0

کرنسی سمگلنگ کیس، ماڈل ایان علی کو15فروری کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم

Spread the love

کسٹم کی خصوصی عدالت نے کرنسی سمگلنگ کیس میں نامزد ماڈل ایان علی کو آئندہ سماعت پر پیش کرنے کا حکم جا ر ی کر دیا۔کسٹم کی خصوصی عدالت کے جج ارشد بھٹہ نے ایان علی کیخلاف کرنسی سمگلنگ کیس کی سماعت کی۔سماعت کے دوران عدالت نے ایان علی کی جانب سے ناقابلِ ضمانت وارنٹ گرفتاری واپس لینے، مستقل حاضری سے استثنیٰ، معافی اور مقدمہ ختم کرنیکی درخواستیں مسترد کردیں۔اس کے ساتھ ہی خصوصی عدالت نے ملزمہ ایان علی کو آئندہ تاریخ پر پیش کرنے کا حکم جاری کردیا۔عدالت نے مزید ریمارکس دیئے کہ ملزمہ بادی النظر میں کرنسی سمگلنگ میں ملوث ہے اور ملزمہ کے نہ آنے پر اشتہاری قرار دینے کی کارروائی ہوگی۔خصوصی عدالت نے گواہان کو بھی نوٹس جاری کرکے کرنسی سمگلنگ کیس کی آئندہ سماعت 15 فروری تک کیلئے ملتوی کردی۔واضح رہے ایان علی کو 14 مارچ 2015ء کو اسلام آباد سے دبئی جاتے ہوئے بینظیر بھٹو ایئرپورٹ پر اْس وقت حراست میں لیا گیا تھا، جب ان کے پاس سے پانچ لاکھ ڈالرز برآمد ہوئے تھے۔جس کے بعد ایان علی کے خلاف کرنسی اسمگلنگ کا مقدمہ درج کیا گیا اور انہیں جیل کی ہوا بھی کھانی پڑی جبکہ ان کا نام بھی ای سی ایل میں ڈال دیا گیا تھا۔بعدازاں ای سی ایل سے نام نکالے جانے کے بعد وہ بیرون ملک روانہ ہوگئیں، اس دوران کرنسی اسمگلنگ کیس کی کئی سماعتیں ہوئیں، جن میں وہ غیر حاضر رہیں۔تاہم گذشتہ برس نومبر میں انہوں نے جلد وطن واپس آنے کا اعلان کیا تھا۔جیو نیوز سے خصوصی گفتگو میں ایان علی کا کہنا تھا کہ وہ آخری میڈیکل معائنے کے بعد جلد وطن واپس آجائیں گی۔ان کا کہنا تھا کہ ‘مجھ پر بغیر ثبوتوں کے منی لانڈرنگ سمیت سنگین الزامات لگائے گئے، میں نے پاکستان اور اس کے عوام کو کوئی نقصان نہیں پہنچایا ہے’۔

Leave a Reply