کرونا وباء، پاکستان کرکٹ بورڈ کا بڑا فیصلہ، آئی سی سی کی منفرد سفارشات 61

کرونا وباء، پاکستان کرکٹ بورڈ کا بڑا فیصلہ، آئی سی سی کی منفرد سفارشات

Spread the love

لاہور،دبئی(جے ٹی این آن لائن سپورٹس نیوز) کرونا وباء کرکٹ سرگرمیاں

پاکستان کرکٹ بورڈ نے کرکٹ سرگرمیاں شروع کرنے کیلئے حکومت کو اعتماد

میں لینے کا فیصلہ کیا ہے، حکومتی اجازت ملنے کے بعد ہی پی سی بی کرکٹرز

کی ٹریننگ کے حتمی شیڈول کا اعلان کرے گا۔ ادھرانٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی

سی سی) کی کرکٹ کمیٹی نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو کنٹرول کرنے کیلئے

گیند چمکانے کیلئے کھلاڑیوں کے تھوک کے استعمال پر پابندی سمیت دیگر کئی

منفرد نوعیت کی سفارشات پیش کر دی ہیں، جن کی منظوری یا نا منظوری کا

فیصلہ آئندہ ماہ جون کے پہلے ہفتے میں متوقع ہے-

—————————————————————————–
یہ بھی پڑھیں : بند دروازوں کے پیچھے کرکٹ بھی چلے گی، بین اسٹوکس
—————————————————————————–

تفصیلات کے مطابق ذرائع کا کہنا ہے پی سی بی نے فیصلہ کیا کہ بائیو سیکیور

انتظامات کیساتھ قومی کرکٹرز کو کرکٹ ٹریننگ کی طرف لے کر آئے۔ کرونا

وائرس کے باعث حکومت نے تاحال کھیلوں کی سرگرمیوں پر پابندی میں نرمی

نہیں کی اس لیے کھلاڑیوں کو میدان میں واپس لانے کیلئے روڈ میپ تیارکرنے

کے بعد حکومت سے اجازت لی جائے گی۔

کرکٹ سرگرمیاں جون کے پہلے ہفتے سے شروع ہونے کا امکان

بائیو سیکیور انتظامات سے متعلق حکومت کو اعتماد میں لینے کے بعد کھلاڑیوں، سپورٹس سٹاف اور نیشنل اکیڈمی کے عملے کے کوویڈ 19 ٹیسٹ کا طریقہ بھی طے ہو گا۔ ذرائع کے مطابق کرکٹ کی سرگرمیاں عید کی چھٹیوں کے بعد جون کے پہلے ہفتے سے شروع ہونے کا امکان ہے-

کھلاڑیوں کو انگلینڈ جانے کیلئے مجبور نہ کرنے کا فیصلہ

دورہ انگلینڈ کے حوالے سے بھی کھلاڑیوں کو عید کے بعد اعتماد میں لیا جائیگا اور کرکٹرز سے آن لائن سیشن کے دوران انہیں حفاظتی اقدامات کے حوالے سے بریف کیا جائیگا اور انہیں انگلینڈ جانے کیلئے مجبور نہیں کیا جائیگا۔

ٹریننگ و طبی بنیادوں پر روڈ میپس کی تیاری کیلئے ذمہ داریاں تفویض

ذرائع کا کہنا ہے کہ مصباح الحق، وقار یونس اور ذاکر خان کھلاڑیوں کی ٹریننگ جبکہ ڈاکٹر سہیل سلیم کو میدان میں واپسی کیلئے کرونا وباء کی صورتحال میں طبی پنیادوں پر الگ الگ روڈ میپس تیار کرنے کی ذمہ داریاں تفویض کر دی گئی ہیں- روڈ میپس رواں ہفتے کے اختتام پر پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

گیند چمکانے کیلئے پسینے کے استعمال پر پابندی نہ لگانے کا فیصلہ

آئی سی سی کرکٹ کمیٹی کے اجلاس میں میڈیکل ایڈوائزری پینل سے رائے لی گئی۔ کمیٹی نے اس بات پر اتفاق کیا کہ وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے تھوک سے گیند کو چمکانے پر پابندی لگانا ضروری ہے، تاہم پسینے سے وائرس کے پھیلاؤ کے شواہد نہیں، اسلئے پسینے کے استعمال پر پابندی ضروری نہیں۔

میزبان ملک کے ایلیٹ، انٹرنیشنل پینل کے امپائرز تعیناتی کی بھی تجویز

کرکٹ کمیٹی نے بین الاقوامی سفری پابندیوں اور دیگر مشکلات کی وجہ سے رائے دی کہ فی الحال انٹرنیشنل میچز میں غیر نیوٹرل امپائرز کا تقرر ہی کیا جائے، کیونکہ نیوٹرل امپائرز کیلئے ایک سے دوسری جگہ سفر آسان نہیں ہوگا۔ اسلئے جس ملک میں سیریز ہو، اس ملک سے تعلق رکھنے والے ایلیٹ اور پھر انٹرنیشنل پینل کے امپائرز کو میچز میں تعینات کیا جائے۔

——————————————————————————
دوستو : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر کریں، فالو کریں اپڈیٹ رہیں
——————————————————————————

کرکٹ کمیٹی نے عبوری طور پر ٹیموں کیلئے اضافی ریویو فراہم کرنے کی بھی سفارش کی ہے، آئی سی سی کرکٹ کمیٹی کی سفارشات جون کے پہلے ہفتے میں ہونیوالی چیف ایگزیکٹو کمیٹی میں منظوری کیلئے پیش کی جائیں گی۔

کرونا وباء کرکٹ سرگرمیاں

Leave a Reply