pak china 117

کرونا وائرس، چین میں موجود تمام پاکستانی صحتمند اور محفوظ

Spread the love

اسلام آباد،فیصل آباد،تربیلا غازی(جتن آن لائن مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی صحتمند محفوظ

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی ٹیم پاکستان پہنچ گئی

کرونا وائرس کے حوالے سے اقدامات کا جائزہ لینے کیلئے ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی ٹیم پاکستان پہنچ گئی۔ تفصیلات کے مطابق ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی ٹیم نے اسلام آباد ایئر پورٹ کا دورہ کرکے کرونا وائرس کے حوالے سے اقدامات کا جائزہ لیا۔ ڈاکٹر مائیک کی سربراہی میں ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی سات رکنی ٹیم نے اسکریننگ، سرویلنس اور انتظامات کے عمل بھی جائرہ لیا۔ مزید پڑھیں

چینی حکام کورونا وائرس چیلنج کا مقابلہ کررہے ہیں، ترجمان دفترخارجہ

ترجمان دفترخارجہ نے کہا ہے کہ پاکستانی سفارتخانہ چینی حکام سے مستقل رابطے میں ہیں۔ چین میں موجود تمام پاکستانی صحت مند اور محفوظ ہیں۔ ترجمان نے کہا کہ چینی حکام کورونا وائرس کے چیلنج کا مقابلہ کررہے ہیں، ان کی کوشش ہے کہ اس کے پھیلائو کو روکا جائے۔

فیصل آباد میں کرونا وائرس ، احتیاطی تدابیر سخت انتظامات

کرونا وائرس کے حملہ کے بعد فیصل آباد میں کرونا وائرس کے ممکنہ حملہ کے پیش نظر ائیر پورٹ پر روک تھام، احتیاطی تدابیر سخت انتظامات کو حتمی شکل دیدی گئی- کرونا وائرس کے ممکنہ حملہ کے پیش نظر ائیر پورٹ پر غیر ملکیوں کی سکریننگ کا عمل ذمہ داری سے انجام دیں اور کسی بھی خدشہ کی صورت میں فوراً انسدادی اقدامات ہونے چاہیں اور الائیڈ ہسپتال کے آئسولیشن وارڈ کو تمام تر ضروری طبی سازوسامان سے فعال رکھا جائے جبکہ ڈاکٹرزوسٹاف کی تربیت بھی ہر لحاظ سے مکمل کریں۔

تربیلا ڈیم میں چینی ورکرز کی موجودگی، سنجیدہ حلقوں کی تشویش و تجاویز

دوسری طرف چین میں کرونا وائرس سے اموات، تربیلا ڈیم میں چینی ورکرز کی موجودگی کے باعث مرض پھیلنے کا خدشہ پیدا ہو گیا- تمام انٹری پوائنٹس پر سکریننگ کا موثر نظام قائم کر نے کا مطالبہ ، سنجیدہ حلقوں نے شدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ چین سے براہ راست تر بیلا ڈیم آنیوالے مسافروں کی سکریننگ کی جائے اور تر بیلا روڈ پر واقع غازی بھروٹھا نہر کے بائی پاس روڈ سمیت دیگر انٹری پوائنٹس پر چینی شہریوں کی سکریننگ کا مئوثر نظام قائم کیا جائے کیونکہ ممکنہ طور پر چین سے آنیوالے مسافر اس خطرناک وائرس کے کیرئیر ہو سکتے ہیں چنانچہ احتیا طی تدابیر کو ہر لحاظ سے یقینی بنا یا جائے-

چینی شہریوں کی ہوائی سفر کیساتھ ساتھ بائی روڈ آمدورفت جاری ہے لہذا انتظامیہ متاثرہ چینی مریضوں سے وائرس کی منتقلی کو روکنے کیلئے پیشگی انتظاما ت کرے تاکہ ناصرف پاکستانی شہری بلکہ چینی ورکرز کیساتھ کام کرنیوالے اْنکے ہم وطن بھی اس مرض سے محفوظ رہ سکیں۔

پاکستانی صحتمند محفوظ

اپنا تبصرہ بھیجیں