کرونا وائرس کو جینے کا حق حاصل، بھارتی رہنما تریویندر سنگھ روات

کرونا وائرس کو جینے کا حق حاصل، بھارتی رہنما تریویندر سنگھ روات

Spread the love

نئی ڈہلی (جے ٹی این آن لائن نیوز) کرونا وائرس بھارتی رہنما

بھارت کی ریاست اترکھنڈ کے سابق وزیراعلیٰ تریونیدر سنگھ روات نے کہا ہے

انسان کی طرح کرونا وائرس بھی مخلوق ہے اور اسے جینے کا حق حاصل ہے۔

بھارتیہ جنتا پارٹی سے تعلق رکھنے والے رہنما راوت نے مقامی ٹی وی چینل سے

بات چیت میں کہا وائرس ایک جیتی جاگتی مخلوق ہے اور اسے جینے کا حق

حاصل ہے۔ فلسفیانہ زاویے سے دیکھا جائے، تو کرونا وائرس ایک زندہ مخلوق

ہے اور اسے بھی جینے کا اتنا ہی حق حاصل ہے، جیسا کسی دوسری مخلوق کو۔

مگر ہم انسانوں کو لگتا کہ ہم بہت ذہین ہیں اور ہم اسے ختم کرنے نکل پڑے ہیں۔

اسلئے وائرس کو زندہ رہنے کیلئے مسلسل اپنی شکل بندلنا پڑتی ہے۔

=-= ایسی ہی مزید معلومات پر مبنی خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

راوت کا یہ بیان ایک ایسے موقع پر سامنے آیا ہے، جب بھارت کرونا وائرس کے

نئے انفیکشنز کے اعتبار سے دنیا میں سب سے آگے ہے اور گزشتہ کئی روز سے

روازنہ کی بنیاد پر لاکھوں افراد کرونا وائرس کا شکار جبکہ وہاں یومیہ ہلاکتیں

بھی ہزاروں میں دیکھی جا رہی ہے۔ بھارت میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران

بھی کرونا کے کیسز میں 343,144 کا اضافہ دیکھا گیا اور اب متاثرین کی

مجموعی تعداد چوبیس ملین سے تجاوز اور ہلاک ہونے والوں کی تعداد 262,317

ہو گئی ہے۔ بھارت میں پائی جانے والی کووڈ کی قسم اب آٹھ ممالک تک پھیل چکی

ہے۔ راوت کے اس بیان پر سوشل میڈیا پر زبردست بحث جاری ہے جبکہ انہیں

مختلف جملوں کے ذریعے ٹرول کیا جا رہا ہے۔

=–= مودی حکومت نے ہمیں کہیں کا نہیں چھوڑا، بھارتیوں کی دہائی

بھارت میں تباہ کن کرونا کے دوران وزیراعظم نریندر مودی کیخلاف ہر دن

گزرنے کیساتھ غم و غصہ بڑھتا جارہا ہے اور بھارتی یہ کہہ رہے ہیں بی جے پی

حکومت نے انہیں کہیں کا نہیں چھوڑا ہے۔ مودی کو اپنے غیر ذمہ دارانہ اور غیر

انسانی طرز عمل کیلئے کرونا قہر کا ذمہ دار ٹھہرایا جارہا ہے۔ بھارتی عوام کو

ہسپتالوں میں بیڈز، آکسیجن، وینٹی لیٹرز، ادویات اور ویکسین کی قلت کا بڑے

پیمانے پر سامنا ہے اور انکا کہنا ہے حکومت نے انہیں بے یا ر ومدد گار چھوڑ

دیا ہے۔

=-= قارئین کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

دلچسپ بات یہ ہے ایک ایسے وقت میں جب پورے بھارت میں لوگ کرونا کے

باعث مر رہے ہیں، مودی دارالحکومت دہلی میں وزیراعظم ہاﺅس کی ایک نئی

عمارت کی تعمیر میں مصروف ہیں۔ لوگ فیس بک، ٹویٹر اور سماجی رابطوں کی

دیگر سائٹوں پر وزیراعظم مودی کیخلاف اپنے غیض و غضب اور انکے استعفے

کا بھر پور مطالبہ کر رہے ہیں۔ مودی حکومت کو اپنے ستم رسیدہ عوام کی یہ

جائز تنقید ہضم نہیں ہو رہی ہے اور اس نے ٹویٹر کو اپنے بارے میں تمام تنقیدی

پوسٹیں ہٹانے کا حکم دیا ہے۔ جبکہ معروف بھارتی مصنفہ ارون دھتی رائے نے

ملک کی موجودہ صورتحال کو انسانیت کیخلاف ایک سنگین جرم قرار دیا ہے۔

کرونا وائرس بھارتی رہنما

Leave a Reply