کراچی طیارہ حادثہ، فرانس سے تحقیقاتی ٹیم کی آمد، نئے نئے انکشافات 120

کراچی طیارہ حادثہ، فرانس سے تحقیقاتی ٹیم کی آمد، نئے نئے انکشافات

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

کراچی(جے ٹی این آن لائن نیوز) کراچی طیارہ حادثہ

شہرقائد کراچی میں قومی ائیر لائنز(پی آئی آے) کے مسافر ائیر بس طیارے کو

پیش آنوالے المناک حادثے کی تحقیقات کیلئے فرانس سے غیر ملکی ٹیم پاکستان

پہنچ گئی ہے اور ٹیم نے جائے وقوعہ کا دورہ کر کے مشاہدہ کرنے کے بعد دیگر

شواہد اور ریکارڈ کی جانچ پڑتال کا عمل شروع کر دیا ہے –

—————————————————————————-
یہ بھی پڑھیں : کراچی میں قیامتِ صغراء، مسافر طیارہ تباہ، 76 افراد جاں بحق
—————————————————————————-

قبل ازیں وفاقی حکومت کی جانب سے طیارہ حادثے کی تحقیقات کیلئے بنائی گئی

4 رکنی ٹیم نے جائے حادثہ کا معائنہ کیا۔ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہی ائیرکرافٹ

ایکسیڈنٹ انویسٹی گیشن بورڈ ( اے اے آئی بی ) کے صدر ائیرکموڈور عثمان غنی

کررہے ہیں۔ تحقیقاتی ٹیم نے طیارہ گرنے کے مقام کا دورہ کیا، اور شواہد جمع

کیے، جبکہ عینی شاہدین کے بیانات بھی ریکارڈ کیے۔

کمیٹی نے ایک ماہ میں ابتدائی تحقیقات مکمل کرنی ہیں

خیال رہے کہ گزشتہ دنوں وفاقی حکومت کی جانب سے لاہور سے کراچی آنیوالے پاکستان انٹرنیشنل ائیر لائنز کے طیارے کے حادثے کی تحقیقات کیلئے 4 رکنی کمیٹی بنائی گئی تھی، جسے ایک ماہ میں ابتدائی تحقیقات مکمل کرنی ہیں۔

پالپا کا تحقیقاتی کمیٹی پر تحفظات کا اظہار

پاکستان ائیرلائنز پائلٹس ایسوسی ایشن (پالپا) نے تحقیقاتی کمیٹی پر تحفظات کا اظہار کیا ہے، اس حوالے سے جنرل سیکرٹری پالپا عمران ناریجو نے کہا کہ ائیرکرافٹ ایکسیڈنٹ انویسٹی گیشن بورڈ کی بجائے قابل بورڈ تشکیل دیا جائے، جس میں پالپا، انٹرنیشنل سول ایوی ایشن آرگنائزیشن اور انٹرنیشنل فیڈریشن آف ائیرلائن پائلٹس ایسوسی ایشنز کو بھی شامل کیا جائے۔ پالپا کی شمولیت کے بغیر انکوائری قبول نہیں کی جائے گی جبکہ پائلٹ ریسکیو پروازیں جاری رکھیں گے۔

طیارے نے بغیر پہیے کُھلے لینڈ کیا پھر ٹیک آف کیوں کیا؟ تحقیقات جاری

کراچی میں پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز کے طیارے کو ہونیوالا حادثہ غفلت تھی یا کسی غلطی کا نتیجہ تحقیقات جاری ہیں۔ سول ایوی ایشن کے ذرائع نے طیارے کے رن وے کو چھونے کی تصدیق کردی، طیارے نے دن 2 بجکر 20 منٹ پر پہیے کھلے بغیر رن وے پر لینڈ کیا، پھر پائلٹ نے دوبارہ ٹیک آف کرلیا۔ دوبارہ ٹیک آف کا حکم کس نے دیا اس کی تحقیقات کپتان کی کنٹرول ٹاور سے ہونے والی بات چیت کی بنیاد پر کی جارہی ہے۔

طیارہ حادثے کے عینی شاہدین کے بیانات ریکارڈ

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ کریش لینڈنگ سے رن وے پر کافی چنگاریاں بھی اٹھیں، ذرائع کے مطابق ممکن ہے کہ رن وے پر لینڈنگ کی کوشش کے دوران ہی جہاز کے انجن کو نقصان پہنچا ہو۔ اس سے پہلے حادثے میں بچ جانیوالے مسافر محمد زبیر نے بھی بتایا تھا کہ جہاز تھوڑا سا رن وے پر چلا پھر پائلٹ نے جہاز اوپر اڑا لیا، 10 سے 15 منٹ جہاز اوپر ہی رہا پھر پائلٹ نے دوبارہ لینڈنگ کی کوشش کی لیکن دو سے تین منٹ بعد طیارہ کریش کرگیا۔

——————————————————————————
دوستو : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر کریں، فالو کریں اپڈیٹ رہیں
——————————————————————————

کراچی طیارہ حادثہ

Leave a Reply