Prison Faimly Homes

پنجاب میں قیدیوں کو بیویوں کیساتھ جیل فیملی ہومز میں رہنے کی اجازت

Spread the love

لاہور(جے ٹی این آن لائن پنجاب نیوز) پنجاب میں قیدیوں

پنجاب میں قیدیوں کو بیویوں کیساتھ جیل کے فیملی ہومز میں رہنے کی اجازت مل

گئی، محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے جاری اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ بیوی

کو قیدی خاوند کیساتھ ہر تین ماہ بعد 3 روز تک رہنے کی اجازت ہو گی، قیدی کا

5 سال تک کا بچہ بھی والدین کیساتھ رہ سکے گا، نوٹیفکیشن کے مطابق قیدی کو

اپنی بیوی کیساتھ رہنے کے حکم نامے پر عملدرآمد فوری طور پر ہو گا، حکومتی

اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ فیملی ہومز میں رہنے کے لیے قیدی یا اس کی بیوی

کو درخواست دینا ہو گی جس پر متعلقہ ڈپٹی کمشنر نکاح نامے کی تصدیق کے بعد

فیملی ہومز کے استعمال کی اجازت دے گا اور فیملی ہومز صرف سزا یافتہ قیدی

استعمال کرنے کے مجاز ہوں گے۔

=–= پنجاب میں نئے اسلحہ لائسنس اجراء پر پابندی برقرار رکھنے کا فیصلہ

پنجاب حکومت نے نئے اسلحہ لائسنس اجراء پر پابندی برقرار رکھنے کا فیصلہ

کیا ہے، صوبائی حکومت نے خاص اداروں اورخاص افراد کو اسلحہ لائسنس کے

اجراء کے لیے ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ کی سربراہی میں ایک کمیٹی قائم کی

ہے جس میں ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی، ایڈیشنل آئی جی آپریشن اوراسپیشل برانچ

کے نمائندے شامل ہیں، 31 دسمبر 2020ء تک اسلحہ لائسنس کی تجدید نہ کرانے

والے تمام اسلحہ لائسنس منسوخ ہو چکے ہیں، حکومت نے اسلحہ لائسنس سے

متعلق محکمہ داخلہ پنجاب کے کئی اختیارات ڈپٹی کمشنرزکو سونپنے کا فیصلہ کیا

ہے جس کی سمری وزیراعلی پنجاب کو ارسال کی گئی ہے جس کا منظور ہونے

کے بعد نوٹیفکیشن جاری کیا جائے گا، صوبائی حکومت نے اسلحہ لائسنس کی

وراثت، بور اور گولیوں کی تعداد میں تبدیلی کا اختیار بھی ڈپٹی کمشنر کو دینے کا

فیصلہ کیا ہے۔

=—–= قارئین =-: کاوش اچھی لگے تو شیئر، فالو کریں اپڈیٹ رہیں
=—–=ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )

پنجاب میں قیدیوں

Leave a Reply