ڈارک ویب پر کرونا ویکسین، جعلی ٹیسٹ دستاویزات کی فروخت کا انکشاف

ڈارک ویب پر کرونا ویکسین، جعلی ٹیسٹ دستاویزات کی فروخت کا انکشاف

Spread the love

لندن(جے ٹی این آن لائن ٹیکنالوجی نیوز) ڈارک ویب کرونا ویکسین

ڈارک ویب پر کووڈ 19 کی ویکسینز، ویکسین پاسپورٹ اور کرونا ٹیسٹ کے جعلی

منفی نتائج فروخت کیے جا نے کا انکشاف ہوا ہے- ایسٹرا زینیکا، سپوٹنک، سائنو

فارم اور جانسن اینڈ جانسن کی ویکسین کی خوراکیں ڈارک ویب پر 500 سے 750

ڈالر میں فروخت ہو رہی ہیں، نامعلوم تاجر ویکسین کے جعلی سرٹیفکیٹ بھی بیچ

رہے ہیں اور ان کی قیمتیں صرف 150 ڈالر سے شروع ہوتی ہیں-

=–= ٹیکنالوجی کے درست یا غلط استعمال سے متعلق ایسی مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

تفصیلات کے مطابق محققین کا کہنا ہے ڈارک نیٹ پر ویکسین کے حوالے سے

اشتہارات میں تیزی سے اضافہ ہوا ہے، یہ معلوم نہیں ہو سکا آیا کہ بیچی جانے

والی یہ ویکسینز اصلی ہیں یا نقلی- سائبر سکیورٹی کی کمپنی چیک پوائنٹ کے

محققین نے جنوری سے ان آن لائن مارکیٹوں اور ہیکنگ فورمز کی نگرانی کی

ہے، یہاں سب سے پہلے جنوری میں ویکسین کے اشتہارات لگنا شروع ہوئے تھے

ان کا کہنا ہے کہ اب ان اشتہارات میں تین گنا اضافہ ہوا ہے اور ان کی تعداد 1200

سے زیادہ ہو گئی ہے-

=–= ویکسینز کے اشتہارات روسی اور انگریزی زبان پر مبنی
——————————————————————————-

ویکسین فروخت کرنیوالوں کا تعلق امریکہ، سپین، جرمنی، فرانس اور روس سے

معلوم ہوتا ہے، ان ویکسینز کے اشتہارات روسی اور انگریزی زبان میں دیے گئے

ہیں، بعض اشتہارات کے مطابق ویکسینز میں آکسفورڈ زینیکا کی قیمت 500 ڈالر،

جانسن اینڈ جانسن اور روسی ویکسین سپوٹنک دونوں 600 ڈالر اور چین کی تیار

کردہ سائنو فارم 750 ڈالر میں فروخت ہو رہی ہیں- ایک آن لائن تاجر نے اپنے

اشتہار میں کہا ہے کہ وہ ایک دن میں ویکسین کی ڈیلیوری کر سکتا ہے، ایک رات

میں ڈیلیوری یا ایمرجنسی کی صورت میں ہمیں اپنا پیغام ہیکنگ فورم پر بھیجیں-

ایک دوسرے اشتہار میں کرونا ٹیسٹ کے جعلی منفی نتائج کی پیشکش کی گئی

تھی اور اس میں کہا گیا تھا کہ بیرون ملک سفر یا نوکری کیلئے ہم منفی کووڈ

ٹیسٹ کرتے ہیں، دو منفی ٹیسٹ خریدیں اور تیسرا مفت حاصل کریں- سیاحتی

مقامات پر لے جانیوالی کچھ کمپنیاں سیاحوں سے ویکسینیشن سرٹیفکیٹ مانگتی

ہیں-

=–= یورپی حکام ” گرین ڈیجیٹل سرٹیفکیٹ ” پراجیک کا اعلان کرچکے

برطانیہ میں ویکسین پاسپورٹ کے ایک نظام پر بھی غور ہو رہا ہے جس سے

سیاحوں کو بارز یا کھیلوں کے میدان تک رسائی کی اجازت مل جائیگی، یورپی

حکام نے بھی” گرین ڈیجیٹل سرٹیفکیٹ “ کے منصوبے کا اعلان کیا ہے اس سے

کووڈ 19 کی ویکسین حاصل کرنیوالے افراد، منفی ٹیسٹ نتائج اور کرونا سے

صحت یاب افراد کو یورپی یونین کے اندر سفر کرنے کی اجازت ہو گی اس طرح

یہ کوئی حیرانی کی بات نہیں کہ ڈارک ویب پر جعلی دستاویزات کیوں بیچی جا

رہی ہیں- چیک پوائنٹ کے محققین کے مطابق کئی تاجر جعلی دستاویزات بیچ رہے

ہیں ان میں سے ایک تاجر کا تعلق برطانیہ سے ہے جو 150 ڈالر میں ویکسین کارڈ

فروخت کر رہا ہے اور وہ اس کے عوض کرپٹو کرنسی میں بٹ کوائن کے ذریعے

پیسے وصول کر رہا ہے جب انہوں نے اس تاجر سے رابطہ کیا تو انھیں بتایا گیا

کہ وہ اپنے نام فراہم کریں اور یہ بتائیں کہ وہ تاریخ میں کیا لکھنا چاہتے ہیں یعنی

وہ تاریخ جب انہیں فرضی طور پر کرونا کی ویکسین دی گئی-

= قارئین =ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالوکریں

چیک پوائنٹ سے منسلک اوڈیڈ وانونو نے کہا ہے کہ لوگوں کے لیے یہ سمجھنا

ضروری ہے کہ غیر تصدیق شدہ ذرائع سے ویکسین، ویکسین کارڈ یا منفی کرونا

ٹیسٹ حاصل کرنا بہت خطرناک ہے کیونکہ ہیکرز آپ کے پیسوں، معلومات یا

شناخت کے استحصال میں زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں۔

ڈارک ویب کرونا ویکسین

Leave a Reply