چین نے مولانا مسعود اظہر کیخلاف قرارداد پھر ویٹو کردی

Spread the love

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)چین نے سلامتی کونسل میں بھارت کے کہنے پر

فرانس امریکہ اور برطانیہ کی جانب سے مولانا مسعود اظہر کو دہشتگرد قرار

دینے کی قرارداد کو روک دیا اوراسے ویٹو کر دیا۔غیر ملکی خبررساں ادارے

کے مطابق سلامتی کونسل میں کالعدم جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود

اظہرکیخلاف قرارداد پراعتراض کی ڈیڈلائن ختم ہونے کا آج آخری دن تھا،

فرانس، امریکہ ، برطانیہ نے مسعود اظہر کو دہشت گرد قرار دینے کی قرارداد

پیش کی تھی تاہم چین نے سلامتی کونسل میں مسعود اظہر کیخلاف قرارداد کو

اور مولانا مسعود اظہر کو عالمی دہشتگرد قرار دینے کی بھارت ،امریکہ ،

فرانس اور برطانیہ کی کوششوں کو ایک بار پھر ناکام بنا دیا۔ چینی وزارت

خارجہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہم نے ہمیشہ ذ مے دارانہ رویے کا

مظاہرہ کیا اور ہمیشہ مناسب مؤقف اپنایا، مسعود اظہر کیخلاف قرارداد پرفریقین

سے رابطے میں رہے ہیں، تاہم ہمارا مؤقف ہے اس مسئلے پرمتعلقہ اداروں کو

قوانین اورطریقہ کارکی پیروی کرنی ہوگی اورتمام فریقین کیلئے مسئلے کا قابل

قبول مناسب حل نکالنا ہوگا۔ چین متعلقہ پارٹیوں کیساتھ مل کر ذمہ دار کردار ادا

کرے گا۔ کسی کو دہشت گرد قرار دینے سے متعلق چین اپنا موقف کئی باردے

چکا ہے، عالمی برادری کو اس قسم کے مسائل اجاگر کرنے کیساتھ مسئلہ کشمیر

کا حل نکالنا ہوگا. دیرپا نتائج کیلئے ذمہ داراورسنجیدہ بات چیت کی ضرورت ہے۔

خیال رہے چین اس سے پہلے 3 بار مسعود اظہر کو دہشت گرد قرار دینے کی

کوشش ناکام بنا چکا ہے۔ قرار داد پیش ہونے سے پہلے امریکی سیکریٹری اسٹیٹ

مائیک پومپیو نے بھارتی سیکریٹری خارجہ وجے گوکھیل کیساتھ ملاقات کی اور

دہشت گردوں کیخلاف فوری کارروائی کی ضرورت پر زور دیا ۔

Leave a Reply