corona Special jtnonline3

کرونا وائرس سے متاثرہ مریض کی شناخت ایک سیکنڈ میں ممکن

Spread the love

لندن (جے ٹی این آن لائن کرونا سپیشل) کرونا وائرس متاثرہ مریض

نئی تحقیق میں بتایا گیا ہے کتے ایک سیکنڈ میں کووڈ 19 کے مریض کی شناخت

کر سکتے ہیں۔ یہ دعویٰ برطانیہ میں ہونیوالی ایک نئی تحقیق میں سامنے آیا جس

کے مطابق تربیت یافتہ کتے کووڈ 19 کے 90 فیصد کیسز کی شناخت کر سکتے

ہیں، چاہے مریض میں علامات نہ بھی ہوں۔ لندن سکول آف ہائی جین اینڈ ٹروپیک

میڈیسین کے ماہرین کی یہ تحقیق پری پرنٹ سرور پر جاری کی گئی۔ نتائج سے ان

شواہد میں اضافہ ہوتا ہے جن کے مطابق کتے وائرس کو سونگھ سکتے ہیں۔ اس

تحقیق مین ماہرین نے کووڈ 19 کے 200ء مریضوں کی جرابوں کو کتوں کو

سونگھنے کا ٹاسک دیا تاکہ دیکھا جاسکے کہ کون سے کتے کووڈ 19 کی شناخت

کر سکتے ہیں اور کون سے نہیں۔

=–= کرونا وائرس سے متعلق خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

کتوں کی حس شامہ میں 22 کروڑ ریسیپٹرز ہوتے ہیں جبکہ انسانوں میں محض

50 لاکھ ریسیپٹرز ہوتے ہیں، اور وہ کسی بو کو انسانوں کے مقابلے میں ایک لاکھ

گنا زیادہ درست شناخت کر سکتے ہیں۔ کتوں کی ناک 3 اولمپک سائز سوئمنگ

پولز میں موجود کسی مواد کے ایک قطرے کی بو بھی سونگھ سکتے ہیں۔ اس سے

قبل کتے کامیابی سے متعدد اقسام کے کینسر، ملیریا اور دیگر امراض کو سونگھ

کے تشخیص کر چکے ہیں۔ محققین کا ماننا ہے کتے مختلف حالات میں کووڈ کیس

کی شناخت میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں۔ اہم بات یہ ہے کتے دیگر ٹیسٹوں کے

مقابلے میں یہ کام برق رفتاری سے کرسکتے ہیں۔ لہذا کتوں کو ابتدائی اسکریننگ

کا ذریعہ بنانا چاہیے اور پھر مشتبہ مریضوں کے پی سی آر ٹیسٹ ہونے چاہیے۔

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

تحقیق میں 6 کتوں کو شامل کیا گیا تھا اور انہوں نے متاثرہ مریضوں کی جرابوں

سے 94.3 فیصد حد تک درست شناخت کی، یعنی ہر 100 میں سے 94 مریض کی

شناخت کر سکتے ہیں۔ اس کے مقابلے میں ریپڈ ٹیسٹوں کی شرح 58 سے 77

فیصد جبکہ پی سی آر ٹیسٹوں کی 97.2 فیصد ہے، تاہم کتے رفتار میں پی سی آر

ٹیسٹوں کو پیچھے چھوڑ دیتے ہیں کیونکہ وہ بیماری کی تشخیص ایک سیکنڈ میں

کر لیتے ہیں۔ محققین کے مطابق کتے ان افراد میں بھی بیماری کو پکڑ لیتے ہیں

جن میں علامات ظاہر نہیں ہوتیں یا وائرل لوڈ بہت کم ہوتا ہے، تاہم کووڈ 19 کی

تشخیص کیلئے کتوں کو 8 سے 10 ہفتوں کی تربیت کی ضرورت ہوتی ہے۔

کرونا وائرس متاثرہ مریض

Leave a Reply