واقعہ کربلا، شانِ اہلبیت اطہارّ، مجالس عزاء اور شوبز ستارے

واقعہ کربلا، شانِ اہلبیت اطہارّ، مجالس عزاء اور شوبز ستارے

Spread the love

لاہور(جے ٹی این آن لائن شوبز نیوز) واقعہ کربلا شوبز ستارے

واقعہ کربلا معرکہ حق و باطل کی پہچان کرواتا ہے اسلام کی سر بُلندی کے لئے

نواسہ رسول امام عالی مقام حسینّ ابن علیّ نے قربانی کی وہ عظیم داستان رقم کی

جس مثال آج تک نہیں ملتی حضرت امام حسینّ نے اپنے خاندان اور اصحاب کو اللہ

کی راہ میں قربان کردیا۔ انہوں نے اپنی جان کا نذرانہ پیش کر کے ثابت کردیا کہ

ظالم کے آگے کبھی سر نہیں جھکانا چاہیے بلکہ دین کی عظمت پر اپنا جان اور

مال سب کچھ لُٹا دو۔ یزید لعین کا دنیا میں نام و نشان تک مٹ گیا ہے جبکہ امام

حسین ّ کی یاد میں تمام مکاتب فکرسے تعلق رکھنے والے مجالس و محافل کا انعقاد

کر کے اُن کی عظیم قربانی کی یاد مناتے ہیں۔

=–= شوبز کی دنیا سے مزید خبریں ( =–= پڑھیں =–= )

شوبز سے وابستہ افراد بھی ماہ محرم الحرام کو بڑی عقیدت اور احترام سے مناتے

ہیں۔ فنکار، ہدایتکار پروڈیوسرز اور تکنیک کار اپنے اپنے گھر نیاز اور مجالس

عزا کا اہتمام کر کے واقعہ کربلا کی یاد مناتے ہیں۔ گزشتہ برسوں کی طرح اس

سال بھی گلوکارہ بیگم یاسمین شوکت، ترنم ناز، استاد حامد علی خاں، شاہدہ منی،

حمیرا چنا، سائرہ نسیم، نرگس، سلمان امجد امانت علی خاں، دردانہ رحمان، جرار

رضوی، ٹمی رائے، آفرین پری، خوشبو خان، نجیبہ بی جی، اسلم پھلروان اور

عائشہ جاوید مجلس اور نیاز کا اہتما م کیا جائیگا جبکہ سدرہ نور اور نادیہ علی اس

برس مجلس نہیں کروا رہیں۔

=-،-= دنیا بھر کو گونجنے والی آذان امام حسینّ کی قربانی کا ثمر، جرار رضوی

محرم الحرام کے حوالے اظہار خیال کرتے ہوئے سٹار میکر جرار رضوی نے کہا

آج دنیا کے کونے کونے میں اذان کے ذریعے اللہ کی شان بیان ہوتی ہے یہ سب

امام حسینّ کی قربانی کا صلہ ہے، انہوں نے یزید کی بیعت کرنے کی بجائے اللہ

کی راہ میں جان دینے کو بہتر جانا اور اپنے نانا رسول اکرمْ کے دین کی عظمت

پر شب خون مارنے والے اسلام دشمن عناصر کے منصوبے خاک میں ملا دیئے۔

واقعہ کربلا ہمیں انسانیت کا درس دیتا ہے۔ سلمان امجد امانت علی خاں نے کہا کہ

یزید کے مظالم پر انسانیت آج بھی خون کے آنسو روتی ہے قیامت ہر درد دل

رکھنے والا کربلا کے واقعے کو یاد کر کے روتا رہے گا۔ خوشبو نے کہا کہ

مسلمان امام حسینّ کے نقش قدم پر چل کر ایک بار پھر پوری دنیا پر حکمرانی کر

سکتے ہیں۔ دردانہ رحمان نے کہا کہ واقعہ کربلا ظالم کے سامنے کلمہ حق بلند

کرنے کا نام ہے آج امام حسینّ کا نام سب لیتے ہیں جبکہ یزید پر اُس کے مظالم کی

وجہ سے ہر ذی شعور لعنت بھیجتا ہے۔ میں ہر سال محرم کی 9 تاریخ کو اپنے

گھر پر نیاز کا اہتمام کرتی ہوں۔ میگھا نے کہا کہ یزید نے جو مظالم ڈھائے ہیں اُن

کے سامنے چنگیز خان اور ہلاکو خان کے ظلم بھی چھوٹے نظر آتے ہیں، امام

حسینّ نے اپنے نانا رسول اللہ ْ کے دین کی سرفرازی کے لئے جو قربانی دی اس

قیامت تک اسلام کا بول بالا کر دیا۔

=-،-= یزید مظالم کی وجہ سے تا ابد لعنت کا حقدار ٹھہرا، مایا سونو خان

مایا سونو خان نے کہا کہ یزید اپنے مظالم کی وجہ لعنت کا حقدار ہے دنیا کا ہر

شخص اس پر لعنت بھیجتا ہے جبکہ علماء کرام امام حسینّ کی قربانی کی داستان

کے ذریعے دنیا کو بتاتے ہیں دین کی بُلندی کے لئے ہمیشہ آل محمد ّ نے قربانی

دی ہے۔ ندا چوہدری نے کہا کہ واقعہ کربلا کی یاد ہر مسلمان کو منانی چاہیے، امام

حسینّ کی قربانی کی مثال قیامت تک نہیں ملے گی۔ ام لیلیٰ نے کہا کہ واقعہ کربلا

ہمیں اسلام کی سر بلندی کا درس دیتا ہے، امام حسین نے دین حق کے لئے اپنا سب

کچھ لُٹا دیا۔ واقعہ کربلا اسلام کا سیاہ باب ہے۔ شاہدہ منی نے کہا کہ معرکہ کربلا

کو 14 سو سال کا عرصہ گذر چکا ہے، لیکن آج بھی اس کی یاد شان و شوکت سے

منائی جاتی ہے، اسلام کے دشمن اور یزید کے پیروکار دنیا کے امن کو تباہ کرنے

کے لئے اس وقت بھی دہشت گردی میں مصروف ہیں۔ دہشت گردی کی وجہ سے

ہزاروں بے گناہ جان گنوا چکے ہیں۔ یزید کے شرمناک فعل کی جتنی بھی مذمت

کی جائے وہ کم ہے۔ اگر ہم اپنی زندگی کو کامیاب بنانا چاہتے ہیں تو ہمیں امام

حسینّ کے نقش قدم پر چلنا ہو گا۔ امام عالی مقام ّ کی مظلومیت پر جتنے بھی آنسو

بہائے جائیں وہ کم ہے۔

=-،-= محرم الحرام کا احترام نہ کرنیوالا مسلمان کہلانے کا حقدار نہیں، فنکار برادری

واقعہ کربلا کی یاد ہر مسلمان کو عقیدت کے ساتھ منانی چاہیے۔ امام حسینّ نے

اسلام کو بچانے کے لئے جو کارنامہ انجام دیا اُس پر اُن کی ذات پر لاکھوں سلام

دین کی خاطر انہوں نے اپنا سب کچھ قربان کر دیا، یزید نے امام عالی مقام ّ پر

مظالم ڈھا کر ہمیشہ کے لئے لعنت کو اپنا مقدر بنا لیا۔ جو شخص محر م کا احترام

نہیں کرتا وہ مسلمان کہلانے کا حقدار نہیں ہے۔ یزیدی افواج کے مظالم سُن کر ہر

درد دل رکھنے والے کی روح کانپ جاتی ہے۔ ایسے مظالم کی مثال تاریخ انسانیت

میں نہیں ملتی ہے۔ مذہب اسلام کا ہر پیروکار یزید کی مذمت اور امام عالی مقام کی

عظمت کو سلام پیش کرتا ہے۔ واقعہ کربلا کو یاد کرکے ہردل خون کے آنسو روتا

ہے میں ہر سال اپنے گھر پر نیاز کا اہتمام کرتی ہوں۔ امام عالی مقام ّ نے جان کا

نذرانہ پیش کرکے دین حق کی عظمت کو بلند کیا اور یزید کا غرور خاک میں ملا

دیا۔ یزید آج کہیں نظر نہیں آتا جبکہ امام مظلوم ّ کی مجالس و محافل جگہ جگہ

منعقد ہوتی ہیں۔ یزید کے انسانیت سوز کارنامے پر ہر مذہب اور ملت کے انسان

نے احتجاج کیا ہے۔ اس ماہ میں سب کو مجالس اور محافل کا انعقاد کر کے امام

عالی مقام ّکو خراج عقیدت پیش کرنا چاہیے۔

واقعہ کربلا شوبز ستارے ، واقعہ کربلا شوبز ستارے ، واقعہ کربلا شوبز ستارے

واقعہ کربلا شوبز ستارے ، واقعہ کربلا شوبز ستارے ، واقعہ کربلا شوبز ستارے

=-= قارئین= کاوش پسند آئے تو اپ ڈیٹ رہنے کیلئے فالو کریں

Leave a Reply