پاکستان کی بھارت پر سفارتی کامیابی اور امریکی جنرلز کی تشویش

پاکستان کی بھارت پر سفارتی کامیابی اور امریکی جنرلز کی تشویش

Spread the love

نیویارک (جے ٹی این انٹرنیشنل نیوز) پاکستان کی بھارت پر

امریکی سفارتی حلقوں نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے دورہ نیویارک کو

پاکستان کی سفارتی جیت قرار دیتے ہوئے کہا ہے، پاکستان نے مقبوضہ کشمیر

میں بھارتی بربریت کے بارے میں ڈوزئیر کی شکل میں ٹھوس حقائق دنیا کے

سامنے پیش کر کے بھارت کو ناکوں چنے چبوائے ہیں، جس سے بھارت تلملا

اٹھاہے، اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم کی شبانہ روز

کوششوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے پاکستانی کمیونٹی کے رہنماؤں نے

کہا ہے کہ ایک عرصے کے بعد پاکستان جس جراتمندی اور جاندار سفارتکاری

کر رہا ہے، اس نے دشمنوں کی نیندیں حرام کر دی ہیں-

=-،-= دنیا بھر سے مزید تازہ ترین خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

اقوام متحدہ میں پاکستان کے دوست ممالک کے سفیروں نے مستقبل مندوب منیر

اکرم کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا مقبوضہ کشمیر ایشو پر پاکستان کے مرتب

کردہ ڈوزئیر پر سفارتی حلقوں میں ایک نئی بحث چھڑ گئی ہے جس سے بھارتی

سفیر پریشان اور تذبذب کا شکار ہیں۔ دوست ممالک کے سفیروں نے مندوب منیر

اکرم کو یقین دلایا ہے کہ وہ ظلم کیخلاف پاکستان کا ساتھ دینگے، کشمیر متنازعہ

مسلسل ہے اور اس کو اقوام متحدہ کی قرار دادوں کے مطابق حل کرنے سے ہی

اس خطے میں پائیدار امن یقینی بن سکتا ہے۔

=-،-= پاکستان کے جوہری ہتھیاروں پر امریکہ کا اظہار تشویش

طالبان کے قبضے کے بعد پاکستان کے ایٹمی ہتھیاروں پر امریکی جرنیلوں نے

انتہائی تشویش کا اظہار کیا ہے، امریکی جنرل نے دعویٰ کیا ہے کہ انہوں نے

امریکی صدر جو بائیڈن کو خبردار کیا تھا کہ افغانستان سے فوری انخلاء پاکستان

کے ایٹمی ہتھیاروں اور ملک کی سلامتی کے لئے خطرہ بڑھ سکتا ہے۔ سینیٹ

کی آرمڈ سروس کمیٹی کے یہ سامنے چیئرمین جوائنٹ چیف آف سٹاف جنرل

مارک ملی نے کہا ہم نے اندازہ لگایا افغانستان سے تیزی میں انخلا سے علاقائی

عدم استحکام پاکستان کی سلامتی اس کے جوہری ہتھیاروں کے خطرات بڑھ

جائیں گے۔ جنرل مارک ملی نے کہا کہ ہمیں افغانستان کی پناہ گاہوں اور ان کے

کردار کا جائزہ لینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے بیس سال تک امریکی دباؤ کو

کس طرح برداشت کیا، جبکہ امریکی سنٹرل کمانڈ کے سربراہ فرینک میک نے

خبردار کیا کہ پاکستان کو اب طالبان سے بھی نمٹنا پڑے گا کیونکہ طالبان پہلے

سے مختلف ہیں ان کا ایکشن مختلف ہے۔

پاکستان کی بھارت پر ، پاکستان کی بھارت پر ، پاکستان کی بھارت پر

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply