پاکستان سیاسی عسکری قیادت 0

کابل ،پاکستان کی سیاسی ، عسکری قیادت کی افغان حکام سے ملاقات

Spread the love

پاکستان سیاسی عسکری قیادت

کابل (جے ٹی این آن لائن نیوز) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے افغانستان کے عبوری وزیر اعظم

ملا حسن اخوند سے ملاقات کی، جس میں دو طرفہ امور، تجارتی و اقتصادی شعبوں میں تعاون

بڑھانے پر با ت چیت کی گئی ۔ اعلی عسکری قیادت و پاکستانی وفد کے دیگر اراکین بھی اس ملاقات

میں شریک تھے۔اس موقع پر شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان، افغانستان میں دیرپا امن اور

استحکام کا خواہاں ہے، پاکستان، انسانی بنیادوں پر افغان بھائیوں کی مدد کیلئے پر عزم ہے، پاکستان،

افغانستان کے ساتھ دو طرفہ تجارت بڑھانے کا متمنی ہے، پاکستان، افغانستان کے قریبی ہمسایہ

ممالک کے ساتھ مل کر، خطے میں امن کیلئے پر عزم ہے۔ عبوری وزیراعظم ملا حسن اخوند نے

انسانی امداد کی بروقت فراہمی پر پاکستانی قیادت کا شکریہ ادا کیا۔اس سے قبل وزیر خارجہ مخدوم

شاہ محمود قریشی ایک اعلیٰ سطحی وفد کے ہمراہ، افغانستان کے ایک روزہ دورے پر کابل پہنچے

ہوائی اڈے پر افغانستان کے عبوری وزیر خارجہ امیر خان متقی، افغانستان میں تعینات پاکستانی سفیر

منصور احمد خان اور وزارت خارجہ افغانستان کے سینئر حکام نے وزیر خارجہ کا خیر مقدم کیا ، ڈی

جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید ،وزیر اعظم کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان محمد

صادق،سیکرٹری خارجہ سہیل محمود،سیکرٹری کامرس صالح احمد فاروقی،چیرمین پی آئی اے ایر

مارشل (ر) ارشد ملک،چیرمین نادرا طارق ملک،کسٹم،ایف بی آر اور وزارت خارجہ کے سینئر

افسران بھی وزیر خارجہ کے ہمراہ تھے ۔ ملاقات میں تجارتی و اقتصادی شعبہ جات میں تعاون

بڑھانے اور افغان عوام کو معاشی بحران سے نکالنے کیلئے مختلف پہلوؤں پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ شاہ

محمود قریشی نے کہاکہ پاکستان، افغانستان کے ساتھ دو طرفہ تجارت بڑھانے کا متمنی ہے۔ انہوں نے

کہاکہ افغان شہریوں بالخصوص تاجروں کیلئے ویزہ سہولیات، نئے بارڈر پوائنٹس کا اجراء اور نقل و

حرکت میں سہولت کی فراہمی اسی سلسلے کی کڑیاں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان، افغانستان کے

قریبی ہمسایہ ممالک کے ساتھ مل کر، خطے میں امن و استحکام کیلئے اپنا تعمیری کردار ادا کرنے

کیلئے پر عزم ہے، افغان حکومت کے عبوری وزیراعظم ملا حسن اخوند نے انسانی امداد کی بروقت

فراہمی پر پاکستانی قیادت کا شکریہ ادا کیا۔ دوسری طرف افغان قیادت نے بھی وزیرخارجہ شاہ محمود

قریشی کا دورہ کابل کامیاب اور مفید قراردے دیا،شاہ محمود قریشی کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے

ہوئے افغان عبوری وزیر خارجہ امیر خان متقی نے کہا کہ ہمارے برادر،دوست اور ہمسایہ ملک

پاکستان کے وفد کیساتھ افغان قیادت کی مفید گفتگو ہوئی،پاکستانی وفد کے دورہ کابل پر ان کے

مشکور ہیں،امید ہے کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی سربراہی میں پاکستانی وفد کے دورے

سے دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی اور سفارتی تعلقات مزید مستحکم ہوں گے ۔امیر خان متقی کا

کہنا تھا کہ پاکستانی وفد کیساتھ تجارت،ویزا مسائل اور بارڈر پر آمدورفت میں درپیش مشکلات سے

متعلق تفصیلی گفتگو ہوئی،پاکستانی وفد نے مسائل کے حل کی یقین دہانی کرائی ۔افغان عبوری وزیر

خارجہ کا کہنا تھا کہ توقع ہے دونوں ممالک کے درمیان وزارتوں کی سطح پر بھی بات چیت کا سلسلہ

جاری رہے گا،امکان ہے کہ ہمارے وفود بھی اسلام آباد جائیں گے،انہوں نے یہ بھی کہا کہ افغانوں

کی بڑی تعداد پاکستان میں علاج کے لئے جاتی ہے،پاکستانی قیادت نے مریضوں اور افغان شہریوں

کی آمدورفت میں سہولیات دینے کا وعدہ کیا ہے

پاکستان سیاسی عسکری قیادت

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply