الیکٹرانک ووٹنگ مسترد

پی ڈی ایم پھر متحرک ، تحریک چلانے سمیت 29اگست کو کراچی میں پاور شو کا اعلان

Spread the love

پی ڈی ایم متحرک

اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن نیوز) پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) نے الیکشن ریفارمز

مسترد کرتے ہوئے حکومت کو ٹف ٹائم دینے اور تحریک چلانے کا فیصلہ کر لیا ، الیکٹرانک ووٹنگ

مشینوں کے حوالے سے سخت موقف اختیار کیا جائے گا مولانا فضل الرحمان کی صدارت میں ہونے

والے پی ڈی ایم سربراہی اجلاس میں انتخابات ترمیمی بل پر حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ کیا گیا

ہے۔ پی ڈی ایم اس معاملے پر سخت موقف اختیار کرے گی۔اس کے علاوہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین

سے متعلق بھی پی ڈی ایم نے سخت موقف اختیار کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ اجلاس کے دوران قومی

وطن پارٹی کے سربراہ آفتاب شیر پاؤ نے بڑا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی ایم کی خالی نشستوں

کو پر کیا جائے۔آفتاب شیر پاؤ کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی اور اے این پی کے خالی کردہ عہدوں پر

تقرریاں کی جائیں۔اجلاس کے دوران پی ڈی ایم نے حکومت کے ہر طرح کے الیکشن ریفارم کو

مسترد کر دیا ہے۔ پی ڈی ایم نے الیکشن پر مکمل توجہ مرکوز کرنے جبکہ مسلم لیگ (ن) کے صدر

شہباز شریف نے ملک گیر مہنگائی کے خلاف تحریک چلانے کی تجویز دی۔پی ڈی ایمنے 29 اگست

کو کراچی میں پاور شو کرنیکا اعلان کردیا۔ پی ڈی ایم کے سربراہی اجلا س میں مسلم لیگ ن کا وفد

شہباز شریف کی قیادت میں شریک ہوا، نواز شریف اور مریم نواز بذریعہ ویڈیو لنک شریک ہوئے۔

اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی ڈی ایم کے صدر مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ

جعلی حکومت ناکام ہوچکی ، ملک پر الیکشن چور سلیکٹڈ حکومت مسلط ہے ،قومی احتساب

بیورو(نیب) اور وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) سیاسی ادارے بن چکے ہیں اور اپوزیشن کے

خلاف سیاسی انتقام کے لیے استعمال ہورہے ہیں۔مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ ملک اس وقت سنگین

داخلی اور خارجی خطرات سے دوچار اور بدترین عالمی تنہائی کا شکار ہے۔۔انہوں نے کہا کہ اس

جعلی حکومت کو ملک کے اندر اور باہر ہر محاذ پر مکمل طور پر ناکامی کا سامنا ہے، ملک کو

داخلی مسائل کے ساتھ سنگین ترین خارجہ خطرات نے پاکستان کو اس وقت بدترین عالمی تنہائی کا

شکار بنا دیا ہے۔مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ افغانستان میں رونما صورت حال پر سلامتی کونسل

کے اجلاس میں پاکستان کو بیٹھنے کی اجازت دینے سے انکار سے ملک کا مفاد ہی تباہ نہیں ہوا بلکہ

ملک کے وقار کو بھی تباہ کیا گیا۔ پی ڈی ایم افغانستان کے حوالے سے بڑے واضح الفاظ میں حمایت

کرتی ہے کہ افغان مسئلے کا حل فریقین کے باہمی مذاکرات کے ذریعے سیاسی حل ہے۔مولانا فضل

الرحمان نے کہا کہ ناکام خارجہ پالیسی کے باعث امریکی صدر بائڈن عمران خان کو فون کرتا نہین

اور مودی ان کا فون سنتا نہیں ۔ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف نے کیا

کہنواز شریف کی بیماری سیاست حکومت کا گھناؤنا کھیل ہے ۔ نواز شریف علاج کرائے بغیر واپس

نہٰن آئی گے اپوزیشن اتحاد کے سربراہ نے کہا کہ پی ڈی ایم کے قائدین نے بڑی تفصیل کے ساتھ

داخلہ اور خارجہ حالات کا اظہار کیا اور اپنے خیالات اور خدشات کا اظہار کیا اور مطالبہ کیا کہ

پارلیمنٹ کے اندر موجود اپوزیشن کو اس بارے میں اعتماد میں لیا جائے کیونکہ پارلیمنٹ کا ایک بڑا

حقیقی اور اہم حصہ ملک کو درپیش اس صورت حال سے آگاہ نہیں ہے، کیوں ان سے حقائق چھپائے

جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اجلاس نے ملک میں بدترین مہنگائی کی شدید ترین الفاظ میں مذمت کی

ہے، حکومت نے مہنگائی، بے روزگاری اور ظلم کے ریکارڈ توڑ دیے ہیں، عوام کا جینا دو بھر

ہوچکا ہے، ظالمانہ ٹیکسوں اور آئی ایم ایف کے شرائط پوری کرنے کے لیے عوام کے خون کا آخری

قطرہ بھی نچوڑا جا رہا ہے۔

پی ڈی ایم متحرک

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply