پاک ایران مثالی تعلقات کے خواہاں ہیں، عمران خان، مشہد میں روضہ امام علی رضا پربھی حاضری

Spread the love

تہران،کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈیسک،بیورورپورٹ ) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے

ریاست مدینہ کے سنہری اصولوں پرمبنی طرزحکومت میرا ویژن ہے، ایران نے

ہرمشکل میں ہمارا ساتھ دیا، پاکستان بھی ایران کے ساتھ قریبی تعلقات کا خوایاں

ہے، پاکستانی زائرین کو مشہد میں سہولیات فراہم کرنے پر حکومت خراسان کے

مشکورہیں ،اتوارکو وزیر اعظم عمران خان نے دو روزہ دورہ ایران کے دوران

پہلے مرحلے میں مشہد میں مختصر قیام کیا جہاں انہوں نے روضہ حضرت امام

علی رضا علیہ السلام پر حاضری دی اورملک و قوم کی ترقی و خوشحالی کے

لئے دعا مانگی، مشہد میں موجود قرآن کریم میوزیم بھی گئے،مشہد کے والی

احمد ماروی سے بھی ملاقات کی ،اس موقع پر انکا کہنا تھا مشہد سے اپنے

دورے کا آغاز کرنے پر انتہائی خوشی ہوئی ہے۔ حکومت زائرین کی نقل و حمل

میں آسانی کے لئے مزید اقدامات کررہی ہے۔ اس پر والی روضہ مشہد نے کہا

مسلم امہ میں اتحاد و اتفاق انتہائی اہم ہے، مشہد میں مختصر قیام کے بعد وزیر

اعظم تہران پہنچے جہاں وہ آج ایرانی صدر حسن روحانی،سپریم لیڈرآیت اللہ

خامنہ ای اور دونوں ممالک کی تاجر کمیونٹی سے ملاقات کرینگے،قبل ازیں

مشہد پہنچنے پر ان کا استقبال گورنرجنرل خراسان رضا حسینی نے کیا۔ وزیر

اعظم دورے کے دوران پاک ایران تجارت بڑھانے پربات چیت کریں گے. انہیں

آج گارڈ آف آنرپیش کیا جائےگا۔ وفود کی سطح پر ملاقاتیں اور کئی ایم او یوز پر

دستخط ہوں گے جس کے بعد مشتر کہ پریس کانفرنس بھی ہوگی جبکہ ایرانی

صدر حسن روحانی وزیراعظم عمران خان کے اعزاز میں ظہرانہ بھی دیں گے۔

ایران میں تعینات پاکستانی سفیر نے رفعت مسعود ایران کیساتھ تعلقات کی توسیع

اور مشترکہ سرحدوں میں پایدار قیام امن کو عمران خان کے دورہ کے اہم مقاصد

قراردیا اورکہا برادرہمسایہ ملک سے باہمی تعلقات کی توسیع کے خواہاں ہیں۔

عمران خان کا عقیدہ ہے پاکستان سمیت دوسرے ممالک میں قیام امن و استحکام

لازمی ہے،اس مقصد تک پہنچنے اور عوام کی خوشحالی میں اضافہ کرنے

کیلئے خطے کے ممالک کے درمیان معاشی تعلقات کے فروغ کی ضرورت ہے۔

ایران اور پاکستان میں بہت بڑے قابل دید اور خوبصورت مقامات ہیں جبکہ ان

دونوں ملکوں کے درمیان گہرے تہذیبی و ثقافتی تعلقات ہیں لہذا ہمیں سیاحت کی

صعنت کو فروغ دینا ہوگا۔ پاسداران انقلاب فورس کیخلاف ٹرمپ انتظامیہ کے

فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا امریکی صدر کے ایسے اقدامات سے خطے

کو مسائل کا سامنا ہوگا۔ مسلح افواج ممالک کے اندرونی معاملات ہیں اور کسی

بھی ملک کو دوسروں کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرنے کا کوئی حق

نہیں۔ ہم ایران کیخلاف امریکی پابندیوں کے بھی مخالف ہیں۔ قبل ازیں اتوار کو

کوئٹہ میں نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد تقریب سے

خطاب کرتے ہوئےوزیر اعظم عمران خان نے کہا زرداری اور شریف فیملی نے

ملک کو بے دردی سے لوٹا ،ملک لوٹنے والوں کو نشان عبرت بنائینگے،پی پی

اور(ن) لیگ کی حکومتوں نے جو ملک سے کیا وہ کوئی دشمن بھی نہ کرے

،فضل الرحمان کہتا ہے نہ خود کھیل رہا ہوں اور نہ کسی کو کھیلنے دوں گا،

کوئی قوم اس وقت تک ترقی نہیں کرسکتی جب تک کرپٹ عناصر کو انصاف کے

کٹہرے میں نہ لایا جائے، پچاس لاکھ گھر ان کیلئے ہیں جو خود سے گھر نہیں

بناسکتے،ہم ایسا قانونی لائیں گے جس کے ذریعے لوگ گھر بنانے کے لیے

بینکوں سے آسان شرائط پر قرض لے سکیں گے، حکومت اس سلسلے میں عدالت

میں ایک کیس بھی لڑ رہی ہے۔ گھربنانے سے 40 صنعتوں کو روزگار ملنا

شروع ہوجائے گا۔ ملک اس وقت ترقی کرتے ہیں جب ریاست معاشرے کے

کمزور طبقوں کا خیال رکھتی ہے، پاکستان کے مقابلے میں دنیا کے دیگر ملکوں

میں قرض لے کر گھر بنانے کی شرح کہیں زیادہ ہے۔عمران خان نے اپنا کاروبار

شروع کرنے کے لیے نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا وہ سرکاری

نوکریاں کرنے کے بجائے اپنا کاروبار شروع کریں، پاکستان ایلیٹ کلاس کیلئے

رہ گیا ہے۔جو پہلے موٹر سائیکل چلاتا تھا وہ اب گاڑی پر آ گیا ہے۔ یونیورسٹی

کے طالب علم مدینہ کی ریاست کا مطالعہ ضرور کریں، بانیان پاکستان نے کہا تھا

پاکستان اسلامی فلاحی ریاست ہوگی جبکہ 60، 70 سال میں پاکستان اشرافیہ کا

پاکستان بن گیا ہے۔ جس ملک میں 10 سال میں حکمرا نوں نے قرضہ 6 سے 30

ہزار ارب کیا ہو وہاں آپ کو دشمنوں کی ضرورت نہیں، یہ بتا دوں جو ان لوگوں

نے اس ملک سے کیا ہے تاہم جتنی بھی دیر لگ جائے ہم نے ان کو سزائیں دیں

گے اور سزائیں صرف اس لیے دینی ہیں تاکہ یہ لوگوں کے لیے عبرت بنے اور

آئندہ سے کوئی بھی آئے تو ملک لوٹتے ہوئے ڈرے۔ جام کمال جیسا وزیراعلیٰ

ملنا صوبہ بلوچستان اور اس کے عوام کی خوش قسمتی ہے ۔ بعد ازاں وزیراعظم

عمران خان نے ہزار گنجی خود کش حملے میں شہید افراد کے لواحقین اور ہزارہ

برادری کے وفد سے ملاقات کی تعزیت کااظہارکیا، شہدا کیلئے فاتحہ خوانی

اورمغفرت کی دعا کی اورکہا دہشتگردی و مسلح گرہوں کے خلاف حکومت اور

ریاستی ادارے ایک پیج پر ہیں،ہمارا عزم ہے ملک و قوم کو اس دلدل سے باہر

نکالیں اور ملک کو امن کا گہوارہ بنائیں،

Leave a Reply