جیسنڈا تو سامراج کے سامنے جھک گئیں، اصل دُکھ اپنوں کا طنز 0

پلوامہ دھماکہ بھی ممبئی حملے کی طرح بھارتی ڈرامہ

Spread the love

(تجزیہ :ارا)
دیکھنا یہ ہے کہ پلوامہ حملے کا اصل فائدہ کسے ہوا۔بھارتی الزامات کو سامنے رکھیں توکچھ سوال پیدا ہوتے ہیں کہ پاکستان ایسا کیوں کریگا۔ جوا ب یہ ہے کہ دہشتگردی کیخلاف زبردستی جھونکی آگ میں دس سال جلنے کے بعد پاکستان بحالی کے عمل سے گزرہا ہے۔ مختلف ممالک پا کستا ن میں سرمایہ کاری کررہے ہیں۔ غیر ملکی ٹیمیں پاکستان آرہی ہیں۔ تو ایسے میں پاکستان کو ئی ایڈونچر کیوں کریگا۔

بھارت ایک عرصے بعد عالمی تنہائی کا شکار ہو رہا ہے۔ امریکہ نے افغان مذاکراتی عمل میں بھارت کو دودھ میں مکھی کی طرح نکال کر پھینک دیا۔ کرتارپوربارڈر کے معاملے میں بھی پاکستان نے بھارت کو سفارتی محاذ پر شکست دی۔ اسی طرح کلبھوشن یادیو کے معاملے میں بھی بھارت کوشدید ہزیمت کا سامنا ہے۔

صورتحال یہ ہے کہ مودی کو الیکشن میں اپنی شکست صاف نظر آرہی ہے۔ مودی کے پاس اب صرف اینٹی مسلم سلوگن کے علاوہ کوئی رستہ نہیں بچتا۔ جلد یا بدیر یہ بات سامنے آجائیگی کہ پلوامہ دھماکہ مسلمانوں کے خون سے رنگے مودی کے ہاتھوں کا کارنامہ ہے۔ورنہ ایک ایسا مقبوضہ خطہ جہاں ہر سات کشمیریوں پر ایک بھارتی فوجی نافذ ہے ،اور یہ فوجی شدید دباؤ کا شکار ہیں۔ چھٹیوں کی درخواستوں کیسا تھ خودکشی کا رجحان بڑھ رہا ہے ۔

بھارت کشمیریوں کے سامنے بے بس ہوتا جارہا ہے اُس کے پاس اب صرف ایک رستہ رہ گیا تھا کہ پاکستا ن سے الیکشن سے قبل جنگ کا بہانہ بنانے اور کشمیریوں کو مزید بیدردی سے کچلنے کا جواز بنایا جائے۔ ممبئی آٹیک کی طرح پلوامہ دھماکہ بھی جلد ثابت کر دیگا کہ یہ ایک بھارتی ڈرامہ تھا ۔

ایک ایسا علاقہ جہاں فوج کی مرضی کے بغیر چڑیا پر نہیں مارسکتی۔ وہاں پر اتنا خطرناک بارودی مواد اور اتنے بڑے پیمانے پر لے جانا ممکن نہیں پھر ایک خودکش بمبار کی جانب سے اتنی بڑی کارروائی تن تنہا انجام دینا ایک اچھنبے کی بات ہے بھارت نے جس عجلت کیساتھ پاکستان پر الزام تھوپا ۔ اس سے موسٹ فیورٹ نیشن کا اسٹیس واپس لیا۔

مقبوضہ کشمیر میں بزدل بھارتی فوج کو ہر طرح کا ظلم وستم کرنے کا گرین سگنل دینا سب سکر سٹیڈ نظر آتا ہے۔ موسٹ فیورٹ نیشن جوتے کی نوک پر ہمیں ایسے منافقانہ اسٹیس کی ضرورت بھی نہیں ہونی چاہیے۔ تاہم پاکستان کی سیاسی و عسکری قیادت کو یہ مرحلہ ٹھنڈے دماغ سے حل کرن چاہیے کیونکہ مودی کا پاگل پن پوری دنیا میں ایکسیوز کرنا ضروری ہے۔

Leave a Reply