وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کا کم از کم ماہانہ اُجرت 21 ہزار یقینی بنانے کا حکم

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا کا کم از کم ماہانہ اُجرت 21 ہزار یقینی بنانے کا حکم

Spread the love

پشاور(بیورو چیف عمران رشید خان) وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا

Journalist Imran Rasheed

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے صوبہ میں صنعتی پالیسی 2020ء پر

عملدرآمد کیلئے ایکشن پلان کی منظوری دینے سمیت پالیسی پرعملدرآمد اور

نگرانی کیلئے 15 رکنی کمیٹی بھی تشکیل ددی- دوسری طرف صوبائی حکومت

کے اعلان کردہ کم از کم ماہانہ 21 ہزار روپے اجرت پر عمل درآمد یقینی بنانے

کیلئے باقاعدہ اعلامیہ جاری کر دیا جبکہ اس ضمن میں وزیراعلیٰ محمود خان نے

تمام محکموں کے انتظامی سیکرٹریز کو احکامات جاری بھی کر دیئے ہیں-

=-،-= خیبر پختونخوا سے متعلق مزید خبریں (=-= پڑھیں =-=)

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ محمود خان کی زیرصدارت صنعتی پالیسی 2020ء

پر عملدرآمد سے متعلق اجلاس ہوا، جس میں ایکشن پلان کی منظوری دی گئی جب

کہ پالیسی پرعملدرآمد ونگرانی کیلئے 15 رکنی کمیٹی بھی تشکیل دی گئی، صو بہ

میں بیمار یا بند صنعتوں کی بحالی کیلئے ٹھوس اقدامات تجویز کئے گئے، اجلاس

میں بتایا گیا کہ صنعتوں کو گیس و بجلی کی بلاتعطل فراہمی یقینی بنائی جائیگی،

صنعتی یونٹس تک سڑکوں کی تعمیر دیگر انفراسٹرکچر کی تعمیر بھی پالیسی کا

حصہ ہے، صنعتی ترقی کیلئے اگلے 10 سالوں میں دس اکنامک زونز قائم کئے

جائیں گے، اگلے 5 سالوں کے دوران کم از کم دو اسپیشل اکنامک زونز کے قیام

کی بھی تجویزشامل ہے، اجلاس میں کہا گیا اگلے 10 سال میں 19 سمال انڈسٹریل

اسٹیٹس بھی قائم کی جائیں گی، وزیراعلیٰ محمود خان کا کہنا تھا کہ پالیسی پر عمل

درآمد سے صوبہ صنعتی سرگرمیوں کا مرکزبن جائیگا، صنعتوں کو مقامی پیدوار

کی بجلی رعایتی قیمت پر دی جا رہی ہے۔

=-= یہ بھی پڑھیں، پشاور کی تعمیر و ترقی مشن، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل گل بانو

دریں اثناء خیبر پختونخوا حکومت نے اپنے اعلان کردہ کم از کم ماہانہ اجرت 21

ہزار روپے پر عملدرآمد کو یقینی بنانے کے لئے اہم پیشرفت کرتے ہوئے باقاعدہ

اعلامیہ جاری کر دیا، وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ کے جاری اعلامیہ کے مطابق یکم

جولائی سے ہی مزدوروں کو ماہانہ اجرت 21 ہزار روپے ملے گی، تمام محکموں

کے انتظامی سیکرٹریز کو تحریری ہدایت نامہ جاری کر دیا گیا ہے، وزیراعلیٰ کی

جانب سے سرکاری محکموں میں یومیہ اجرت پر کام کرنیوالے عملے کو ماہانہ

21 ہزار روپے اجرت کی ادائیگی ہر صورت یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔

=–،-= بجلی انفراسٹرکچر کی بہتری کے منصوبے بروقت مکمل کرنیکی تاکید

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی زیر صدارت صوبے میں بجلی کی لوڈ

شیڈنگ اور کم وولٹیج سے متعلق اجلاس میں صوبے کے بعض علاقوں میں بجلی

کی لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج کے مسائل کو حل کرنے سے متعلق اُمور پر تفصیلی

غور و خوض کیا گیا۔ چیف پیسکو انجینئر محمد جبار خان اور دیگر متعلقہ حکام

نے صوبے میں بجلی کے انفراسٹرکچر کی بہتری کیلئے جاری ترقیاتی منصوبوں

پر پیشرفت کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ دی۔ وزیراعلیٰ نے اجلاس سے خطاب

کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی دارلحکومت پشاور میں تین نئے گرڈ سٹیشنز مکمل

کئے گئے ہیں انشاءاﷲ بہت جلد ان کو مکمل طور پر فعال کیا جائیگا جبکہ پیسکو

کے صوبائی حکومت سے متعلق تمام معاملات بھی ترجیحی بنیادوں پر حل کئے

جائیں گے۔

=-= پڑھیئے، پشاور کا نظامِ صفائی، سیاسی کرپشن کا شکنجہ اور حکومت وقت

اُنہوں نے مزید کہا کہ وہ پیسکو کے وفاقی حکومت سے متعلق معاملات کو جلد

وزیراعظم عمران خان کیساتھ اُٹھائیں گے۔ وزیراعظم نے پہلے ہی صوبے میں

بجلی کے انفراسٹرکچر کی بہتری کیلئے فنڈز دینے کا وعدہ کیا ہے تاکہ صوبے

میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ اور کم وولٹیج کے مسائل مستقل بنیادوں پرحل ہوں۔ انہوں

نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ صوبے میں بجلی کے انفراسٹرکچر کی بہتری

کیلئے جاری منصوبوں کی بروقت تکمیل کو ہرلحاظ سے یقینی بنایا جائے تاکہ

صوبے کے عوام ان منصوبوں سے بلا تاخیر مستفید ہوں۔ اُنہوں نے پیسکو حکام

پر واضح کیا کہ ان منصوبوں کی تکمیل میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کی

جائے گی اور پیسکو دستیاب وسائل کے اندر رہتے ہوئے عوام کو زیادہ سے زیادہ

ریلیف دینے کیلئے عملی اقدامات اُٹھائے۔

=-،-= آزاد کشمیر میں کامیابی عوام کا پی ٹی آئی پر اعتماد کا مظہر، محمود خان

آزاد کشمیر انتخابات کے حوالے سے جاری خصوصی بیان میں وزیراعلیٰ محمود

خان نے کہا پاکستان تحریک انصاف کے اُمیدواروں کی شاندار کامیابی وزیراعظم

عمران خان کی پالیسیوں پر عوامی اعتماد کا مظہر قرار ہے، خیبر پختونخوا سے

شروع ہونے والا پی ٹی آئی کی کامیابی کا سفر پنجاب اور گلگت بلتستان سے ہوتا

ہوا اب کشمیر تک پہنچ چکا ہے۔ کپتان کی قیادت میں تبدیلی کا یہ سفر مزید زور و

شور سے جاری رہے گا۔ پی ٹی آئی کی برتری پارٹی اور قائد عمران خان کی

بڑھتی عوامی مقبولیت کا ثبوت ہے۔ 2023ء کے عام انتخابات میں پورے ملک میں

کپتان کی حکومت ہو گی۔ محمود خان نے آزاد کشمیر کے عوام کو تبدیلی کی نئی

صبح پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ اب آزاد کشمیر میں بھی ترقی و خوشحالی کے

نئے دور کا آغاز ہو گا۔ ملک کے دیگر حصوں کی طرح کشمیر کے عوام نے بھی

کرپٹ سیاسی عناصر کو یکسر مسترد کر دیا ہے۔

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

وزیراعلیٰ نے کہا کہ عمران خان کی وژنری قیادت میں پاکستان کو ایک عظیم

فلاحی اسلامی ریاست بننے سے کوئی نہیں روک سکتا، آزاد کشمیر کے عام

انتخابات کے نتائج نے ثابت کر دیا کہ پی ٹی آئی ہی عوام کی واحد نمائندہ جماعت

ہے اور عوام اس کی پالیسیوں پر اعتماد کرتے ہیں۔ وزیراعلیٰ محمود خان نے پی

ٹی آئی اُمیدواروں کو بھر پور کامیابی دلانے پر آزاد کشمیر کے عوام اور پارٹی

کارکنان کا شکریہ ادا کیا اور یقین دلایا کہ پی ٹی آئی عوام کی توقعات پر پورا

اُترے گی اور ملک و قوم کی ترقی و خوشحالی کے سلسلے میں کوئی دقیقہ

فروگزاشت نہیں کرے گی۔

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا ، وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا ، وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا

Leave a Reply