پشاور پریس کلب میں دو نیوز کانفرنسز، سکول کا چوکیدار اور معذور شہری

پشاور پریس کلب میں دو نیوز کانفرنسز، سکول کا چوکیدار اور معذور شہری

Spread the love

پشاور(بیورو چیف، عمران رشید خان سے) پشاور پریس کلب

پشاور کے علاقہ حسن گڑھی کی خواتین نے سرکاری سکول کے سہیل نامی

چوکیدار پر الزام عائد کیا کہ اس نے ان کی جائیداوں پر جبری قبضہ کر لیا ہے،

اور اب ہمیں مارنے کی دھمکیاں بھی دے رہا ہے۔ گزشتہ روز پشاور پریس کلب

میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے حسن گڑھی سے تعلق رکھنے والی

سوشل ورکر آسیہ جمیل، نادیہ اور شاہ جہانہ سمیت دیگر خواتین نے مزید کہا کہ

مذکورہ شخص نے کئی جگہوں پر زبردستی لوگوں سے دستخط لے کر ان کے

زمینوں پر قبضہ کیا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ مذکورہ شخص ان کے خلاف

بولنے والوں کی زبان بند کرنے کے لئے دھمکیوں پر اتر آتا ہے، پریس کانفرنس

سے خطاب کرتے ہوئے خیبر پختونخوا کی پہلی ناول نگار خاتون اور حقوق

نسواں کی سرگرم کارکن آسیہ جمیل نے کہا کہ مذکورہ ملزمان کی جانب سے

انہیں اور خاندان کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں جس کے باعث

وہ شدید ذہنی اذیت میں مبتلا ہیں-

= یہ بھی پڑھیں= متاثرینِ ابیٹ آباد کے نام ایک کھلا خط

آسیہ جمیل کا کہنا تھا کہ مذکورہ شخص کی طرف سے انہیں بے سہارا خواتین کا

ساتھ دینے پر تیزاب پھینکنے اور جان سے مارنے کی دھمکیاں مل رہی ہیں، جن

کے ثبوت ان کے پاس موجود ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ مذکورہ شخص نے

علاقہ کے ہیر ڈریسر اور ایک مفتی کی زمین پر بھی قبضہ کیا ہوا ہے، انہوں

نے مزید کہا کہ مذکورہ شخص ان پر جھوٹے الزامات لگا کر ان کو بلیک میل

کرنے کی ناکام کوشش کر رہا ہے، انہوں نے مزید کہا کہ مذکورہ شخص کی

جانب سے ان پر لگائے گئے جھوٹے الزامات کیخلاف وہ جلد ان کو قانونی نوٹس

بھی بجھوا رہی ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ وہ ہر فورم پر قبضہ مافیا کیخلاف

آواز بلند کرتی رہیں گی اور اگر انہیں یا ان کے خاندان والوں میں سے کسی کو

نقصان پہنچا تو اس کی ساری ذمہ داری مذکورہ سہیل نامی شخص پر ہو گی-

انہوں نے وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان، گورنر شاہ فرمان، آئی جی

پولیس اور دیگر اعلی حکام سے مطالبہ کیا کہ وہ فوری طور پر مذکورہ شخص

کیخلاف کارروائی کر کے انہیں تحفظ فراہم کی جائے، بصورت دیگر علاقہ کی

خواتین قبضہ مافیا کیخلاف صوبائی اسمبلی کے سامنے احتجاجی دھرنا دینے پر

مجبور ہو جائیں گے۔

=-،-= بغدادہ کے معذور شخص کا کرایہ داروں سے گھر واگزار کرنے کا مطالبہ

مردان کے علاقہ بغدادہ سے تعلق رکھنے والے معذور شخص محمد طارق نے

کرایہ داروں سے گھر واگزار کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ بغدادہ میں ان

کے گھر پر کرایہ دار قابض ہو گئے ہیں، جبکہ قابضین ان کو جان سے مارنے

کی دھمکیاں بھی دے رہے ہیں- گزشتہ روز پشاور پریس کلب میں پریس

کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مردان کے علاقہ بغدادہ سے تعلق رکھنے والے

معذور شخص محمد طارق نے کہا انہوں نے شہناز اور فوزیہ نامی خاتون سے

گھر لیا، جس کے دستاویزات ان کے پاس موجود ہیں، انہوں نے بتایا کہ مردان

میں واقع ان کے گھر پر خان بادشاہ اور ان کے خاندان والوں نے قبضہ کیا ہے،

جن کو ان کے رشتہ داروں مہتاب گل، منصور اور مصور سمیت دیگر کی مدد

حاصل ہیں- انہوں نے کہا کہ وہ ایک معذور شخص ہے جبکہ ان کا بھائی بھی

بیمار ہے اور ان کو شدید مشکلات کا سامنا ہے-

=-،-= خیبر پختونخوا سے متعلق مزید خبریں (=-= پڑھیں =-=)

انہوں نے مزید کہا کہ گھر میں موجود کرایہ دار اور ان کے سہولت کا ان پر

جھوٹے مقدمات بھی درج کر رہے ہیں- انہوں نے مقامی پولیس پر الزام لگاتے

ہوئے کہا کہ مقامی پولیس مخالفین کیساتھ ملی ہوئی ہے، انہوں نے کہا کہ انہوں

نے کئی بار ڈی آئی جی مردان سے ملنے کی کوشش بھی کی، مگر باہر تعینات

پولیس اہلکار ان کو ملاقات کے لئے نہیں چھوڑ رہے ہیں- انہوں نے وزیراعلی

خیبر پختونخوا، چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ، آئی جی پولیس سمیت مقامی اعلی

افسران سے مطالبہ کیا کہ ان کے گھر کو قابضین سے واگزار کر کے ان کو

تحفظ فراہم کیا جائے۔

پشاور پریس کلب ، پشاور پریس کلب ، پشاور پریس کلب ، پشاور پریس کلب

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply