Pdm jalsa

پی ڈی ایم گوجرانوالہ جلسے کا ہاٹ ایشو مہنگائی اور پنجاب حکومت کی رپورٹ

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

گوجرانوالہ (جے ٹی این آن لائن خصوصی رپورٹ ) پی ڈی ایم گوجرانوالہ

جناح سٹیڈیم گوجرانوالہ میں اپوزیشن اتحاد (پی ڈی ایم) جلسہ میں مہنگائی ہاٹ

ایشو رہا، مرکزی قائدین نے اشیاء کی عدم دستیابی سمیت قیمتوں میں اضافے کو

موضوع تقریر رکھا جبکہ مسلم لیگ ن، پیپلز پارٹی اور جمعیت علماء اسلام کی

جانب سے پورے گوجرانوالہ میں جو بڑے بڑے فلیکس آویزاں کئے گئے تھے ان

پر بھی مہنگائی کیخلاف نعرے درج تھے۔

=—= پی ڈی ایم قائدین نے ملک میں مہنگائی کو خوب کیش کروایا

شرکاء جلسہ کی اکثریت یہ کہتے سنی گئی کہ مہنگائی سے ہمارے بچے روٹی کو

بھی ترس گئے ہیں۔ مقررین نے ملک میں مہنگائی کو خوب کیش کروایا۔ شرکاء

جلسہ کی تعداد متنازع بنی رہی تاہم برملا اظہار کیا گیا کہ یہ اپوزیشن کا بڑا سیاسی

شو ہے۔ یہ امر قابل ذکر کہ پی ڈی ایم نے حکومت کے مخالف پہلے جلسے کیلئے

گوجرانوالہ کاا نتخاب کیا کیونکہ گزشتہ انتخابات میں مسلم لیگ ن نے یہاں کلین

سویپ کر چکی ہے۔ قبل ازیں اس شہر کو پیپلز پارٹی کا گڑھ سمجھا جاتا رہا ہے۔

نواز شریف نے بھی اپنے خطاب کے دوران گوجرانوالہ کے عوام کو دس سے

زیادہ بار مخاطب کیا۔ شرکاءجلسہ نے اس پر شیر شیر کے نعرے لگائے۔

=—= اپوزیشن کا ’ شو ‘ ناکام رہا، پنجاب حکومت کی وزیراعظم کو رپورٹ

دوسری طرف پنجاب حکومت نے وزیراعظم کو گوجرانوالہ جلسہ میں اپوزیشن کا

شو ناکام ہونے کی رپورٹ بھجوادی ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اپوزیشن کی

جماعتیں جلسے کےلئے حقیقی عوام کو باہر نہیں نکال سکیں اپنے کارکنوں کو لایا

گیا جبکہ شرکاء کی تعداد چند ہزار تھی۔ زیادہ تر تعداد مسلم لیگ ن کے کارکنوں

کی تھی، دوسرے نمبر پر جے یو آئی (ف) اور اس کے بعد پیپلز پارٹی کے کارکن

نظر آئے۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ اپوزیشن کو جلسے اور ریلیوں کیلئے مکمل فری

ہینڈ دیا گیا اور آئندہ کے جلسوں میں بھی فری ہینڈ دیا جائیگا۔

=—= پی ڈی ایم نے معاہدہ کی پاسداری نہ کی، مقدمات درج ہونا چاہییں

کنٹینر کہیں بھی کھڑے نہیں کئے گئے اور نہ ہی اپوزیشن کیلئے رکاوٹیں کھڑی

کی گئیں۔ مریم نواز اور مسلم لیگ ن پر معاہدہ توڑنے کا الزام بھی عا ئد کیا گیا۔

مریم نواز نے شاہدرہ سمیت گوجرانوالہ کے راستے میں تین مرتبہ کارکنوں سے

خطاب کرکے معاہدے کی پاسداری نہیں کی۔ معاہدہ کی خلاف ورزی پر ان کے

خلاف مقدمہ درج کرنے کی سفارش بھی کی گئی ہے۔ جلسے میں تمام اپوزیشن

رہنماؤں کی تقریریں مکمل ریکارڈ کی گئیں جبکہ لاہور اور گوجرانوالہ کی

انتظامیہ کی جانب سے جلسے کے دوران امن عامہ کے حوالے سے وزیراعلیٰ

پنجاب کو لمحہ بہ لمحہ رپورٹ دی گئی۔

=—= یہ بھی پڑھیں ، پاکستان میں دل کے اسٹنٹس کی تیاری شروع
——————————————————————————–
=–= قارئین =-: ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالوکریں

پی ڈی ایم گوجرانوالہ

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply