corona Special jtnonline2

کرونا وائرس کا نیا اسٹرین تبدیل اور انتہائی مہلک، عالمی ادارہ صحت بھی پریشان

Spread the love

لندن، جنیوا (جے ٹی این آن لائن کرونا سپیشل) کرونا وائرس نیا اسٹرین

برطانوی سائنسدان نے برطانیہ میں سامنے آنیوالے کرونا وائرس کے نئے اسٹرین

کو انتہائی مہلک قرار دیا ہے اور کہا ہے یہ بہت تیزی سے پوری دنیا کو اپنی لپیٹ

میں لے سکتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال ستمبر میں انگلینڈ کا گارڈن

کہلانے والی کانٹی کینٹ میں سامنے آنیوالا یہ اسٹرین اب تک 50 سے زائد ملکوں

میں پھیل چکا ہے۔ اس اسٹرین کے سامنے آنے کے بعد برطانیہ ایک مرتبہ پھر

سے ملک گیر لاک ڈاﺅن کا اعلان کر چکا ہے جبکہ دنیا بھر میں بھی خوف کی

علامت بنا ہوا ہے۔ ماہرین نے کہا کہ یہ اسٹرین دیگر کرونا وائرس کی اقسام کی

نسبت 70 فیصد زیادہ متعدی اور 30 فیصد زیادہ مہلک ہے۔ برطانیہ کے کووڈ 19

جینومکس کنسورشیم کے ڈائریکٹر شیرون پیکاک کا کہنا تھا برطانیہ بھر میں

پھیلنے کے بعد یہ اسٹرین بہت تیزی سے دنیا کو اپنی لپیٹ میں لینے کی صلاحیت

رکھتا ہے۔ واضح رہے اس اسٹرین کو 1.1.7 کا نام دیا گیا ہے۔ پیکاک کے مطابق

جس طرح سے یہ اسٹرین گزشتہ کچھ ہفتوں اور مہینوں کے بعد اب تبدیل ہورہا ہے

اس سے خدشہ پیدا ہوگیا ہے کہ یہ ویکسین کی افادیت کو متاثر کر سکتا ہے۔

=–= یورپ میں کرونا وائرس کا مزید پھیلاﺅ، عالمی ادارہ صحت کا انتباہ

عالمی ادارہ صحت نے یورپ میں کرونا وائرس کے پھیلاﺅ کے حوالے سے

خبردار کر دیا اور کہا کہ یورپ میں لوگ کرونا وائرس کیخلاف تحفظ کے جعلی

احساس میں مبتلا نہ ہوں۔ یورپی ممالک میں کیسز کی تعداد میں کمی کے باوجود

کرونا وائرس کا خطرہ ٹلا نہیں۔ عالمی ادارہ صحت کے یورپ کے ڈائریکٹر ہنس

کلوج کا کہنا ہے کیسز میں کمی وبا کی نئی اقسام اور کمیونٹی میں پھیلاﺅ کو

چھپاتی ہے۔ گو کہ اموات کی تعداد میں گذشتہ 2 ہفتوں سے کمی دیکھنے میں آئی

ہےمگر اس صورتحال پر کلوج کا کہنا تھا اس مرحلے پر یورپی ممالک کی

اکثریت خطرے میں ہے، اب ویکسین کی امید اور تحفظ کے احساس کے درمیان

ایک پتلی لکیر موجود ہے۔ یورپ میں اب کرونا ویکسین کی خوراکوں کی تعداد 4

کروڑ 10 لاکھ ہے۔ ویکسی نیشن کا آغاز کرنیوالے 37 ممالک میں سے 29 کے

ڈیٹا کے مطابق 78 لاکھ لوگوں کو ویکسین کی دونوں خوراکیں لگ چکی ہیں۔

انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ یہ تعداد ان ممالک کی آبادی کا صرف 1.5

فیصد ہے، ویکسین ضروری ہے لیکن وہ ابھی تک وبا پر قابو پانے کیلئے کافی

نہیں ہے۔ اس وقت یورپی ممالک کو ویکسین کی امید اور تحفظ کے احساس کے

درمیان غیر واضح صورتحال درپیش ہے۔

=—–= قارئین =-: ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالو کریں
=—–=ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )

کرونا وائرس نیا اسٹرین

Leave a Reply