Masood Ahmed Rana Ligend Singer of Pakistan

ٹانگے والا خیر منگدا، معروف گلوکار مسعود رانا کو بچھڑے پچیس برس بیت گئے

Spread peace & love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

لاہور(جے ٹی این آن لائن شوبز نیوز) ٹانگے والا خیر منگدا

معروف گلوکار مسعود رانا کو مداحوں سے بچھڑے پچیس برس بیت گئے ان کی

برسی آج 4 اکتوبر کو منائی جارہی ہے۔ مرحوم کے اہل خانہ، دوست احباب اور

پاکستان شوبز کی دنیا سے وابستہ افراد مرحوم کے ایصال ثواب کیلئے دعائیہ

تقریبات کا انعقاد کیا جا رہا ہے-

===-: یہ بھی پڑھیں، نامور کلاسیکل و غزل گائیک اور لیجنڈ استاد امانت علی
————————————————————————————–

وطن عزیز کے معروف گلوکار مسعود احمد رانا 9 جون 1938ء کو میرپور خاص

کی مشہور زمیندار فیملی میں پیدا ہوئے، ان کے آباﺅ اجداد کا تعلق جالندھر سے تھا

جو قیام پاکستان سے قبل ہی ہجرت کرکے صوبہ سندھ میں رہائش اختیار کر چکے

تھے۔ مسعود رانا نے کسی سے موسیقی کی تعلیم حاصل نہیں کی، وہ محمد رفیع

سے متاثر تھے۔ مسعود رانا نے پچاس کی دہائی میں ریڈیو پاکستان حیدر آباد سے

فنی سفر کا آغاز کیا۔

===-: شہرت فلم ڈاچی کے گیت ٹانگے والا خیر منگدا سے ملی

بطور پلے بیک سنگر انہیں شہرت بابا جی اے چشتی کی بنائی ہوئی دھن پر فلم

ڈاچی کے گیت ٹانگے والا خیر منگدا سے ملی۔ انہوں نے 5 ہزار سے زائد فلمی و

غیر فلمی گیت گائے۔ مسعود رانا نے تین عشروں تک پاکستان کی فلمی موسیقی پر

حکمرانی کی۔

===-: جالندھر سے سندھ آئے اور1964ء میں لاہو رمنتقل ہوئے

مسعود رانا 1964ء میں لاہو رمنتقل ہوئے اور وہ جلد ہی اردو اور پنجابی فلموں

کے مقبول ترین گلوکار بن گئے۔ انہوں نے اردو اور پنجابی زبانوں میں تین تین سو

سے زائد گیت گائے، جن کا آج بھی کوئی نعم البدل نہیں اور ساڑھے پانچ سو سے

زائد فلموں کیلئے گانے ریکارڈ بھی کروائے۔ مسعود رانا 4 اکتوبر 1995ء کو خالق

حقیقی سے جا ملے۔ حق مغفرت کرے، الہٰی آمین

== قارئین =-: ہماری کاوش پسند آئی ہو گی،اپ ڈیٹ رہنے کیلئے ہمیں فالوکریں

ٹانگے والا خیر منگدا

  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply