0

پاک بھارت کشیدگی، دفتر خارجہ میں کرائسزمینجمنٹ سیل قائم

Spread the love

اسلام آباد(جے ٹی این آن لائن) پاک بھارت کشیدگی کی صورتحال کے حوالے سے دفترخارجہ میں کرائسزمینجمنٹ سیل قائم کر دیا گیا۔ ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر فیصل کا کہنا ہے خوف کی فضاء نہیں چاہتے،جنگ مسلط کی گئی تو بھرپور جواب دینگے.

کرائسزمینجمنٹ سیل ایمرجنسی حالات کیلئے بنایا گیا ہے جو24 گھنٹے کام کرے گا اور سفارتی و سرحدی صورتحال کے حوالے سے رابطوں سمیت صورتحال پر نظر رکھے گا۔

ترجمان نے مزیدکہا پاکستان ہر طرح کے حالات سے نمٹنے کیلئے تیار ہے۔ دوسری جانب پاکستان کے دوست ممالک سمیت دیگرسے سفارتی رابطے بھی جاری ہیں ،

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے یورپی یونین کی ذیلی کمیٹی سمیت اپنے نیپالی اور سر ی لنکن ہم منصبوں سے رابطہ کیا ،جس میں انہیں بھارتی جارحیت اور دھمکیوں کیساتھ ساتھ پاکستان کے موقف سے بھی آگاہ کیا ۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا پاکستان خطے میں امن و امان کا خواہاں ہے۔وزیر خارجہ نے متذکرہ تمام رہنمائوں کو سلامتی کونسل کے صدر کو لکھے گئے خط سے متعلق بھی آگاہ کیا۔

سری لنکن وزیر خارجہ تلکا مارا پانا نے دونوں ممالک کے مابین تمام تنازعات کو پر امن طریقے اور بات چیت سے حل کرنے کی حمایت کی ۔

یورپی یونین کی ذیلی کمیٹی برائے انسانی حقوق نے بھارت سے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر کشمیر میں انسانیت سوز مظالم بند کرنے اوراقوام متحدہ کی رپورٹ پر عملدرآمد کرنے کا مطالبہ بھی کیا

نیپالی ہم منصب، چیئر آف سارک پردیپ کمار گیاوالی نے بھی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے رابطہ کرنے پر کہا سارک فورم کا مقصد خطے کے ممالک کو قریب لانا ہے سارک جنوبی ایشیا ء میں قیام امن کیلئے اپنا تعمیری کردار ادا کرے۔پاکستان امن و امان کے فروغ کے لئے جنوبی ایشیا اور اپنے ہمسایہ ممالک کو انتہائی اہمیت دیتا ہے۔

نیپالی وزیر خارجہ پردیپ کمار گیاوالی نے کہاکہ خطے میں امن و امان کا قیام سب کی بنیادی ذمہ داری ہے ۔نیپال، سارک کا ممبر ہونے اور پاکستان کا دوست ہونے کے ناطے، پختہ یقین رکھتا ہے امن کی پاسداری سب کے یکساں مفاد میں ہے۔

Leave a Reply