرینگر سے شائع ہونیوالے اردو اخبارکے مطابق لداخ میں دو مریض مکمل طور پر صحتیاب ہو چکے ہیں۔

قابض افواج کی ریاستی دہشتگردی سے کشمیریوں کی مشکلات میں اضافہ

بھارتی قابض انتظامیہ کی طرف سے کرونا وائرس کی وباء کیخلاف حفاظتی اقدام کے نا م پر مقبوضہ وادی کے دارالحکومت سرینگرو دیگر اضلاع میں مزید سخت پابندیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ جن کے سبب پہلے سے بھارتی محاصرے کا شکار کشمیریوں کی مشکلات میں اضافہ ہو گیا ہے۔ سرینگر سمیت تمام قصبوں میں لوگوں کی نقل و حرکت روکنے کیلئے جگہ جگہ رکاو ٹیں کھڑی کر دی گئی ہیں، جبکہ سڑکوں اور پلوں کو خار دار تاروں سے سیل کر دیا گیا ہے۔ صرف لازمی خدمات سے وابستہ گاڑیوں اور افراد کو ہی پوچھ گچھ کے بعد ایک مقام سے دوسری جگہ آنے جانے کی اجازت دی جاتی ہے۔

وادی بھر میں چھوٹے بڑے بازار، تجارتی و کارورباری مراکز بند

پوری وادی میں چھوٹے بڑے بازار، تجارتی مراکز اور کاروباری ادارے مکمل طور پر بند ہیں۔ تعلیمی ادارے، تفریحی مقامات، رستوران اور ہوٹل وغیرہ بھی مکمل طور پر بند ہیں۔

کرونا وباء کشمیری متاثرین

Leave a Reply