پاکستان کو ایک اور امتحان کا سامنا، شدید ٹڈی دل حملوں کی ہولناک وارننگ

’ٹڈی دل کا خطرہ برقرار، 8 ہفتےسنگین، خاتمے کیلئے عملہ نہ ہی ادویات موجود

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) وفاقی حکومت کے غذائی تحفظ کمشنر ڈاکٹر وسیم نے بتایا ہے کہ ٹڈی دل

16 ملین سکوائر کلومیٹر پر محیط ہے۔ پنجاب میں 15 فیصد جبکہ سندھ میں 35 فیصد ٹڈی دل موجود

میں ہے۔ پہلے پینتیس ہزار ادویات اور چار جہاز سے سپرے ہوتا تھا جو کہ اب نہیں ہے۔قومی اسمبلی

کی خصوصی کمیٹی برائے زرعی مصنوعات کی ذیلی کمیٹی کا اجلاس فخر امام کی کنویئنرشپ میں

ہوا۔ اجلاس میں وزارت غذائی تحفظ حکام نے ٹڈی دل پر بریفنگ دی۔وفاقی حکومت کے غذائی تحفظ

کمشنر ڈاکٹر وسیم نے بتایا کہ کسانوں کو ٹڈی دل کے خاتمے کیلئے تربیت دے رہے ہیں۔ ڈاکٹر وسیم

اب تک 9 لاکھ 16 ہزار ہیکٹر سروے کیا جس میں 3 لاکھ ہیکٹر ٹریٹ کیا ہے۔ ٹڈی دل پنجاب اور

سندھ سے نکل کر بلوچستان جا رہا ہے۔انہوں نے بتایا کہ ٹڈی دل کیلئے آرمی سمیت 16 سٹیک ہولڈرز

آن بورڈ ہیں۔ آرمی کے ٹریننگ پروگرام نے بھی ٹڈی دل خاتمہ کیلئے شروع کر دیے ہیں، 300

جوانوں کو تربیت دیں گے۔ وزیراعظم سے درخواست کی ہے کہ 10 سے 12 جہاز چاہیں جس کے

لئے ہمارا شیئر ساڑھے سات ارب بنتا ہے۔ اگر جہاز مل جائیں تو اس قابل ہوں گے کہ صحرا میں

اسے رکھ پائیں۔

ٹڈی دل

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply