Punjab Lock Down

پنجاب ،کرونا سے پاک شہروں کو کھولنے کا فیصلہ،متاثرہ علاقوں میں لاک ڈائون پر سختی سے عملدرآمدپر اتفاق

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور (سٹاف رپورٹر سے) پنجاب حکومت نے لاک ڈاؤن کے حوالے سے بڑا فیصلہ کیاہے جس کے تحت کرونا وائرس سے پاک شہروں کو کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اس کیلئے محکمہ صحت کی ٹیمیں 24 گھنٹے گلی محلوں کارخانوں جیلوں اور عوام میں جاکر جگہ جگہ کرونا وائرس کا ٹیسٹ کریں گی ٹیسٹوں کا دائرہ کار وسیع کیا جائے گا اور جن علاقوں اور شہروں میں کرونا وائرس زیرو ہوا انہیں لاک ڈاؤن سے مستثنیٰ کر دیا جائیگا

اس سلسلے میں سفارشات حکومت کو پیش کردی گئی ہیں جن پر آئندہ دو روز میں فیصلہ کیاجائیگا ۔ذرائع کے مطابق گزشتہ شام کرونا ایکسپرٹ ایڈوائزری گروپ پنجاب صوبائی محکمہ داخلہ اور محکمہ صحت کا مشترکہ اجلاس ہوا جس میں پنجاب میں کرونا وائرس کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا اور اس بات پر بھی غور و غوص ہوا کہ پنجاب میں لاک ڈاؤن میں آٹھ روز کی توسیع کی جائے یا نہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اجلاس میں پنجاب کرونا ایڈوائزری گروپ نے اپنی تجاویز اور سفارشات پیش کرتے ہوئے کہا کہ لاک ڈاؤن کے دوران وسائل نہ ہونے سے جس تیزی سے لوگوں کے ٹیسٹ کیے جانے تھے وہ نہیں ہوسکے اور اس وجہ سے اس نتیجے پر نہیں پہنچا جا سکتا کہ صوبہ کے کس شہر میں کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد کیا ہے اور لاک ڈاون میں توسیع ہونی چاہیے یا نہیں

اس کے لئے چونکہ اب وسائل حاصل ہوگئے ہیں اور ٹیسٹوں کی استعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے لہذا گروپ یہ تجویز دیتا ہے کہ ایک ہفتے کے لیے لاک ڈاون میں توسیع کر دی جائے اور اس دوران محکمہ صحت ایڈوائزری گروپ اضلاع کی انتظامیہ ڈسٹرکٹ تحصیل ٹیچنگ ہسپتالوں کی انتظامیہ بنیادی مراکز صحت مل کر ہر جگہ کرونا کے ٹیسٹ مکمل کریں اور اس مرحلے کا فوکس صنعتی اداروں یعنی کارخانو ں، جیلوں، ہیلتھ پروائڈرز ہسپتالوں کے ڈاکٹروں نرسوں اور پیرا میڈیکل سٹاف ہویا وارڈ بوائزسیکیورٹی گارڈ ز کے ٹیسٹ مکمل کیے جائیں

یہ کام جنگی بنیادوں پر پورے صوبے میں کیا جائے جس کے بعد جن شہروں اور قصبوں میں کرونا وائرس زیرو آئے وہاں لاک ڈائوں ختم کردیا جائے اور ان شہروں کو فوری طور پر آمدورفت اور کاروبار کے لئے کھول دیا جائے جہاں کرونا وائرس کے مریض سامنے آئیں ان علاقوں کیلئے لاک ڈاؤن میں ایک ہفتہ کی توسیع کر دی جائے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کو پیش کی گئی سفارشات پر آئندہ دو روز میں عملدرآمد کیاجائے گا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply