پاکستان میں 10 سال بعد ٹیسٹ کرکٹ بحال، پہلے دن کھیل کے اختتام تک سری لنکا نے5وکٹوں کے نقصان پر202رنز بنا لئے

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

راولپنڈی(سپورٹس رپورٹر) پاکستان میں 10 سال بعد ٹیسٹ کرکٹ بحال ہوگئی اور راول پنڈی کے

سونے میدان 15 برس بعد پھر سے آباد ہوگئے ۔سری لنکا نے پہلے دن کھیل کے اختتام تک5وکٹوں

کے نقصان پر202رنز بنا لئے ہیں ۔سری لنکا کی جانب سے کپتان کارونا رتنے59، اوشاڈا فرنانڈو 40

،میتھیوز31رنز بنا کر آؤٹ ہو ئے جبکہ دھنجایا ڈسلوا 38اور ڈک والا 11رنز بنا کر وکٹ پر موجود

ہیں۔پاکستان کی جانب سے نسیم شاہ نے2،شاہین شاہ آفریدی،محمد عباس اور عثمان شنواری نے ایک

ایک وکٹ حاصل کی۔ روشنی کم ہونے کی وجہ سے میچ قبل ازوقت ختم کر دیا گیاپہلے دن

صرف68اوورز کا کھیل ممکن ہو سکا۔بدھ کو راولپنڈی میں کھیلے جا رہے سیریز کے پہلے ٹیسٹ

میچ میں سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا۔ابتدائی طور پر سری لنکا کا یہ فیصلہ

بالکل درست ثابت ہوا اور پہلے سیشن میں کپتان دمتھ کرونارتنے اور اوشادان فرنینڈو نے اپنی ٹیم کو

عمدہ آغاز فراہم کیا۔دن کے پہلے سیشن میں پاکستانی باؤلرز مہمان بلے بازوں کے خلاف بالکل بے

بس نظر آئے اور کوئی بھی وکٹ نہ لے سکے جس کی بدولت کھانے کے وقفے تک سری لنکا نے

بغیر کسی نقصان کے 89رنز بنا لیے۔تاہم وقفے کے بعد پاکستان نے یکے بعد دیگرے کامیابیاں حاصل

کر کے میچ بھرپور انداز میں واپسی کی جہاں مجموعی اسکور میں 7رنز کے اضافے سے 59رنز

بنانے والے کرونارتنے فاسٹ باؤلر شاہین شاہ آفریدی کو وکٹ دے بیٹھے۔کھانے کے وقفے کے بعد

سری لنکا کی پہلی وکٹ96رنز پر گری اور کرونا رتنے 59 رنز بنا کر شاہین شاہ آفریدی کی گیند پر

ایل بی ڈبلیو ہوگئے۔دوسری وکٹ 109 رنز پر گری اور اوشاڈا فرنانڈو 40 رنز بنا کر نسیم شاہ کا

شکار بنے۔ بی کے جی مینڈس صرف 10 رن ہی بناسکے اور عثمان شنواری کی گیند پر محمد

رضوان کو کیچ دے بیٹھے۔عثمان شنواری نے وکٹ کیپر محمد رضوان کی مدد سے ٹیسٹ کرکٹ میں

پہلی وکٹ حاصل کی۔مہمان ٹیم کا چوتھا کھلاڑی 127 رنز پر آؤٹ ہوا اور چندی مل صرف 2 رنز بنا

کر محمد عباس کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔ آئی لینڈرز کی پانچویں وکٹ 189 رنز پر گر گئی اور اینجلو

میتھیوز 31 رنز بنا کر نسیم شاہ کی گیند پر پویلین واپس لوٹ گئے۔ سری لنکا نے 68.1اوورز میں

5وکٹوں کے نقصان پر202رنز بنائے تھے کہ اامپائرز نے کم روشی کی وجہ سے میچ روک دیا ۔بعد

ازاں امپائرز نے روشنی کم ہونے کی وجہ سے میچ قبل ازوقت ختم کر دیا ۔پہلے دن صرف68اوورز

کا کھیل ممکن ہو سکا۔پہلے دن کا کھیل ختم تک سری لنکا کے دھنجایا ڈسلوا 38اور ڈک والا 11رنز

بنا کر وکٹ پر موجود ہیں۔پاکستان میں 10 برس بعد ٹیسٹ کرکٹ کی رونقیں بحال ہو گئیں۔مارچ 2009

میں سری لنکن ٹیم پر ہونے والے حملے کے بعد پاکستان میں انٹرنیشنل کرکٹ کے دروازے بند ہو

گئے تھے۔لیکن اب ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے کرکٹ کی بحالی کے بعد پاکستان میں ٹیسٹ کرکٹ کے

دروازے بھی کھل چکے ہیں۔پاکستان اور سری لنکا کے درمیان راولپنڈی کے انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم

میں کرکٹ کا میلا سج چکا ہے۔کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے راولپنڈی میں

سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں اور مہمان ٹیم کو وی آئی پی سیکیورٹی میں ہوٹل

سے گراؤنڈ تک پہنچایا گیا۔

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply