پنجشیر پرقبضہ کر لیا، افغانستان پاکستان کیلئے خطرہ نہیں بنے گا، طالبان

پنجشیر پرقبضہ کر لیا، افغانستان پاکستان کیلئے خطرہ نہیں بنے گا، طالبان

Spread the love

کابل (جے ٹی این انٹرنیشنل نیوز) پنجشیر پرقبضہ

طالبان نے افغانستان کی ناقابل تسخیر سمجھی جانیوالی وادی پنجشیر پر بھی

قبضہ کر لیا۔ 15 اگست کو ملک کے بیشتر حصوں کا کنٹرول سنبھالنے کے بعد

کابل پر قبضہ کرنے والے افغان طالبان کو دارالحکومت کے شمال میں واقع

پنجشیر وادی میں شدید مزاحمت کا سامنا تھا، تاہم اب طالبان ذرائع کی طرف سے

بتایا گیا کہ وادی پنج شیر کے تمام 34 اضلاع پر ان کا کنٹرول ہے، جبکہ سابق

افغان نائب صدر امر اللّٰہ صالح تاجکستان فرار ہو گئے ہیں۔ دریں اثناء قطر ایئر

فورس کا طیارہ اور ٹیکنیکل ٹیم گزشتہ دو روز سے کابل میں موجود ہے جبکہ

قطر ایئر فورس کی ایک اور خصوصی پرواز گزشتہ شام افغان دارالحکومت کابل

پہنچی۔ ایوی ایشن ذرائع نے بتایا کہ قطر سے مزید ماہرین کو کابل چھوڑ کر یہ

پرواز واپس چلی گئی۔ ذرائع کے مطابق قطر اور ترکی کے ایوی ایشن کے

ماہرین کابل ایئرپورٹ کے فضائی ٹریفک کنٹرول سروس کو بحال کر رہے ہیں۔

=-= دنیا بھر سے مزید تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے کہا ہے کہ چین اور جرمنی افغانستان کی امداد

بڑھائیں گے۔ سہیل شاہین کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ چین

افغانستان میں سفارتخانہ کھلا رکھے گا اور افغانستان کی امداد بھی بڑھائے گا۔

انہوں نے بتایا کہ قطر طالبان دفتر کے رکن عبدالسلام حنفی کا چین کے نائب

وزیرِ خارجہ سے ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے، جس میں عبدالسلام حنفی اور چینی

نائب وزیرِ خارجہ نے افغانستان کی صورتِحال اور مستقبل کے تعلقات پر گفتگو

کی۔ چین کے نائب وزیرِ خارجہ نے کہا کابل میں چینی سفارتخانہ برقرار رہے

گا، ہمارے تعلقات ماضی کے مقابلے میں بہتر ہوں گے۔ طالبان کے ترجمان نے

بتایا کہ چینی نائب وزیرِخارجہ نے کہا کہ افغانستان خطے کی سلامتی اور ترقی

میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔ چین افغانستان میں انسانی امداد جاری رکھنے کے

ساتھ ساتھ اس میں اضافہ بھی کرے گا۔ ادھر امریکی محکمہ خزانہ کے ترجمان

نے کہا ہے طالبان پر عائد پابندیوں میں نرمی نہیں کر رہے۔ ترجمان امریکی

محکمہ خزانہکی جانب سے واشنگٹن سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا کہ طالبان

کی عالمی فنانشل سسٹم تک رسائی پر پابندی میں نرمی نہیں کی جا رہی ہے۔

=-،-= افغان سرزمین پاکستان کیخلاف استعمال نہیں ہوگی، ذبیح اللہ مجاہد

ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد نے پاکستان کو یقین دہانی کرائی ہے کہ افغان سر

زمین ان کی سلامتی کے خلاف استعمال نہیں ہونے دیں گے۔ طالبان کے ترجمان

ذبیح اللہ مجاہد نے اسلام آباد میں منعقدہ افغان یوتھ فورم کی عالمی کانفرنس سے

بذریعہ ویڈیو لنک خطاب کرتے ہوئے افغانستان میں قیام امن اور تعمیر و ترقی

کے لیے پاکستان کے کردار کی تعریف کی۔ ترجمان طالبان نے کہا ہے افغانستان

افغان عوام کے لیے پاکستان کی دیرینہ شراکت کو سراہتا ہے اور امید کرتے ہیں

کہ پاکستان کی افغان قوم کی مدد اور قیام امن کے لیے کوششیں جاری رہیں گی۔

اس موقع پر ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے اس امید کا بھی اظہار کیا کہ پاکستان دو

طرفہ تجارت میں اضافے کے سلسلے کو جاری رکھے گا۔ پاکستان کو یقین دلاتے

ہیں کہ افغانستان کی سرزمین سے اس کی سلامتی کے لیے کوئی خطرہ نہیں ہو

گا۔ ترجمان طالبان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ سی پیک کو افغانستان سے منسلک

کر کے اہم تجارتی مقاصد حاصل کیے جا سکتے ہیں۔ سی پیک کے توسیعی

منصوبے کا خیرمقدم کریں گے۔

=-،-= عالمی برادری کیساتھ تعلقات کیلئے طالبان مزید مہذب بنیں، پیوٹن

روس کے صدر ولادیمیر پیوٹن نے کہا ہے کہ انہیں امید ہے طالبان افغانستان میں

مہذب طریقے سے پیش آئیں گے تاکہ عالمی برادری کابل کیساتھ سفارتی تعلقات

قائم کر سکے۔ روس کے صدر کا کہنا تھا کہ روس ٹکڑوں میں بٹے افغانستان میں

دلچسپی نہیں رکھتا۔ اگر ایسا ہوا تو کوئی بات کرنے کیلئے تیار نہیں ہو گا۔ انہوں

نے کہا کہ طالبان جتنی جلدی مہذب دنیا میں قدم رکھیں گے تو ان کیساتھ رابطہ،

گفتگو کرنے اور کسی حد تک اثر ڈالنے اور سوالات اٹھانے میں آسانی ہو گی۔

روسی صدر ویلادیمیر پوٹن نے افغانستان میں سیاسی قوت کو جائز قرار دینے

کے فیصلے کے لیے مشترکہ کوششوں کا مطالبہ کیا ہے۔

=-،-= طالبان کو نئی حکومت کے طور پر تسلیم نہیں کرینگے، برطانیہ

برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک راب نے کہا ہے کہ برطانیہ افغانستان میں طالبان

کو نئی حکومت کے طور پر تسلیم نہیں کرے گا۔ انہوں نے پاکستانی دارالحکومت

اسلام آباد میں صحافیوں کو بتایا کہ افغانستان میں نئے حقائق سے نمٹنا ہو گا اور

اس ملک کے سماجی و معاشی نظام کو درہم برہم ہوتے نہیں دیکھا جا سکتا۔ راب

نے پاکستان کے دورے کے دوران مزید کہا کہ طالبان کے تعاون کے بغیر پندرہ

ہزار افراد کا کابل سے انخلا ممکن نہیں تھا۔ انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ

لندن حکومت طالبان سے براہ راست بات چیت کی اہمیت سمجھ رہی ہے۔

=-،-= افغان عوام کی مدد کیلئے متحدہ عرب امارات مزید متحرک

افغان عوام کی مدد کے لیے متحدہ عرب امارات نے ادویات و خوراک پر مشتمل

امدادی سامان کا ایک طیارہ کابل بھیجا ہے۔ اس امداد سے ہزاروں افغان خاندانوں

باالخصوص خواتین، بچوں اور عمر رسیدہ افراد کی بنیادی ضروریات پوری ہوں

گی۔ متحدہ عرب امارات کی جانب سے یہ فوری امداد انسانی ہمدردی کی بنیاد پر

بھیجا گئی ہے تاکہ موجودہ حالات میں افغان عوام کو مکمل مدد فراہم کی جائے۔

متحدہ عرب امارات کی مدد کی پالیسی صرف امدادی اشیا کی فراہمی تک محدود

نہیں۔ کچھ دن پہلے متحدہ عرب امارات کے ولی عہد اور مسلح افواج کے ڈپٹی

سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید النہیان کی ہدایت پر امارات نے ہزاروں افغان پناہ

گزینوں کی میزبانی کی۔ اس کے علاوہ ان کی بنیادی ضروریات پوری کرنے کے

لیے تمام مناسب اقدامات اٹھائے۔

=-،-= طالبان افغانستان ایرانی طرز حکومت کے خواہاں، عالمی میڈیا

طالبان ذرائع کا کہنا ہے کہ طالبان کےنائب امیر ملا برادر نئی افغان حکومت کی

قیادت کریں گے جس کا اعلان آج متوقع ہے۔ رائٹرز کے مطابق تین ذرائع نے

بتایا کہ ملا برادر جو طالبان کے سیاسی دفتر کے سربراہ ہیں، ملا محمد یعقوب،

جو طالبان کے سابق بانی ملا عمر کے بیٹے ہیں اور شیر محمد عباس ستانکزئی،

حکومت میں اعلیٰ عہدوں پر فائز ہوں گے۔ فرانسیسی میڈیا کے مطابق طالبان

ایرانی طرز حکومت میں دلچسپی رکھتے ہیں جس میں صدر اور کابینہ تو موجود

ہوتے ہیں مگر سپریم لیڈر بطور مذہبی رہنما تمام اختیارات اپنے پاس رکھتے ہیں۔

افغان طالبان کے ترجمان نے فرانسیسی نیوز ایجنسی کو بتایا کہ نئی حکومت کا

اعلان جمعہ کو ہونا تھا تاہم یہ آج ہفتہ 4 ستمبر سے قبل ممکن نہیں ہو سکے گا-

پنجشیر پرقبضہ ، پنجشیر پرقبضہ ، پنجشیر پرقبضہ ، پنجشیر پرقبضہ

پنجشیر پرقبضہ ، پنجشیر پرقبضہ ، پنجشیر پرقبضہ ، پنجشیر پرقبضہ

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply