ٹرمپ بضد، شٹ ڈاﺅن کا پھر خطرہ

Spread the love

امریکہ کے چند محکموں کا شٹ ڈاﺅن صرف عارضی طور پر ختم ہوا ہے اور موجودہ عبوری سمجھوتے کی مد ت پندرہ فروری کو ختم ہورہی ہے اس کے بعد اگر مزید سمجھوتہ نہ ہوا تو ان محکموں کا شٹ ڈاﺅن دوبارہ شروع ہوسکتاہے ان محکموں کے پورے سال کے بجٹ کی منظوری میں حائل جنوبی سرحد پر دیوار تعمیر کرنے کا معاملہ ہے جس کےلئے صدر ٹرمپ کانگریس سے پانچ ارب ستر کروڑ ڈالر کا مطالبہ کررہے ہیں جبکہ کانگریس کے ڈیمو کریٹک ارکان یہ فنڈ فراہم کرنے کو تیار نہیں ہیں،اب معلوم ہوا ہے صدر ٹرمپ نے اپنی پارٹی کے کانگریس کے ارکان کی وارننگ کو نظر انداز کرتے ہوئے فنڈ کے حصول کےلئے ہنگامی حالت کے نفاذ کا اعلان کرنے کا ارادہ کررکھا ہے اس ار ا دے کی جھلک وائٹ ہاﺅس کی پریس سیکرٹری سیارہ سنیڈرسی کی تازہ میڈیا بریفنگ سے ملتی ہے وہ کہتی ہیں میرے خیال میں ہمارے ملک میں کسی کوبھی اس بات سے اختلاف نہیں کہ ہماری سرحد پر ایک حقیقی مسئلہ موجود ہے اس مسئلے کو حل کرنے کی ضرورت ہے اورصدر جس طرح بھی ہوگا اس مسئلے کا حل کریں گے۔ یہ بیان ایک ایسے موقع پر پیر کی شام سامنے آیا ہے جب متعدد ریپبلکن کانگریس میں ہنگامی حالت کے نفاذ پر اپنے تحفظات کا اظہار کرچکے تھے ۔

Leave a Reply