سی پیک شفاف نہیں، چین پاکستان کا قرض معاف یا چُھوٹ دے، امریکہ

پاکستان کا دشمن ہمارا دشمن، نئی دہلی اسلام آباد کےخلاف افغان سرزمین استعمال نہیں کر رہا، امریکہ

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر، مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں)امریکہ کی نائب معاون

وزیر خارجہ ایلس ویلز کا کہنا ہے چائنا پاک اقتصادی راہداری (سی پیک) اچھا

منصوبہ ہے لیکن اس میں شفافیت ہونی چاہیے۔ اسلام آباد میں میڈیا نمائندوں کو

بریفنگ دیتے ہوئے انکا کہنا تھا امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیراعظم عمران

کی ملاقات کے بارے میں ابھی کچھ نہیں کہہ سکتے۔ وزیراعظم عمران خان نے

غیر ریاستی عناصر کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے،جس کی

امریکہ مکمل حمایت کرتا ہے ، پاکستان حکومت کا نیشنل ایکشن پلان پرعملدرآمد

اور افغانسستان کے بارے میں وزیراعظم عمران خان کا پالیسی بیان خوش آئند ہیں

افغانستان کے حوالے سے زلمے خلیل زاد کی ملاقاتوں میں اہم پیش رفت ہوئی ہے،

اگر افغانستان میں امن ہو گا تو سب سے زیادہ فائدہ پاکستان کو ہو گا۔ پاکستان

افغانستان کو باہمی معاملات کو حل کرنے کی ضرورت ہے لیکن بدقسمتی سے

افغانستان پاکستان ایکشن پلان پر بڑی پیش رفت نہیں ہو سکی۔ آئی ایم ایف ٹیم

پاکستان میں ہے اور پاکستان میں معاشی استحکام علاقائی استحکام کے لیے بہت

ضروری ہے۔ وزیراعظم پاکستان کا بیان خوش آئند ہے کہ ہمسایوں کے ساتھ بہتر

تعلقات چاہتے ہیں۔ علاقائی تنازعات نے سارک کے مؤثر کردار کو متاثر کیا ہے،

ایٹمی طاقتیں تنازعات کا شکار نہیں ہو سکتیں۔ بھارت کی طرف سے افغان

سرزمین پاکستان کے خلاف استعمال کرنے کے شواہد نہیں ملے لیکن کسی بھی

ملک کو غیر ریاستی عناصر کو سپورٹ نہیں کرنا چاہیے۔ پاکستان امریکہ کے

درمیان بہترین تجارتی تعلقات ہیں، پاکستان اور امریکہ کے درمیان تجارت کا حجم

6.6 بلین ڈالر ہے، جو پاکستان کا دشمن ہے وہ امریکہ کا بھی دشمن ہے۔ امریکہ

کسی علیحدگی پسند تحریک کی حمایت نہیں کرتا لیکن جمہوریت میں آزادی اظہار

رائے کا بہت بڑا کردار ہوتا ہے۔ دریں اثنا امریکی نائب معاون امور خارجہ ایلس

ویلز اور زلمے خیل زاد کے دورہ پاکستان سے متعلق جاری اعلامیہ میں کہا گیا کہ

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ ، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی،مشیر

خزانہ اور وزارت خارجہ کے حکام سے ملاقاتیں ہوئیں ۔جن میں علاقائی سکیورٹی

اور افغان مفاہمتی عمل پر بات چیت کی گئی۔ منگل کے روز امریکی سفارتخانے

کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ایلس ویلز نے زلمے خلیل زاد کے ہمراہ

پاکستان کا دورہ کیا جس میں ایلس ویلز نے علاقائی سکیورٹی اور افغان مفاہمتی

عمل کے حوالے سے بات چیت کی ۔ ملاقاتوں میں جنوبی ایشیاء میں امن و

استحکام کیلئے تمام سٹیک ہولڈرز کو ملکر کام کرنے اور پاک امریکہ معاشی

تعلقات پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا ۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply