PM Pakistan imran khan

وزیراعظم اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے میں کامیاب

Spread the love

وزیراعظم اعتماد کا ووٹ

اسلام آ باد (جے ٹی این آن لائن نیوز) وزیر اعظم عمران خان نے قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ

حاصل کرلیا ،سپیکر اسد قیصر نے قراداد پر رائے شماری کے بعد نتائج کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ

وزیراعظم عمران خان نے ایوان سے 178 ووٹ حاصل کر کے قومی اسمبلی کا اعتما د حاصل کر

لیا،2018میں وزیراعظم منتخب ہونے پر انہیں 176 ووٹ ملے تھے، اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے کے

بعدحکومتی ارکان نے جشن منایا اور وزیر اعظم کے حق میں زبردست نعرے لگائے، حکومتی ارکان

نے نتائج کا اعلان ہوتے ہی اپنی نشستوں پر کھڑے ہوکرڈیسک بجائے اور نعرے بازی کی ، شوکت

علی جذباتی ہو کر اپنی نشست کے سامنے ٹیبل پر چڑھ گئے اور نعرے لگائے، حکومتی ارکان نے

قدم بڑھاؤ عمران خان ہم تمھارے ساتھ ہیں، وزیر اعظم عمران خان، کون بچائے گا پاکستان، عمران

خان اور عمران خان زندہ باد و دیگرنعرے لگائے، اپوزیشن کے بائیکاٹ کی وجہ سے ان کی نشستیں

خالی رہیں جس پر حکومتی ارکان نے نوٹوں کے ہار رکھ دئیے جب کہ حکومتی ارکان نوٹ کو عزت

دو کے پلے کارڈ بھی اپنے ہمراہ لائے، جماعت اسلامی کے رکن عبد الا کبر چترالی اور محسن داوڑ

اجلاس میں آئے لیکن قرارداد پر ووٹ میں حصہ لینے کے بغیر چلے گئے، ۔ہفتہ کو قومی اسمبلی کا

اجلاس سپیکر اسد قیصر کی صدارت میں ہوا، تلاوت ، نعت رسول مقبول ً اور قومی ترانہ کے بعد

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے آئین کے آرٹیکل 91کی دفعہ 7کے تحت وزیر اعظم عمران خان پر

اعتماد کے ووٹ کے لئے قراداد ایوان میں پیش کی،قرارداد میں کہا گیا کہ ‘یہ ایوان اسلامی جمہوریہ

پاکستان کے وزیراعظم عمران خان پر اعتماد کا اظہار کرتی ہے جیسا کہ اسلامی جمہوریہ پاکستان

کے آئین کے آرٹیکل 91 کی شق (7) کے تحت ضروری ہے‘۔ ایوان میں قرارداد کے بعد اسپیکر قومی

اسمبلی نے وزیراعظم کو اعتماد کا ووٹ دینے سے متعلق اراکین کو طریقہ کار سے آ گاہ کیا اور

اسپیکر کی ہدایت کے بعد ایوان میں 5 منٹ تک گھنٹیاں بجائی گئیں اور پھر اس کے بعد اسپیکر نے

ایوان کے دروازے بند کرنیکی ہدایت کی ۔اسپیکر قومی اسمبلی نے اسد قیصر نے وزیر اعظم عمران

خان کی حمایت میں ووٹ دینے والوں کو دائیں لابی کی طرف جانے کی ہدایت کی جس کے بعد ارکان

نے باری باری جاکر اپنا ووٹ درج کرایا۔پوزیشن نے قومی اسمبلی کے اجلاس سے بائیکاٹ کیا جس

کے باعث اپوزیشن کی نشستیں خالی رہیں۔ وزیراعظم عمران خان جیسے ہی قومی اسمبلی میں پہنچے

تو حکومتی ارکان نے وزیراعظم کے حق میں نعرے بازی کی۔قومی اسمبلی میں اپوزیشن کے بائیکاٹ

کی وجہ سے اپوزیشن کی نشستیں خالی رہیں جس پر حکومتی ارکان نے نوٹوں کے ہار رکھ دئیے

جب کہ حکومتی ارکان نوٹ کو عزت دو کے پلے کارڈ بھی اپنے ہمراہ لائے،

وزیراعظم اعتماد کا ووٹ

ستاروں کا مکمل احوال جاننے کیلئے وزٹ کریں ….. ( جتن آن لائن کُنڈلی )
قارئین : ہماری کاوش پسند آئے تو شیئر ، اپڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply